سیرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ(3598#)

سیف اللہ خالد
دار الاندلس،لاہور
235
5875 (PKR)
5.2 MB

انبیاء کرام﷩ کے بعد صحابہ کرام کی مقدس جماعت تمام مخلوق سے افضل اور اعلیٰ ہے یہ عظمت اور فضیلت صرف صحابہ کرام کو ہی حاصل ہے کہ اللہ نے انہیں دنیا میں ہی مغفرت،جنت اور اپنی رضا کی ضمانت دی ہے بہت سی قرآنی آیات اور احادیث اس پر شاہد ہیں۔صحابہ کرام سے محبت اور نبی کریم ﷺ نے احادیث مبارکہ میں جوان کی افضلیت بیان کی ہے ان کو تسلیم کرنا ایمان کاحصہ ہے ۔بصورت دیگرایما ن ناقص ہے ۔جماعت ِ صحابہ میں سےخاص طور پر وہ ہستیاں جنہوں نے آپ ﷺ کے بعد اس امت کی زمامِ اقتدار ، امارت ، قیادت اور سیادت کی ذمہ داری سنبھالی ، امور دنیا اور نظامِ حکومت چلانے کے لیے ان کےاجتہادات اور فیصلوں کو شریعت ِ اسلامی میں ایک قانونی دستاویز کی حیثیت حاصل ہے۔ ان بابرکت شخصیات میں سے خلیفۂ اول سیدنا ابو بکر صدیق سب سے اعلیٰ مرتبے اور بلند منصب پر فائز تھے اور ایثار قربانی اور صبر واستقامت کا مثالی نمونہ تھے ۔ سیدنا ابوبکر صدیق قبیلہ قریش کی ایک مشہور شاخ تیم بن مرہ بن کعب کے فرد تھے۔ساتویں پشت میں مرہ پر ان کا نسب رسول اللہﷺ سے مل جاتا ہے ہے ۔ایک سچے مسلمان کا یہ پختہ عقیدہ ہے کہ انبیاء ورسل کے بعد اس کائنات میں سب سے اعلیٰ اور ارفع شخصیت سیدنا ابو بکر صدیق ہیں ۔ سیدنا ابو بکر صدیق ہی وہ خو ش نصیب ہیں جو رسول اللہﷺ کےبچپن کے دوست اور ساتھی تھے ۔آپ پر سب سے پہلے ایمان لانے کی سعادت حاصل کی اور زندگی کی آخری سانس تک آپ ﷺ کی خدمت واطاعت کرتے رہے اور اسلامی احکام کے سامنے سرجھکاتے رہے ۔ رسول اللہ سے عقیدت ومحبت کا یہ عالم تھا کہ انہوں نے اللہ کے رسول ﷺ کی خدمت کے لیے تن من دھن سب کچھ پیش کر دیا ۔نبی کریم ﷺ بھی ان سے بے حد محبت فرماتے تھے ۔آپ ﷺ نے ان کو یہ اعزاز بخشا کہ ہجرت کے موقع پر ان ہی کو اپنی رفاقت کے لیے منتخب فرمایا۔ بیماری کے وقت اللہ کے رسول ﷺ نے حکماً ان کو اپنے مصلیٰ پر مسلمانوں کی امامت کے لیے کھڑا کیا اورارشاد فرمایا کہ اللہ اورمؤمنین ابو بکر صدیق کے علاوہ کسی اور کی امامت پر راضی نہیں ہیں۔خلیفہ راشد اول سیدنا صدیق اکبر نے رسول اللہ ﷺ کی حیات مبارکہ میں ہر قدم پر آپ کا ساتھ دیا اور جب اللہ کے رسول اللہ وفات پا گئے سب صحابہ کرام کی نگاہیں سیدنا ابو بکر صدیق کی شخصیت پر لگی ہو ئی تھیں۔امت نے بلا تاخیر صدیق اکبر کو مسند خلافت پر بٹھا دیا ۔ تو صدیق اکبر ؓ نے مسلمانوں کی قیادت ایسے شاندار طریقے سے فرمائی کہ تمام طوفانوں کا رخ اپنی خدا داد بصیرت وصلاحیت سے کام لے کر موڑ دیا اور اسلام کی ڈوبتی ناؤ کو کنارے لگا دیا۔ آپ نے اپنے مختصر عہدِ خلافت میں ایک مضبوط اور مستحکم اسلامی حکومت کی بنیادیں استوار کرنے میں بہت اہم کردار ادا کیا ۔نتیجہ یہ ہوا کہ آپ کے بعد اس کی سرحدیں ایشیا میں ہندوستان اور چین تک جا پہنچیں افریقہ میں مصر، تیونس او رمراکش سے جاملیں او ریورپ میں اندلس اور فرانس تک پہنچ گئیں۔سیدنا ابو بکر صدیق کی زندگی کے شب وروز کے معمولات کو الفاظ کے نقوش میں محفوظ کرنے کی سعادت نامور شخصیات کو حاصل ہے۔ زیر تبصرہ کتاب’’سیرت ابوبکر صدیق ‘‘ تفسیر دعوۃ القرآن کے مصنف مولانا سیف اللہ خالد ﷾ کی تصنیف ہے ۔انہوں نے اس کتاب کو مرتب کرنے میں صحیح اورمستند روایات کو بنیاد بنایا اور صحیح ترین مآخذ اور مراجع سےمعتبر روایات کاانتخاب کر کے ایام ِ خلافت ِ راشدہ کی حقیقی اور صحیح تصویر قارئین کے سامنے پیش کی ہے۔ مصنف نے اسے مرتب کرتے وقت ڈاکٹر علی محمد محمد الصلابی ﷾ کی تالیف’’ ابو بکر صدیق کی شخصیت ، حیات اور خلافت‘‘ سے بھر پور استفادہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ مکتبہ شاملہ کو بنیاد کر حدیث ، تاریخ اور سیرت کی سیکڑوں کتب سے مستند اور صحیح روایات کو جمع کرنے کی سعی کی ہے۔ سیرت سیدنا ابو بکر صدیق کے حوالے سےیہ کتاب بیش قیمت تحفہ ہے ۔تمام اہل اسلام کو صحابہ کرام کی طر ح زندگی بسر کرنے کی توفیق عطا فرمائے(آمین) (م۔ا)

عناوین

 

صفحہ نمبر

فہرست

 

 

عرض ناشر

 

13

عرض مولف

 

15

سیدنا ابو بکر ؓ کا نام ونسب

 

19

سدنا ابو بکر ؓ کے القاب

 

19

عتیق

 

19

صدیق

 

20

صاحب

 

21

تاریخ پیدائش

 

23

سیدنا ابو بکر ؓ کے والدین

 

24

والد

 

24

والدہ

 

25

سیدناابو بکر ؓ کی بیویاں

 

26

قتیلہ بنت عبدالعزیٰ

 

26

ام  رمان بنت عامرؓ

 

27

اسماء بنت عمیسؓ

 

28

حبیبہ بنت خارجہ ب

 

29

سیدنا ابو بکر ؓ کی اولاد

 

30

عبدالرحمٰن بن ابوبکرؓ

 

30

عبداللہ  بن ابوبکر کی بنی ﷺ کے حلہ میں کفن کی خواہش اور ترک

 

31

محمد بن ابو بکرؓ

 

31

اسماء بنت ابوبکرؓ

 

32

ام المو منین سیدہ عائشہؓ

 

33

ام کلثوم بنت ابوبکر

 

35

خاندان صدیق اکبرؓ کا منفر د اعزاز

 

36

قبل از اسلام ابوبکر ؓ کی شہرت

 

37

علم انساب کے ماہر

 

37

جو دوسخا اور مہمان نوازی

 

38

تجارت

 

39

سیدنا ابو بکر ؓ کاقبول اسلام

 

40

مکہ کے دور ابتلا میں عظیم کردار

 

43

نبی ﷺ کا دفاع کرتے ہوئے

 

43

نئے مسلمانوں کی تعلیم اور تکریم کا فریضہ ادا کرتے ہوئے

 

44

ستم رسیدہ غلاموں کی آزادی میں کوشاں

 

45

غلاموں کو آزادی دلانے کا مقصد رضائے الٰہی کا حصول

 

47

صدیق اکبرؓ کی پہلی ہجرت

 

51

رسو ل اللہﷺ سے عائشہ ؓ  کا نکاح

 

54

ہجرت مدینہ اور ابوبکر ؓ

 

56

ہجرت مدینہ  میں سیدہ عائشہ اور سیدہ اسماء ؓ کا کردار

 

57

سیدناابوبکر ؓ کا کفار مکہ پر اظہار افسوس

 

59

سیدنا عبداللہ بن ابوبکر ؓ کاکردار

 

59

عام بن فہیرہ مولیٰ ابی بکر ؓ کا کردار

 

60

راستہ بتلانے کے لیے ماہر گائیڈ کا اہتمام

 

60

ابوبکر ؓ کوغار میں بھی بنی کریم ﷺ کی حفاظت کیی فکر

 

60

سراقہ کا تعاقب اور ابوبکر ؓ نبی ﷺ کی حفاظت کے لیے مستعد

 

63

مدینہ منورہ آمد پر ابو بکر صدیق ؓ کا کردار

 

67

مدینہ میں رسو ل اللہ ﷺ کے استقبال کے شاندار مناظر

 

68

خضاب کا استعمال

 

68

اپنین بیوی ام بکر کو طلاق دینا

 

69

مدینہ منورہ پہنچ  سیدہ عائشہ ؓ کو بخار آنا

 

69

سیدنا ابوبکرؓ کو بخار آنا

 

69

جہادی میدانوں میں

 

 

ابوبکر صدیق ؓ میدان جہادمیں

 

73

جنگی معرکوں کی قیادت  کرتے ہوئے

 

73

ابوبکر ؓ میدان بدر میں

 

74

سب سے پہلے جہاد کے حق میں مشورہ دینے والے

 

74

فتح و نصرت کی بشارت اور رسو ل اللہﷺ کے پہلو بہ پہلو قتال

 

75

اسیران بدر کے بارے میں سیدنا ابوبکرؓ کی رائے

 

77

صدیق اکبر ؓ کؤمیدان اُحد میں

 

80

کفار کے تعاقب میں حمراء الا سد تک پیش قدمی

 

82

صدیق اکبر ؓ کی صلح حدیبیہ میں

 

84

بیت اللہ کی طرف پیش قدمی کا مشورہ

 

84

مصالحانہ گفتگو کے دوران سید نا ابو بکر ؓ کی غیر ت ایمانی

 

85

مزاج شناس رسو ل سیدنا ابوبکر ؓ

 

86

ابوبکر ؓ غزوہ خیبر کے پہلے علم بردار

 

86

صدیق اکبر ؓ سریہ نجدمیں

 

89

صدیق اکبرؓ سریہ نبو فزارہ میں

 

90

صدیق اکبر ؓ غزوہ ذات السلاسل میں

 

90

صدیق اکبر ؓ فتح مکہ میں

 

93

مکہ پر چڑھائی کا معاملہ صیغہ راز میں رکھا گیا

 

93

ابوقحا فہ ؓ کا قبو ل اسلام

 

93

ابو قحا جہ ؓ کی داڑھی کو رنگنے کاحکم

 

94

ابوبکر ؓ کی میدان حنین میں ثابت قدمی

 

95

رسو ل اللہ ﷺ کی موجودگی میں سیدنا ابوبکر ؓ کا فتویٰ

 

96

غزوہ تبو ک اور اللہ کی راہ میں مال کا عطیہ

 

99

رسو ل اللہ ﷺ سے مسلمانوں کے لیے بارش کی دعا کی درخواست

 

100

صدیق اکبرؓ بحیثیت امیر حج

 

102

صدیق اکبر ؓ حجۃ الو داع میں

 

103

مدنی معاشرے میں کردار اور بعض فضائل

 

 

مدنی معاشرے میں کردار اور بعض فضائل

 

107

سیدنا ابوبکر ؓ راز نبوی ﷺ کے محافظ

 

107

سیدنا ابو بکر ؓ اور نماز جمعہ کی آیت

 

108

احترام رسول اللہﷺ اور ابوبکر ؓ

 

109

رسو ل اللہﷺ کا ابوبکر ؓ سے کبرو غرور کی نفی فرمان ا

 

109

سیدنا ابوبکر ؓ کا زہد و ورع

 

110

سیدنا ابو بکر ؓ کی خشیت

 

111

نفاق کا خوف اور اس سے بیزاری

 

112

امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کے داعی

 

113

مہمانوں  کی عزت و تکریم کرنےوالے

 

114

سیدنا ابو بکر ؓ کے فاقے کا ایک واقعہ

 

116

اے آل ابی بکر! یہ تمھاری پہلی بر کت نہیں ہے

 

117

رسو ل اللہ ﷺ کی طرف سے سیدنا ابو بکر ؓ کی حمایت

 

119

نبی ْﷺ کا ابوبکر ؓ پر بے مثال اعتماد

 

120

سیدنا ابوبکر ؓؓ کوغصے پر قابو رکھنے کی نبوی نصیحت

 

122

نبیﷺ کو سب سے زیادہ محبوب عائشہ اور ابوبکرؓ

 

123

زبان نبوت  سے جنت کی بشارت

 

124

سیدنا ابوبکرؓ کو جنت کےتمام دروازوں سے پکاراجائے گا

 

125

نبیﷺ کی ابوبکر ؓ کے لیے علم کی بشارت

 

126

سیدنا ابوبکر ؓ بنی ﷺ کی موجودگی میں معبر

 

127

نبی ﷺ کی موجودگی میں مصلیٰ نبویﷺ پر

 

129

واقعہ افک اور خاندان صدیق کا کردار

 

131

کیوں  نہیں ، واللہ ! یقینا میں چاہتا ہوں کہ اللہ مجھے بخش دے

 

138

اعلان براءت پر سید ہ عائشہ ؓ کا سر کا بوسہ لینا

 

139

سیدنا ابوبکر ؓ سے منقول ادعیہ

 

140

نماز میں آخری تشہد کی دعا

 

140

صبح و شا م کی دعا

 

141

وفات نبوی اور صدیق اکبرؓ

 

142

وفات نبوی کا اشارہ اور سیدنا ابوبکر ؓ کے آنسو

 

142

سیدہ عائشہ ؓ کا ابوبکر ؓ کا امام نہ بنانے کی درخواست کرنا

 

143

حکم نبوی کو ابوبکر لوگو ں کو نماز پڑھائیں

 

143

نبی ﷺ کا ابوبکر ؓ کی اقتدار میں نماز پڑھنے والوں پر اظہار مسرت

 

144

رسول اکرم ﷺ  کے چہر ہ انور کو بوسہ دینا

 

145

حادثہ دل فگار  ی ہولناک اور سیدنا ابو بکر ؓ کامو قف

 

146

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1435
  • اس ہفتے کے قارئین: 12706
  • اس ماہ کے قارئین: 33399
  • کل مشاہدات: 45345097

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں