داڑھی کے مسائل کتاب و سنت کی روشنی میں(4665#)

مختار احمد ندوی
دار العلم، ممبئی
116
54520 (PKR)

مردوں کی ٹھوڑی اور گالوں پر بالغ ہونے پر اگنے والے بال داڑھی اور بالعموم بلوغت کا نشان کہلاتے ہیں۔قدیم زمانے میں یورپ اور ایشیا میں اس کو تقدیس کا درجہ دیا جاتا تھا۔ اور یہودیوں اور رومن کتھولک عیسائیوں میں بھی اس کو عزت کی نشانی سمجھا جاتا ہے۔ بنی اسرائیل کو مصر میں غلامی کی زندگی کے دوران داڑھی منڈانے کی اجازت نہ تھی۔ اس لیے وہ اپنی ڈاڑھیوں کو لمبا چھوڑ دیا کرتے تھے اور اسی نشانی سے ان میں اور مصریوں میں تمیز ہوتی تھی ماضی قریب میں مسلم دنیا میں صرف طالبان کی حکومت ایسی گزری جس نے افغانستان میں داڑھی منڈوانا ایک جرم قرار دیا اور داڑھی نہ رکھنے والوں کو باقاعدہ سزا دی جاتی تھی۔ اسلامی تعلیمات کے مطابق مردوں کے لئے داڑھی رکھنا واجب ہے، اور تمام انبیاء کرام ﷩کی متفقہ سنت اور شرافت و بزرگی کی علامت ہے اسی سے مردانہ شکل وصورت کی تکمیل ہوتی ہے‘ آنحضرتﷺ کا دائمی عمل ہے اور حضور ﷺنے اسے فطرت سے تعبیر فرمایا ہے‘ لہذا اسلام میں داڑھی رکھنا ضروری ہے اور منڈانا گناہ کبیرہ ہے۔ مرد وعورت میں ظاہری تمیز کرنے کے لئے مرد کو داڑھی جیسے خوبصورت زیور سے مزین کیا ہے۔داڑھی مرد کی زینت ہے ،جس سے اس کا حسن اور رعب دوبالا ہو جاتا ہے۔ نبی کریمﷺ نے متعدد مواقع پر داڑھی بڑھانے اور اس کو معاف کرنے کا حکم دیا ہے۔ اس اعتبار سے دین اسلام میں داڑھی کی عظمت و فضیلت بہت زیادہ ہے۔ مسلمانوں پر مغربی تسلط کے بعد سے مسلمانوں میں یہ سنت بہت تیزی کے ساتھ متروک ہوتی جا رہی ہے۔ زیر تبصرہ کتاب’’داڑھی کے مسائل کتاب وسنت کی روشنی میں‘‘ مولانا مختار احمد ندوی ﷫ کی کاوش ہے۔ انہوں نے اس کتاب میں داڑھی کی فضیلت و اہمیت بیان کرتے ہوئے اس کی فرضیت کے دلائل بیان کیے ہیں۔اور موجودہ دور میں اہمیت، داڑھی کے بارے میں ایمانی جائزہ، داڑھی نہ رکھنے کے نقصانات، داڑہی کے خلاف بدترین پروپیگنڈہ، کیا داڑھی دہشت پسندی کی علامت ہے، داڑھی منڈانا دائمی معصیت، داڑھی کا مذاق اور اس سے نفرت کفر کی علامت ہے، مسنون اور شرعی داڑھی کا بیان ،وغیرہ جیسے عنوانات قائم کر کے داڑھی کے احکام ومسائل کے متعلق اس کتاب کوجامع کتاب بنا دیا ہے ۔ اللہ تعالیٰ مصنف کی اس کاوش کوشرف قبولیت سے نوازے اوراسے امت مسلمہ کے داڑھی نہ رکھنے والے افراد کی اصلاح کا ذریعہ بنائے۔ (آمین)(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

عرض حال

4

داڑھی کاخوف

10

اسلامی بیداری کی لہر

10

اسلام کےخلاف متحدہ محاذ

11

داڑھی کےخلاف نفرت کاطوفان

12

عالم اسلام میں داڑھی کاحشر

13

موجود ہ دور میں داڑھی کی اہمیت

15

داڑھی کے بارے میں ایک ایمانی جائزہ

17

داڑھی کی حقیقت اوراہمیت

18

داڑھی انسان کاحسن وجمال ہے

20

داڑھی بڑھانااورمونچھ چھوٹی رکھناانسانی فطرت ہے

20

داڑھی رکھنا تمام سچے انسانوں کاعمل رہا ہے

22

آنحضرت ﷺ کی داڑھی خوب گھنی تھ

28

داڑھی کی شرعی حیثیت

29

داڑھی بڑھانا واجب ہے

29

داڑھی منڈانا سنت رسول سےٰ انکار کرنا ہے

32

داڑھی رکھنا سنت رسول ہے

33

اللہ کی پیدا کردہ شکل وصورت پر قائم رہنا چاہیے

35

مردوں کےلئے عورتوں کی مشابہت اختیار کرنا حرام ہے

36

داڑھی اللہ کی نعمت ہے اس کی قدر کرنی چاہیے

38

داڑھی منڈانا کیوں حرام ہے

39

داڑھی منڈانا اکثریت کی غلامی ہے جس سےنجات پانا ہر مسلمان فرض ہے

40

داڑھی شریعت اسلامیہ کی جز ہے

40

داڑھی منڈانا کفار کی مشابہت ہے

41

داڑھی منڈانا فطرت الہی سے بغاوت کرنا ہے

42

داڑھی کےبارے میں شیطان کانسیرب

43

جدید دور کی شیطانی تہذیب

45

داڑھی منڈانے کےپر دے ہیں

47

امر وپرستی

47

عمر چھپانا

48

داڑھی سےنفرت

48

اباحیت پسندی

48

داڑھی کےخلاف بدرترین پروپگنڈہ

48

کیا داڑھی کٹر پن کی علامت ہے

49

کیا داڑھی دہشت پسندی کی علامت ہے

49

کیا داڑھی حماقت اوربودے پن کی علامت ہے

50

داڑھی اسلامی ہتھیار

50

داڑھی ایمان کامظہر ہے

51

علماء مصر کی بے عملی

52

داڑھی منڈانادائمی معصیت ہے

52

داڑھی کےبارے میں مسلم اورغیر مسلم کافرق

54

داڑھی دین داری کی علامت ہے

57

رند پارسا

58

داڑھی اسلامی غیرت کی علامت ہے

60

داڑھی ملت ابراہیمی کی اتباع ہ ن کہ عربوں کی عادت کی تقلید

61

کیاداڑھی رکھنا ایک منفی عمل ہے

62

داڑھی کامذاق اور اس سےنفرت کفر کی علامت ہے

66

مسنون اورشرعی داڑھی کابیان

71

مونچھوں کےبارے میں شرعی حکم

72

کیا داڑھی کاادھر ادھر کاٹنا جائز ہے

75

مٹھی بھرے زائد داڑھی کاحکم

79

داڑھی کی شرعی مقدار

80

ڈیزاین دار داڑھیوں کی ممانعت

82

شریعت میں داڑھی منڈانے کاحکم

84

داڑھی منڈے کی امامت کامسئلہ

85

داڑھی منڈے کی شہادت کامسئلہ

86

داڑھی مونڈنے کاپیشہ اور اس کی اجرت

87

داڑھی بڑھانے کےبارے میں سامۃ الشیخ ابن باز ﷾کابیان

89

داڑھی منڈانےکی حرمت پر شیخ عبدالرحمان بن قاسم کےرسالہ کاخلاصہ

93

داڑھی کےبار ے میں علامہ عبدالرحمان المبارکپوری کافتوی

110

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1152
  • اس ہفتے کے قارئین: 3244
  • اس ماہ کے قارئین: 32502
  • کل قارئین : 48495361

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں