#4381.01

مصنف : گوہر رحمان

مشاہدات : 4587

علوم القرآن جلد دوم ( گوہر رحمان )

  • صفحات: 651
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 16275 (PKR)
(جمعرات 07 اپریل 2016ء) ناشر : مکتبہ تفہیم القرآن ۔ مردان

علوم القرآن ایک مرکب اضافی ہےاور اس سے مراد وہ علوم ہیں جو قرآن نےبیان کیے ہیں یا وہ قرآن سےاخذ کیے جاسکتے ہیں اورجو قرآن فہمی میں مدد دیتے ہیں او رجن کے ذریعے قرآن مجید کو سمجھنا آسان ہوجاتا ہے ۔ ان علوم میں وحی کی کیفیت ،نزولِ قرآن کی ابتدا اور تکمیل ، جمع قرآن،تاریخ تدوین قرآن، شانِ نزول ،مکی ومدنی سورتوں کی پہچان ،ناسخ ومنسوخ ، علم قراءات ،محکم ومتشابہ آیات وغیرہ ،آعجاز القرآن ، علم تفسیر ،اور اصول تفسیر سب شامل ہیں ۔علومِ القرآن کے مباحث کی ابتدا عہد نبوی اور دورِ صحابہ کرام سے ہو چکی تھی تاہم دوسرے اسلامی علوم کی طرح اس موضوع پربھی مدون کتب لکھنے کا رواج بہت بعد میں ہوا۔ قرآن کریم کو سمجھنے اور سمجھانے کے بنیادی اصول اور ضابطے یہی ہیں کہ قرآن کریم کو قرآنی اور نبوی علوم سےہی سمجھا جائے۔ علوم القرآن کے موضوع پر اس کے ماہرین نے متعدد کتب لکھی ہیں ۔ان میں الاتقان فی علوم القرآن ، البرہان فی علوم القرآن ، مناہل العرفان فی علوم القرآن ،المباحث فی علوم القرآن اور علوم القرآن از تقی عثمانی قابل ذکر ہیں ۔ زیر تبصرہ کتاب’’علوم اقرآن‘‘ شیخ القرآن والحدیث مولاناگوہر الرحمٰن ﷫ کی 2 جلدوں پر مشتمل تصنیف ہے ۔ مصنف موصوف نے اپنی اس کتاب کے بنیادی مباحث کوان 10 ابواب ( تعارف قرآن ، نزول قرآن ، قرآن کا نزول سات حرفوں میں ، تدوین قرآن ، اعجاز القرآن ، النسخ فی القرآن ، مضامین قرآن، تفسیر اوراصول تفسیر، متجددین کا منہج تفسیر، مدون تفاسیر اور تعارف مفسرین)میں مرتب ومدون کیا ہے۔ان ابواب کی ذیلی مباحث میں دوسری ضروری تفصیلات بھی آگئی ہیں۔ اور جہاں تک ممکن ہوسکا ہے کتاب کوجامع بنانے اور تمام ضروری اور اہم مباحث پر حاوی بنانے کی کو شش کی گئی ہے ۔(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

باب ہفتم مضامین القرآن

13

ابن جریر اور ابن عربی کےنزدیک قرآن کےبنیادی مضامین تین ہیں

15

شاہ ولی اللہ کے نزدیک قرآن کے بنیادی مضامین 5ہیں

16

قرآنی مضامین کی ایک اور طرح کی تقسیم

18

قرآن کامرکز ی مضمون توحید ہے

20

خالقیت

25

مالکیت

26

حاکمیت

30

قرآن کاطرز استدلال

36

قرآنی دلائل کی قسمیں

38

(الف)اصحاب الکف

62

(ب)اصحاب الاخدود کے مظالم اور اصحاب التوحید کی استقامت

65

(ج)لقمان حکیم کی وصیت

70

(د)جنات کی شہات

70

سواد بن قارب کے سلام لانے کاواقعہ

83

جنات کاحقیقت

88

جنات کےبارے میں فرقہ باطنیہ او ردور جدید کے مجددین کی تلاویلات  فاسدہ

91

ملائکہ کی حقیقت

103

ملائکہ کے بارے میں مجددین کے اقوال باطنہ

105

شیخ محمد عبدہ ارو اس کے تلامذہ کاتجدد

105

حروف مقطعات

116

خلفائے راشدین کےنزدیک حروف مقطعات کایقینی علم اللہ کے علاوہ کسی کو بھی حاصل نہیں ہے اور یہ قرآن میں اللہ کاایک راز ہے

