الجہاد الاسلامی(1341#)

عبد الرحمن الرحمانی
دار الاندلس،لاہور
875
26250 (PKR)

فی زمانہ اسلام کےتصورجہادکےبارے میں بہت سی غلط فہمیاں پائی جاتی ہیں اورغیرتوغیر‘اپنےبھی بے شمارمغالطوں کاشکارہیں ۔ایسےنام نہادسکالروں کی بھی کمی نہیں جوجہادوقتال کوصحابہ کرام کےدورسے خاص کرتےہوئے موجودہ دورمیں اسے عملا ً ممنوع قراردیتےہیں ۔زیرنظرکتاب میں ان مغالطوں کانہ صرف ٹھوس علمی جواب دیاگیاہے بلکہ کتاب وسنت سے محکم استدلال  اورقوی استشہادکےذریعے جہادکےصحیح تصوراوراس سے متعلقہ شرعی مسائل کوبھی اجاگرکیاگیاہے۔فاضل مؤلف نے جہادومجاہدین کےفضائل ،جہادکی اقسام اور جنگ وجہادسےمتعلقہ فقہی معاملات کی اس قدرمفصل وضاحت فرمائی ہے کہ اسے بجاطورپرجہادکےاحکام ومسائل کاانسائیکلوپیڈیاقراردیاجاسکتاہے ۔

 

عناوین

 

صفحہ نمبر

علم جہاد کی اہمیت

 

41

جہاد کا لغوی معنی

 

43

جہاد کاشرعی اور اصطلاحی معنی

 

43

علم جہاد کا موضوع

 

45

علم جہاد کی غرض و غایت

 

45

اقسام جہاد

 

51

جہاد کی اقسام بمعنی عام

 

52

نفس کے خلاف جہاد

 

52

شیطان کے خلاف جہاد

 

53

فاسقوں اور فاجروں کے خلاف جہاد

 

54

کافروں اور مشرکوں کے خلاف جہاد

 

56

فرضیت جہاد کے تدریجی مراحل

 

57

پہلا مرحلہ ، دعوت و جہاد

 

58

دوسرا مرحلہ،اللہ اور اس کے رسول کی طرف ہجرت

 

59

تیسرا مرحلہ،جہاد و قتال کی اولین اجازت اور اس کے اسباب

 

61

چوتھا مرحلہ، جوابی حملہ

 

62

اولاد اور وطن اسلام کا دفاع بھی''جہاد فی سبیل اللہ `` ہے

 

64

پانچواں مرحلہ،قتال عام کی فرضیت

 

65

فرض عین کی تعریف

 

67

فرض کفایہ کی تعریف

 

67

جہاد بمعنی عام فرض عین ہے

 

67

قرآن و سنت سے استدلال

 

67

اجماع امت سے استدلال

 

69

''جہاد``قتال کے معنی میں بھی فرض عین ہے

 

70

قرآن مجید کے دلائل

 

70

جہاد بالسیف کے بارے آیات

 

71

تم پر قتال فرض کر دیا گیا ہے

 

72

جب جہاد کے لیے اعلان عام ہو جائے

 

73

جہاد کے ذریعے آزمائش

 

75

سنت سے دلائل

 

76

جہاد کےبارے میں چندمنتخب احادیث

 

81

تخصیص کرنے والی آیات و احادیث

 

84

جہاد کے فرض عین ہونے پر آثار و اقوال

 

88

فیصلہ کن بات

 

94

فرض عین ہونے کے مستقل اسباب

 

97

1-انسداد فتنہ اور غلبہ دین

 

97

2-جب دشمن سے آمنا سامنا ہو جائے

 

98

3-جب جہاد کے لیے سب کو نکلنے کا حکم مل جائے

 

101

4-جب دشمن حملہ آور ہو جائیں نیز قریب ترین کافروں کی سرکوبی

 

102

جہاد کا تسلسل اور ترتیب نبوی

 

104

محدثین اور فقہاء کی گواہی

 

106

قریبی کافر اور جہاد کا تسلسل

 

110

5-قبول اسلام ،جزیہ یا قتال فی سبیل اللہ

 

111

خلاصہ کلام

 

113

فرض عین ہونے کے عارضی اسباب

 

114

1- مومنوں کی مدد کرنا

 

114

2-ظلم زیادتی کی روک تھام کے لیے

 

115

3-مسلمانوں کے علاقوں کو کافروں کے تسلط سے آزاد کرانا

 

116

4-میدان جہاد میں موجود مجاہدین جب ناکافی ہوں

 

117

فرض کفایہ کا باطل تصور

 

119

امت محمدیہ کے لیے غور و فکر کا مقام ہے

 

122

عارضی اسباب میں فرضیت جہاد

 

123

ملت اسلامیہ سے ایک سوال

 

124

حاصل بحث

 

125

فرض کفایہ کی حقیقت

 

125

جید ائمہ اسلام کی گواہی

 

126

تندرست ،غیرمعذوراور راہ جہاد کے اخراجات کا متحمل ہونا

 

131

عاقل،بالغ اور مذکر ہونے کی شرائط

 

133

نابالغوں اور غلاموں کا جہاد

 

133

عورتوں کی جہاد میں شرکت کا حکم

 

135

بحری غزوات میں عورتوں کی شرکت

 

136

امہات المومنین رضی اللہ عنہن میدان قتال میں

 

136

مردوں کے ہمراہ خواتین اسلام کی غزوات میں شرکت

 

137

لہذا ثابت ہوا

 

139

اسلام کی ایک عظیم مجاہدہ

 

140

خواتین اسلام کے لیے ایک لمحہ فکریہ

 

141

والدین کا ساتھ حسن سلوک

 

143

لہذا معلوم ہوا

 

145

والدین کے مشروط حقوق

 

147

والدین کے لیے مغفرت کی دعاکرنا

 

147

والدین کی اطاعت یا والدین سے صلہ رحمی

 

147

اطاعتیں صرف تین ہیں

 

149

جہاد اور والدین کا حق

 

150

والدین سے اجازت لے کرجہاد کرنے والی احادیث

 

151

مذکورہ احادیث سے معلوم ہوا

 

153

مذکورہ بالاشر ائط کے دلائل

 

153

پہلی شرط

 

153

دوسری شرط

 

154

تیسری شرط

 

155

چوتھی شرط

 

156

جہاد اور والدین سے تعلقات

 

157

یہ کیسے ممکن ہے؟

 

157

یہ کیسا عدل و انصاف ہے؟

 

157

یہ کیونکر جائز و مناسب ہے؟

 

158

یہ بھلا کیسے ہو سکتاہے

 

158

دونوں باتوں میں مطابقت کی صورت

 

159

مطابقت والے مؤقف کے دلائل

 

159

والدین کی اجازت کے بغیر جہاد کرنے کی صحیح حدیث

 

160

لہذا معلوم ہوا

 

160

محدثین اور فقہاء کی وضاحت

 

162

فرضیت جہاد کے حالات و مراحل

 

166

پہلی حالت

 

167

دوسری حالت

 

169

امت مسلمہ کی موجودہ حالت پر غور و فکر

 

169

یہ وقت قیام ہے

 

170

مقروض کا جہاد

 

171

مذکورہ بالا دلائل سے معلوم ہوا

 

174

1-اللہ تعالی پر ایمان

 

177

2-عمل صالح

 

180

مجاہدفی سیبل اللہ کا گناہوں سے اجتناب

 

182

پہلی وجہ

 

186

دوسری وجہ

 

187

3- دعوت و تبلیغ

 

188

دعوت و تبلیغ کے اصول و قواعد

 

190

4-امر بالمعروف اور نہی عن المنکر

 

191

مذکورہ بالاآیات واحادیث سے حاصل شدہ اسباق

 

195

5-دوستی اور دشمنی کا معیار

 

198

کافروں اور مشرکوں سے دوستی حرام ہے

 

200

 

   

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1292
  • اس ہفتے کے قارئین: 6542
  • اس ماہ کے قارئین: 34236
  • کل قارئین : 45932242

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں