#4934

مصنف : محمد طیب محمدی

مشاہدات : 1536

قول فیصل

  • صفحات: 130
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 3250 (PKR)
(جمعہ 02 دسمبر 2016ء) ناشر : ادارۃ البحوث الاسلامیہ، بنارس

فتنہ انکار حدیث تاریخ اسلام میں سب سے پہلے دوسری صدی ہجری میں خوارج اور معتزلہ نے پیدا کیا۔ خوارج کو اس کی ضرورت اس لیے محسوس ہوئی کہ مسلم معاشرے میں جو انارکی وہ پھیلانا چاہتے تھے، اس کی راہ میں سنت رسول ﷺ حائل تھی۔ لہذا نہوں نے احادیث کی صحت میں شک اور سنت کے واجب الاتباع ہونے سے انکار کی دوگونہ پالیسی اختیار کی۔ معتزلہ کا مسئلہ یہ تھا کہ یونانی فلسفے نے اسلامی عقائد اور اصول و احکام کے بارے جو شکوک و شبہات عقل انسانی میں پیدا کر دیے تھے، وہ انہیں سمجھنے سے پہلے ہی حل کر دینا چاہتے تھے لہذا انہوں نے فلسفہ کے نام سے منقول ہر بات کو عقل کا لازمی تقاضا سمجھا اور اسلامی عقائد اور اصول و احکام کی ایسی تعبیر کرنا شروع کر دی جو ان نام نہاد عقلی تقاضوں کے مطابق ہو۔ اس راہ میں پھر حدیث و سنت حائل ہوئی تو انہوں نے بھی خوارج کی طرح حدیث کو مشکوک ٹھہرایا اور سنت کو حجت ماننے سے انکار کر دیا۔ یہ فتنہ درمیان میں کئی صدیوں تک اپنی شمشان بھومی میں پڑا رہا یہاں تک کہ تیرہویں صدی ہجری میں وہ دوبارہ زندہ ہوا۔ پہلے یہ مصر و عراق میں پیدا ہوا اور اس نے دوسرا جنم برصغیر پاک و ہند میں لیا۔ برصغیر میں اس کی ابتدا کرنے والے سرسید احمد خان اور مولوی چراغ علی تھے۔ ان کے بعد مولوی عبد اللہ چکڑالوی اس کے علمبردار بنے۔ ان کے بعد مولوی احمد دین امرتسری نے اس کام کا بیڑا اٹھایا اور پھر اسلم جیرجپوری اسے آگے لے کر بڑھے۔ اور آخر کار اس فتنہ انکار حدیث و سنت کی ریاست و چودہراہٹ غلام احمد پرویز صاحب کے حصے میں آئی اور انہوں نے اس فتنے کو ضلالت کی انتہا تک پہنچا دیا۔ اس فکر کے حاملین اسلام کو موم کا ایک ایسا گولہ بنانا چاہتے ہیں جسے بدلتی دنیا کے ہر نئے فلسفے کے مطابق روزانہ ایک نئی صورت دی جا سکے۔ زیر تبصرہ کتاب" قول فیصل"محترم مولانا محمد طیب مدنی صاحب کی تصنیف ہے ،جس میں انہوں  نے منکرین حدیث مدھو پور کے انکار حدیث پر مبنی کتابچے" ایمان وعمل ومخزن علم وبصیرت" کا مسکت جواب دیا ہے اورمستند دلائل کے ذریعے حجیت حدیث پر استدلال کیا ہے۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ  مولف کی اس خدمت کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے  اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔آمین(راسخ)

عناوین

 

صفحہ نمبر

زیر نظر کتاب کے بارے میں

 

4

پیش لفظ

 

5

کیا قرآن میں سب کچھ ہے

 

11

منصب نبوت اور اطاعت رسول

 

14

اقسام وحی

 

24

وحی کی پہلی قسم

 

25

وحی کی دوسری  قسم

 

27

وحی کی تیسری  قسم

 

28

حدیث وحی الہٰی و منزل من اللہ ہے

 

30

قرآن مجید اور لوح محفوظ دونوں الگ الگ کتابیں ہیں

 

35

کیا قرش بت پرست تھے

 

38

نماز کیسے پڑھیں

 

52

تخلیق آدم اور قرآن مجید

 

69

عین حقیقت

 

75

روح اور عذاب قبر

 

94

پہلا دور موت ہے

 

100

دوسرا دور دنیوی زندگی

 

101

تیسرا دور عالم برزخ

 

102

چوتھا دور اخروی زندگی

 

118

حرف آخر

 

120

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1454
  • اس ہفتے کے قارئین 6060
  • اس ماہ کے قارئین 14798
  • کل قارئین51456443

موضوعاتی فہرست