#2112

مصنف : عمر فاروق قدوسی

مشاہدات : 2201

اہل حدیث پر کچھ مزید کرم فرمائیاں

  • صفحات: 192
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 3840 (PKR)
(پیر 26 مئی 2014ء) ناشر : ادارہ ترجمان السنہ، لاہور

اہل علم کے ہاں اختلاف  رائے کا پایا جانا ایک معمول کی بات ہے،جو اگر باہمی احترام اور اخلاقیات کے دائرے میں رہ کر کیا جائے تو معاملات کے سلجھاو اور مسائل میں نکھار کا باعث بنتا ہے،لیکن اگر اس میں نامناسب لہجہ اور غیر شائستہ زبان استعمال کی جائے تو وہ اہل کی شان کے خلاف ہے۔اس طرز عمل سے انسان  احمقوں اور جاہلوں کے طبقہ میں شامل ہوجاتا ہے۔ایسا ہی کچھ طرز عمل نانوتوی،تھانوی اور گنگوہی چشمہ فیض سے سیراب ہونے والے  عبد الغنی طارق  نے اپنی مسموم کتاب  (شادی کی پہلی دس راتیں) میں اختیار کیا ہے اور اہل حدیثوں کے خلاف ایسی بازاری اور عریاں زبان استعمال کی ہے ،جسے پڑھ کر مولانا نانوتوی،تھانوی اور گنگوہی کی روحیں ضرور کانپ اٹھیں گی۔اس حیا باختہ کتاب کو دیکھ کر مکتبہ قدوسیہ کے مدیر معروف رائٹر عمر فاروق قدوسی﷾ نے اس کا انتہائی مہذب انداز میں جواب لکھا ہے ،جو پہلے  ماہنامہ الاخوہ میں شائع ہوا اور پھر احباب کے اصرار پر کتابی شکل میں بنام ( اہل حدیث پر کچھ مزید کرم فرمائیاں )چھاپ دیا گیا ہے۔اس کتاب میں موصوف عمر فاروق قدوسی نے بڑے احسن انداز میں ان کی جہالتوں کا جواب دیا ہے۔اللہ تعالی ان کی ان کاوشوں کو قبول ومنظور فرمائے۔آمین(راسخ)

 

 

عناوین

صفحہ نمبر

رفع الیدین کے بغیر نماز

21

دیوبند علماء کے متعلق بریلوی علماء کے فتاوے

23

’’اہل حدیث‘‘ کو شیطان کی اولاد قرار دینا

24

اپنی دلہن سے بدزبانی

26

مسئلہ رفع الیدین

26

حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ منسوب اثر اور اس کی حقیقت

27

حضرت ابن عمر رضی اللہ کی روایت اور اس پر بے سرو پا اعتراض

31

سنن کبریٰ (بیہقی) کی روایت اور جدید احناف

32

حضرت ابن عمر﷜ کے رفع الیدین نہ کرنے کا فسانہ

35

قول امام کی سرخ روئی کے سنہرے اصول

40

قول امام کی سرخ روئی کے سنہری اصول

41

حضرات صحابہ کا طرز عمل

41

حضرات صحابہ کا طرز عمل

41

سیدہ بریرہ رضی اللہ عنہا سے ان کے شوہر کے متعلق نبی کریمﷺ کی سفارش

42

غزوۂ احد کی حکمت عملی میں نبی کریمﷺ کا صحابہ کی رائے کو اپنی خواہش پر ترجیح دینا

42

جنگ احزاب کے موقع پر حضرات صحابہ کا نبی کریم ﷺ کی رائے سے اختلاف

43

حضرت سلمان فارسی﷜ کی خندق کھودنے کی تجوزی قبول ہونا

44

’’ہر حدیث قابل عمل نہیں ہوتی‘‘

45

لدھیانوی صاحب کے ہیرو کی دینی حالت

46

کیا صحابہ کا قول و فعل حجت ہے؟

47

احناف کا صحابہ کے قول و فعل کے حجت ہونے سے عملی انکار کی چند مثالیں

48

مفقود الخبر شوہر کے مسئلے میں حضرت عمر، عثمان اور علی کی مخالفت

48

وقوف عرفات کے موقع پر ابن عمر﷜ کے فعل کی مخالفت

48

عورتوں کے مسجد یا عید گاہ جانے میں حضرات صحابہ سے اختلاف

49

حضرت ابن عباس، عطا، مجاہد، مالک کا قول

50

امام ابو حنیفہ کا بعض صحابہ کی روایات مسترد کرنا

50

امام محمد طاہر پٹنی حنفی کا وقول

51

مرفوع حدیث کے خلاف صحابی کا قول حجت نہیں

52

شادی کی تیسری رات

 