119

حروف مقطعات کےحکم ورموزاور ان کی تلایلات

123

محکم اور متشابہ

132

پوراقرآن محکم ہے

132

پوراقرآن  متشابہہ  بھی ہے

135

ام الکتاب محکمات ہیں اور کچھ دوسری آیات متشابہات ہیں

137

متاشہ کی قسمیں

134

اقسام القرآن

147

بندوں کے لیے غیر اللہ کی قسم ممنوع ہے

147

افلح وابیہ کی توجیہ

150

اللہ کی قسموں کی حقیقت

153

اللہ کی قسموں کی مثالیں

154

اللہ نے قرآن میں چار چیزوں کی قسمیں کھائی ہیں

155

اللہ کی ذات وصفات کی قسم

155

قرآن کی قسم

157

رسول اللہ ﷺ کی زندگی کی قسم

158

اللہ نے قرآن  میں اصول ایمان پر قسمیں کھائی ہیں

161

توحید پر قسم کھانے کی مثال

161

قرآن پر قسم کھانے کی مثال

164

رسول اللہ پر قسم کھانے کی مثال

166

جزاور وعدہ وعید پر قسم کی مثال

167

انسان کےحوال واعمال پر قسم کی مثال

169

لااقسم کی تاویل

170

امثال القرآن

183

مثل کے معانی

186

ضرف الامثال کی حکمت قرآن نےخود بیان کی ہے

187

امثال القرآن کے چند نمونے

192

کلمہ طیبہ او رکلمہ خبیثہ کی مثال

193

نورایمان کی مثال

197

ظلمت کفر کی مثال

202

مشرکین کے معبودوں کی بے بسی کی مثال

204

منافقین کی مثال

205

باب ہشتم اصول اور اصول تفسیر

209

تفسیر کی لغوی معنے

210

تفسیر کااصطلاحی مفہوم

212

تاویل کے لغوی معنے

212

تاویل بمعنے تحریف

217

تاویل بمعنےانجام ونتیجہ

218

تاویل بمعنے حقیقت

219

تاویل کی معنے خوابوں کی تعبیر

221

تاویل بمعنے توجیہ

221

تاویل کے اصطلاحی معنے

222

اہل سنت ولجماعت کے اصول کے مطابق بہترین طریقہ تفسیر

234

تفسیر القرآن بالقرآن

225

تفسیر القرآن بالقرآن کی چندمثالیں

226

آدم ؑ کی لغزش

238

موسی ؑ کے مکے سے قبطی کاقتل

249

قہم قرآن کےلئے تالیف کلام او رسیاق وسباق میں تدبر کرنا ضروری ہے

262

کیا حجاب کاحکم ازواج رسو ل کی ساتھ مخصوص ہے

263

تفسیر القرآن بالسنہ الثابتتہ عن رسول اللہ ﷺ

270

تفسیر القرآن بالسنہ  الثابتتہ کی چند مثالیں

272

ورود کے لغوی معنے

284

ابو منصور محمد بن احمد الازہری متوفی 370ھ

284

علامہ اسماعیل بن حماد الجوہری متوفی 393ھ

285

علامہ ابن منظور افریقی متوفی 711ھ

285

علامہ مجدالدین فیروز آبادی متوفی 817ھ

285

قاموس کے شارح علامہ زبیدی متوفی 1205ھ

285

سنت رسول کی روشنی میں وان منکم الاواردہاکامفہوم

287

تفسیر کے بارے میں عائشہ کی حدیث سنداضعیف ہے

296

تفسیر القرآن بلاثارالثابتتہ عن اصحاب رسول اللہﷺ

302

طبقہ صحابہ کے مشہور مفسرین

308

عبداللہ بن عباس ؓ متوفی 68ھ

311

عبداللہ بن عباسؓ اور اسرائیلیات

315

عبداللہ بن عباس ؓ سے مروی تفسیری روایات کے طرق واسانید

319

تفسیر ابن عباس ؓ کی سنادی حیثیت

328

عبداللہ بن مسعود ؓ 32ھ

340

عبداللہ بن مسعود ؓ کے تفسیر ی اقوال کے طرق واسانید

338

علی بن ابی طالب ؓ متوفی 40ھ

335

حضرت علی ؓ کی تفسیری روایات کے طرق واسانید

338

ابی بن کعب ؓ متوفی 22ھ

340

ابی بن کعب ؓکی تفسیری روایات کتے طرق واسانید

342

تفسیر القرآن بآثار التابعین

343

مدرسہ تفسیر مکہ مکرمہ میں

345

سعید بن جبیر متوفی 95ھ

346

مجاہدین بن جبر متوفی 102ھ

355

عکرمہ مولی بن عباس ؓ متوفی 104ھ

356

طاوس بن کیسان الیمان متوفی 106ھ

358

عطاء بن ابی رباح متوفی 114ھ

358

مدرسہ تفسیر مدینہ منورہ میں

360

ابولعالیہ رفیع بن مہران الریاحی متوفی 90ھ

360

ابو حمزہ محمد بن کعب بن سلیم القرظی متوفی 108ھ

361

ابو اسامہ زید بن اسلم القرشی العدوی 136ھ

362

مدرسہ تفسیر کوفہ میں

362

علقمہ بن قیس لخعی الکوفی متوفی 62ھ

363

عائشہ مسروق  بن الاجد ع الہمدنی متوفی 62ھ

363

ابو عمرواسود بن یزید بن قیس الخعی متوفی 75ھ

364

ابو اسماعیل مرو بن شراحیل الہمدانی لکوفی متوفی 76ھ

364

ابو عمر وعامر بن شراحیل الشعبی الکوفی المتوفی 109ھ

365

حسن بن ابی الحسن البصری متوفی 110ھ

365

قتادہ بن عامہ سدوسی ابو الخطاب البصری متوفی 117ھ

366

اسرائیلیات کی اشاعت کا دار ومدار زیادہ ترچار افراد پر ہے

367

ابویوسف عبداللہ بن سلام بن حارث االاسرائیلی الانصاری متوفی 43ھ

367

کعب الاحبار ماتع الحمیری متوفی 32ھ

369

وھب بن منبہ متوفی 110ھ

371

عبدالملک بن عبدالعزیز بن جریح متوفی 150ھ

372

صحابہ وتابعین کی تفاسیر میں اختلاف کی نوعیت

373

تفسیر القرآن  باللغہ العربیہ الضحی

374

تفسیر القرآن بالعقل والاجتہاد

379

تفسیر بالرائے کامفہوم

381

اس کتاب کی دیگر جلدیں

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 896
  • اس ہفتے کے قارئین 2807
  • اس ماہ کے قارئین 49967
  • کل قارئین56203242

موضوعاتی فہرست