کتاب و سنت ڈاٹ کام، محدث فتوی، محدث حدیث پراجیکٹ، محدث میگزین، محدث فورم اور مکتبہ شاملہ اردو سے متعلق کسی بھی مشکل کی صورت میں اس واٹس ایپ نمبر پر رابطہ کیجئے: 00923024738339

کتاب و سنت ڈاٹ کام کی موبائل ایپلیکیشن تیار ہو چکی ہے۔ پلے سٹور سے ڈاؤنلوڈ کیجئے۔

 موجودہ حالات میں عید کی نمازقدیم وجدید ائمہ وعلماء کے اقوال کی روشنی میں  

تحریر: عبدالعلیم بن عبد الحفیظ سلفی /سعودی عرب

 

موجودہ حالات میں کرونا جیسی وبائی مرض کی نوعیت اور خطرناکی کے مدنظر  جہاں دنیاکے اکثر ممالک میں عام اجتماع کی جگہوں کو بند کردیاگیاہے، وہی مساجد اور عیدگاہیں بھی اس کی زد میں ہیں ۔ عام جمعہ وجماعت کے لئے  شریعت کی رہنمائی موجود ہے جماعت کی نمازیں گھر میں اور جمعہ کے بدلے ظہر کی نمازیں اداکرنے کے نصوص اور فتاوے موجود ہیں ۔  ان حالات میں عید کی نماز بھی لوگوں کے درمیان   موضوع بحث بنی ہوئی ہے ، چونکہ اس بات کا کم ہی امکان ہے کہ ایسی حالات میں  عید کی ادائیگی کے لئے لوگوں کو عیدگاہ یا مسجد میں جانے دیاجائےگا، اس لئے ایسی صورت میں عام مسلمانوں کو کیا کرنا چاہئے ؟ عید کی نماز گھر پہ ادا کرنی چاہئے یا اگر ادا کرنی پڑے تو اس کی کیا صورت ہوگی  ؟ ۔  ہم اس کی وضاحت اپنی اس مختصرسی تحریر میں کرنا چاہتے ہیں تاکہ ہمارے سامنے مسئلے کی صحیح وضاحت ہوسکے ، اور بدلے حالات میں ہماری عبادتیں قرآن وسنت کے مطابق انجام پاسکیں ۔اللہ ہمیں اس کی توفیق دے ۔آمین۔

اس سلسلے میں بنیادی مسئلہ عید کی نماز کا حکم ہے ، کیونکہ اگر حکم کی تعیین ہوجاتی ہے تو مسئلہ کی وضاحت میں بھی آسانی ہوتی ہے ۔

مزید تفصیل کے لیے یہاں کلک کریں .....

اشتہارات

فیس بک تبصرے

ا ی میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1142
  • اس ہفتے کے قارئین 7630
  • اس ماہ کے قارئین 62819
  • کل قارئین52926534

موضوعاتی فہرست