بخاری شریف کا استہزاء

53

عورتوں کا ختنہ یا حدیث رسولﷺ کا مذاق

54

’’ابھی پتہ چل جائے گا تمہارا اور تمہارے امام بخاری کا‘‘

55

ختنون کے ملنے کی وضاحت موطا امام محمد میں

58

امام بخاری ایک رکعت کے مسائل سے بھی بے خبر تھے؟

59

امام ابو حنیفہ نے یہ مسائل کس کتاب میں بیان فرمائے ہیں؟

60

جس نے صحیح بخاری کو دیکھا وہ زندیق ہو گیا

62

جب اہل حدیث نوجوانوں نے مولانا امین اوکاڑوی کو لاجواب کر دیا

65

’’امام اعظم‘‘ پر اعتراض بے شرموں کا کام ہے؟

65

امام صاحب کے قول کو مسترد کرنے کے باوجود تقلید میں فرق نہ آنا

66

ائمہ احناف کی امام ابو حنیفہ سے اختلاف کی چند مثالیں

68

عربوں کا چندہ

70

شادی کی چوتھی رات

74

اہل مدینہ اور اہل عراق کے فکری اختلاف کا منطقی نتیجہ

74

امام بخاری کے متعلق ایک دیوبندی شیخ الحدیث کا تبصرہ

77

صحیحن کی توہین کے مرتکب کے متعلق شاہ ولی اللہ کا فتویٰ

78

محدثین کرام کا امام بخاری کو خراج تحسین

80

علماء احناف کا بخاری شریف کو اصح الکتب بعد کتاب اللہ کہنا

83

ران کا ستر ہونا

88

امام بخاری کا موقف

89

ستر کے مسائل میں علماء احناف کے باہمی اختلاف

91

اونٹوں کے پیشاب کا مسئلہ

93

صحیح بخاری کی روایت

93

چند علماء دیونبد کے اقتباسات

94

کھڑے ہو کر پیشاب کرنے کا مسئلہ

96

صحیح بخاری کی روایت

96

ایک دیو بندی عالم کی تشریح

97

مسند امام ابو حنیفہ کی روایت

97

مرزا غلام احمد قادیانی کون تھا؟

99

قول رسول کے باوجود قول امام کو ترجیح

100

مولانا محمود حسن کا اقرار

100

گستاخ رسول کے لیے رعایت۔۔۔ تقلید کی مجبوری

101

مرزا قادیانی کا بخاری شریف کے اصح الکتب بعد کتاب اللہ ہونے سے انکار کرنا

103

نماز کے فروعی مسائل میں مرزا قادیانی کی دیوبندیوں سے مماثلت

104

مسئلہ فاتحہ خلف الامام

105

نماز کے فروعی مسائل کے متعلق مرزا کی رائے

105

مرزا کا آہستہ آہستہ آمین کہنا اور رفع الیدین نہ کرنا

106

آمین بالجہر اور رفع الیدین کرنے پر ناپسندیدگی

106

ایک وتر کی ناپسندیدگی

107

قرآن کریم سے دیکھ کر قراءت

107

مصافحہ میں اہل حدیث کے طریقے سے گریز

108

مرزا ’’نبوت‘‘ سے پہلے بھی حنفی تھا اور بعد میں بھی

109

مرزا قادیانی کی نظر میں امام ابو حنیفہ﷫ کا مقام

110

مسیح موعود حنفی المذہب ہوگا

112

دعویٰ مسیحیت و نبوت کے بعد مرزا کا مسلک

113

مزارات پر حاضری

115

اہل قبور سے فیض طلب کرنا

116

نزول برکت کے مقامات

116

خانقاہ سراجیہ کندیاں شریف کے بانی مولانا ابو اسعد احمد خاں کی قبر سے اآواز آنا

117

جو شخص مولانا احمد خاں کی زیارت کرے گا، آتش جہنم اس پر حرام ہوگا

117

مولانا احمد خاں کا خط مولانا شبیر احمد عثمانی کے نزدیک نجات اخروی کا وسیلہ

118

مولانا احمد خاں کے لیے الہامامت

118

جو ان کی زیارت کے لیے آیا بخشا گیا

119

کشف قبور اور چلہ کشی

119

مرزا کی اہل قبور سے ملاقات

120

خانقاہ سراجیہ کندیاں شریف کے بانی کو نبی کریم ﷺ کا اپنی قبر سے سلام کا جواب دینا

122

مولانا ابو اسعد احمد خان کی توجہ سے نصف عذاب قبر دور ہونا

122

لطیف روحانی جسم کے ساتھ ہزاروں کوس کا سفر

123

شاہ احمد سعیددہلوی کا طوفان میں گھرے جہاز کو پشت پر اٹھانا

123

وسیلہ

124

مرزا کی ضعیف الاعتقادی

124

مروجہ درود مرزا کا رسول اللہﷺ سے مدد طلب کرنا

125

مرزا حیات النبی کے قائل تھے

126

بشریت نبوی

126

حدیث لولاک

126

رسم چہلم کی حکمت و اہمیت

127

محرم کی نذر و نیاز

127

رسوم و رواج

127

اہل حدیث کے متعلق مرزا کی رائے

128

’’اہل حدیث اور یہود‘‘

128

مولانا محمد حسین بٹالوی کے متعلق مرزا کی رائے

128

ضعیف روایات بھی واجب العمل

129

مرزا قادیانی اور تصوف

129

حضرت تھانوی کی مرزا کے متعلق رائے

130

شادی کی پانویں رات

 

اہل حدیث کے منتعلق چند نفرت انگیز کلمات

131

وطی فی الدبر کی رذیل ترین بات

131

’’وطی فی الدبر‘‘ بخاری پر عمل کرنا ہے (اعیاذاً باللہ)

132

صحیح بخاری کا مذکورہ باب اور اسک کی تشریح ایک دیوبندی عالم کے قلم سے

133

’’یاتيها في‘‘ کا مجرور ذکر نہ کرنے کی وجہ مولانا سلیم اللہ خان کی رائے

135

’’یاتيها في‘‘ کا مجرور ذکر نہ کرنے کی وجہ۔۔۔ شیخ الحدیث جامعہ اشرفیہ کی رائے

135

ترجمہ الباب کی روشنی میں ’’یاتيها في‘‘ کا مجرور

136

حضرت عبد اللہ بن عمر ﷠ کا فتویٰ

137

امام بخاری کا اس مسئلے میں موقف

138

امام ابن قیم کی رائے

140

شیخ الاسلام اما ابن تیمیہ پر ’’نظر کرم‘‘

140

فہرست نامکمل

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1754
  • اس ہفتے کے قارئین 14404
  • اس ماہ کے قارئین 37944
  • کل قارئین49237201

موضوعاتی فہرست