مابعد جدیدیت اور اسلامی تعلیمات(6951#)

پروفیسر ڈاکٹر احمد ندیم
کتاب محل لاہور
298
7450 (PKR)
5.7MB

جدیدیت ان نظریاتی تہذیبی ،سیاسی اور سماجی تحریکوں کے مجموعے کا نام ے  جو 17ویں اور 18 صدی کے یورپ میں روایت پسندی اورکلیسائی استبداد کے ردّ عمل میں پیدا ہوئیں۔یہ وہ دور تھا جب یورپ میں کلیسا کا ظلم اپنے عروج پر تھا  ۔اور مابعدجدیدیت؍پس جدیدیت دراصل جدیدیت کے ردّ عمل کانام ہے ۔اور مابعدجدیدیت  آج کے دور کافلسفہ، ترقی یافتہ  معاشروں کا عقیدہ طرزِ زندگی، معاشرتی صورت حال اور نظریہ حیات کانام ہے اردو میں مابعدجدیدیت پر علمی انداز  سے  مذہبی موقف کوبہت کم پیش کیا گیا ہے ۔ زیر نظر کتاب ’’مابعدجدیدیت اور اسلامی تعلیمات ‘‘  پروفیسر ڈاکٹر  احمد ندیم کی کاوش ہے ۔ اس کتاب میں انہوں نے  یہ ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ جدیدیت ہو یامابعدجدیدیت کوئی بھی نظریہ اسلام کی صاف ستھری اور پرازحکمت تعلیمات کے لیے چیلنج  کا درجہ نہیں رکھتا۔اسلام کی رہنمائی آفاقی، ابدی،سرمدی اور ناقابل تغیر ہےاسی لیے قرآن کریم چیلنج کرتا ہے ۔اليوم اكملت لكم دينكم واتممت عليكم نعتمي(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

باب اول: جدید تہذیب کا ارتقاء

13

فصل اول: یورپ کے ذہنی انحطاط کا سفر

13

الف۔ یونانی تہذیب

18

وثنیت /بت پرستی

19

عقل کو معیار قرار دینا

21

یونانی تہذیب کی خصوصیات

22

ب۔ رومی تہذیب

24

دنیاوی اور ظاہری امور پر توجہ

25

اخلاقی انحطاط وشہوانیت

26

ج۔ مسیحیت اور کلیسا

27

مسیحیت میں بت پرستی کی آمیزش

31

رہبانیت کی بدعت

32

حکومت وکلیسا کی آویزش

38

کتب مقدسہ میں رد وبدل

39

معرکہ مذہب وسائنس

40

فصل دوم: نشاۃ ثانیہ( یورپ میں عقلی بیداری)

47

صلیبی جنگیں

50

مدرسیت

52

اندلس سے علم کی منتقلی

56

تحریک احیاء العلوم کا آغاز

56

انسانیت پرستی

60

تحریک اصلاح دین

63

عقلیت پرستی کا دور

67

انقلاب فرانس

71

فصل سوم: جدیدیت

74

جدیدیت کی خصوصیات

78

چارلس ڈارون

84

سگمنڈ فرائیڈ

86

کارل مارکس

89

حاصل بحث

91

حواشی

94

باب دوم: مابعد جدیدیت

108

فصل اول: مابعد جدیدیت ایک تعارف

108

ما بعد جدیدیت اصطلاح کی تاریخ

122

برقیاتی علم نئی ذہنیت

126

سائنسی علم بیانیہ اور مہابیانیہ

127

مابعد جدید مفکرین پر نطشے کا اثر

129

الف۔ میڈیا

132

ب۔ میٹروپولس

134

ج۔ صارفیت کا کلچر

135

د۔ عالمی گاؤں اور عالمگیریت

135

و۔ کیمونزم کی ناکامی

138

مابعد جدیدیت اور مغربی مفکرین

148

1۔ رولینڈ بارتھ

148

2۔ چارلس جینکس

150

3۔ جین فرینکوس لیوٹارڈ

152

4۔ جیکوس دریدا

154

5۔ مثل فوکو

156

6۔ جین بادریلا

158

فصل دوم: مابعد جدیدیت کے بنیادی نظریات

161

الف۔ سچائی کی اضافیت کا نظریہ اور مہابیانیہ کا رد

164

مہا بیانیہ کیا ہے؟

173

سچائی کی اضافیت کیا ہے؟

178

سچائی کی اضافیت اور اسلامی نقطہ نظر

187

ب۔ دنیا کے غیر حقیقی ہونے کا نظریہ

196

ہائپررئیلٹی کیاہے؟

199

تشکلیلی حقیقت کی مثالیں

206

دنیا کی حقیقت اور ہائپررئیلٹی اسلامی نقطہ نظر

207

ج۔ رد تشکیل

222

رد تشکیل کے بارےمیں اسلامی نقطہ نظر

233

حواشی

244

باب سوم: مابعد جدیدیت کا چیلنج اور اسلام

252

فصل اول: ما بعدجدیدیت کےاثرات

252

الف۔ اسلامی معاشرہ کے تناظر میں

252

ب۔ عالمی تناظر میں

258

فصل دوم: مابعد جدیدیت اور فروغ اسلام

263

فصل سوم: ما بعددجدیدیت اور اسلامی نظریہ حیات

271

حواشی

276

حاصل بحث

278

نتائج تحقیق

285

اشاریہ قرآنی آیات

288

احادیث نبوی

290

مصادر ومراجع

291

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1807
  • اس ہفتے کے قارئین: 3888
  • اس ماہ کے قارئین: 28416
  • کل قارئین : 47071344

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں