#8045

مصنف : مرکز البحوث والدراسات

مشاہدات : 924

مدینہ منورہ کی زیارت کے شرعی آداب

  • صفحات: 40
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 1000 (PKR)
(جمعہ 13 دسمبر 2019ء) ناشر : مرکز البحوث و الدراسات بالرئسۃ

اسلامی تاریخ کے لحاظ سے مدینہ منورہ دوسرا بڑا اسلامی مرکز اور تاریخی شہر ہے ۔نبی ﷺ کی ہجرت سے قبل اس  کا نام یثرب تھا اورغیر معروف تھا   لیکن آپ ﷺ کی آمد ،مہاجرین کی ہجرت اور اہل مدینہ کی قربانیوں نے اس غیر معروف شہر کو اتنی شہرت و عزت بخشی کہ اس شہرِ مقدس سے قلبی لگاؤ اور عقیدت ہر مسلمان کا جزو ایمان بن چکی ہے ۔اس شہر میں بہت سے تاریخی مقامات  اور بکثرت اسلامی آثار وعلامات پائے جاتے ہیں جن سے شہر کی عظمت ورفعت شان کا پتہ چلتا ہے.اس شہر مقدس کی فضیلت میں بہت سی احادیث شریفہ وارد ہوئی ہیں۔سیدنا عبد اللہ بن زید نبی کریم ﷺ سے نقل کرتے ہیں ’’کہ آپ ﷺنے ارشاد فرمایا: سیدناابراہیم﷤ نے مکہ کو حرم قرار دیا اور اس کے لئے دعا کی، میں مدینہ کو حرم قرار دیتا ہوں اورمدینہ کے لئے دعا کرتا ہوں کہ  یہاں کے مُد میں  اس کے صاع میں برکت ہو۔‘‘ (صحیح بخاری) نبی کریم ﷺ نے  مدینہ منورہ کے  چند مقامات کی زیارت کو  مشروع قرار کردیا ہے ان مقامات کی طرف جانا سیدنا  حضرت محمد ﷺ کی اقتدا اور آپ کے اسوۂ حسنہ کے پیش  نظر  موجبِ اطاعت ہے ۔ زیر نظرکتابچہ’’ مدینہ منورہ کی زیارت  کے شرعی آداب  ‘‘ سعودی عرب کےادارے  امر بالمعروف  ونہی عن  المنکر  کی طرف  سے پیش کیا  گیا اس میں قرآن وحدیث کی روشنی میں اس بات   کو واضح کیا ہے کہ   مدینہ منورہ کے مقدس مقامات (مسجد نبوی ، مسجد قبا ،بقیع الغرقد،شہدائے احد) کی زیارت کے وقت تعلیماتِ نبویﷺ پر عمل کرتے ہوئے بدعات وخرافات سے مکمل طور پر اجتناب کیا جا ئے محض کتاب وسنت اور آثار صحابہ پر اکتفا کیا جائے اور ان شعائر اسلام کی زیارت کا مقصد صر ف اور صرف اللہ تعالیٰ کا قرب حاصل کرنا مقصود ہو ۔اللہ تعالیٰ رسالہ ہذا کے مرتبین وناشرین  کو اجر عظیم سے نوازے ۔(آمین)(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

مقدمہ

5

مسجد نبوی

7

مسجد قباء

21

بقیع الغرقد

24

شہدائے احد

29

اس مصنف کی دیگر تصانیف

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1238
  • اس ہفتے کے قارئین 15382
  • اس ماہ کے قارئین 10972
  • کل قارئین57982697

موضوعاتی فہرست