#6756

مصنف : حافظ ابن حجر عسقلانی

مشاہدات : 6069

تقریب التہذیب ( اردو ) جلد اول

  • صفحات: 720
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 18000 (PKR)
(اتوار 26 اگست 2018ء) ناشر : مکتبہ رحمانیہ لاہور

علم  اسماء الرجال علم راویانِ حدیث کی سوانحِ عمری اورتاریخ  کا  علم ہے، اس میں راویوں کے نام، حسب ونسب، قوم ووطن، علم وفضل، دیانت وتقویٰ، ذکاوت وحفظ، قوت وضعف اور ان کی ولادت وغیرہ کا بیان ہوتا ہے، بغیراس علم کے حدیث کی جانچ مشکل ہے، اس کے ذریعہ ائمہ حدیث نے مراتب روات اور احادیث کی قوت وضعف کا پتہ لگایاہےحدیث کے راوی جب تک صحابہ کرام﷢ تھے اس فن کی کوئی ضرورت نہ تھی، وہ سب کے سب عادل، انصاف پسند اور محتاط تھے ۔کبارِتابعین بھی اپنے علم وتقویٰ کی روشنی میں ہرجگہ لائق قبول سمجھے جاتے تھے، جب فتنے پھیلے اور بدعات شروع ہوئیں تو ضرورت محسوس ہوئی کہ راویوں کی جانچ پڑتال کی جائے۔ تو ائمہ  محدثین  نے علم اسماء الرجال کو شروع کیا ۔سو حدیث کے لیے جس طرح متن کو جاننا ضروری ہے، سند کو پہچاننا بھی ضروری ٹھہرا کہ اسماء الرجال کے علم کے بغیر علم حدیث میں کوئی شخص کامیاب نہیں ہوسکتا، امام علی بن المدینی (۲۳۴ھ) کہتے ہیں:معانی حدیث میں غور کرنا نصف علم ہے تو معرفت رجال بھی نصف علم ہے۔ (مقدمہ خلاصہ تہذیب الکمال، فصل وھذہ نبذۃ من أقوال الائمۃ فی ہذا:۱/۱۶۵ ) ائمہ محدثین نے اس  اسماء الرجال  پر باقائدہ کتب مرتب کیں۔پہلے دور کی اسماء الرجال کی کتابیں راویوں کے نہایت مختصر حالات کو لیے ہوئے تھیں، بعد میں ابنِ عدی اور ابونعیم اصفہانی نے سب سے پہلے معلومات زیادہ حاصل کرنے کی طرف توجہ کی، خطیب بغدادی ابن عبدالبر اور ابن عساکر دمشقی نے ضخیم جلدوں میں بغداد اور دمشق کی تاریخیں لکھیں تو ان میں تقریباً سب اعیان ورجال کے تذکرے آگئے ہیں۔ جہاں تک فنی حیثیت کا تعلق ہے سب سے پہلے حنبلی المسلک حافظ عبدالغنی المقدسی نے اس پر قلم اٹھایا آپ نے “الکمال فی اسماءالرجال” لکھی  بعد ازاں   محدثین نے انہی کے نقوش وخطوط پر    مزید کام کیا ۔ ۔ حافظ جمال الدین ابوالحجاج یوسف بن عبدالرحمٰن المزی نے الکمال” کو پھر سے مرتب کیا اور اس کا نام “تہذیب الکمالرکھا، آپ نے اس میں اور اہل فن سے بھی معلومات جمع فرمائیں۔پھرحافظ المزی کے شاگرد جناب حافظ شمس الدین ذہبی اٹھے اور انہوں نے “تہذیب الکمال” کو مختصر کرکے “تذھیب التہذیب” لکھی، اس کے علاوہ “میزان الاعتدال” اور “سیرالنبلاء” اور”تذکرۃ الحفاظ” جیسی بلند پایہ کتابیں بھی لکھیں، جو اپنے فن پر وقت کی لاجواب کتابیں سمجھی جاتی ہیں۔پھرشارح صحیح بخاری  حافظ ابن حجر عسقلانی نے “تذہیب التہذیب” کو اپنے انداز میں مختصر کیا اور “تہذیب التہذیب” لکھی جو بارہ جلدوں میں ہے؛ پھرخود ہی اس کا خلاصہ “تقریب التہذیب” کے نام سے لکھا ہے، اس کے علاوہ آپ نے “لسان المیزان” بھی لکھی۔  زیر تبصرہ کتاب  حافظ ابن حجر عسقلانی  کی کتاب  تقریب التہذیب  کااردو ترجمہ  ہے  ۔ اس کا اردو  ترجمہ  کی سعادت  جناب مولانا  نیاز احمد  نے  نے  حاصل کی  ہے مکتبہ رحمانیہ لاہور نے  اسے  دو جلدوں میں طبع کیا ہے۔ یہ کتاب  طلاب علوم حدیث کے لیے   پیش قیمت  تحفہ  ہے ۔(م۔ا)   

عناوین

صفحہ نمبر

عرض ناشر

9

عرض مترجم

11

مردحضرات

 

حرف الالف

15

حرف الباء

99

حرف التاء

121

حرف الثاء

124

حرف الجیم

131

حرف الحاء

147

حرف الخاء

225

حرف الدال

247

حرف الذال

255

حرف الراء

257

حرف الزاء

273

حرف السین

298

حرف الشین

370

حرف الصاد

385

حرف الضاد

401

حرف العین

413

فہرست جلددوم

 

حرف الغین

7

حرف الفاء

11

حرف القاف

22

حرف الکاف

42

حرف اللام

51

حرف المیم

53

حرف النون

232

حرف الھاء

352

حرف الواو

272

حرف لام الف

286

حرف الیاء

287

کنتیوں کابیان

 

حرف الالف

339

حرف الباء

349

حرف التاء

361

حرف الثاء

363

حرف الجیم

365

حرف الحاء

381

حرف الخاء

382

حرف الدال

386

حرف الذال

388

حرف الراء

389

حرف الزاء

394

حرف السین

398

حرف الشین

409

حرف الصاد

412

حرف الضاد

417

حرف العین

418

فہرست جلددوم

421

حرف الغین

422

حرف الفاء

447

حرف القاف

452

حرف الکاف

455

حرف اللام

458

حرف المیم

460

حرف النون

479

حرف الھاء

483

حرف الواو

487

حرف  لام الف

490

حرف الیاء

491

باب:خواتین کےبیان میں

624

حرف الالف

625

حرف الباء

 

حرف التاء

626

حرف الثاء

626

حرف الجیم

639

حرف الحاء

630

حرف الخاء

632

حرف الدال

635

حرف الذال

636

حرف الراء

637

حرف الزاء

639

حرف السین

641

حرف الشین

643

حرف الصاد

644

حرف الضاد

645

حرف العین

646

فہرست جلددوم

646

حرف الغین

649

حرف الفاء

650

حرف القاف

652

حرف الکاف

653

حرف اللام

654

حرف المیم

655

حرف النون

657

حرف الھاء

658

حرف الیاء

659

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

اس کتاب کی دیگر جلدیں

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1686
  • اس ہفتے کے قارئین 3886
  • اس ماہ کے قارئین 65625
  • کل قارئین51149160

موضوعاتی فہرست