#8109

مصنف : حافظ مبشر حسین لاہوری

مشاہدات : 3314

قیامت کی نشانیاں صحیح احادیث کی روشنی میں

  • صفحات: 427
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 10675 (PKR)
(جمعرات 20 فروری 2020ء) ناشر : فرید بک ڈپو، نئی دہلی

وقوع  قیامت کا  عقیدہ اسلام کےبنیادی  عقائد میں سےہے اور ایک    مسلمان کے  ایمان کا   حصہ ہے ۔  قیامت آثار  قیامت کو  نبی کریم  ﷺ نے  احادیث میں  وضاحت کےساتھ بیان کیا ہے  جیساکہ احادیث میں  ہے کہ قیامت اس وقت تک قائم نہ ہو گی جب تک عیسیٰ بن مریم ﷤نازل نہ ہوں گے ۔ وہ دجال اورخنزیر کو قتل کریں گے ۔ صلیب کو توڑیں گے۔ مال عام ہو جائے گا اور جزیہ کو ساقط کر دیں گے اور اسلام کے علاوہ کوئی اور دین قبول نہ کیا جائے گااسے زمانہ میں اللہ تعالیٰ اسلام کے سوا سب ادیان کو ختم کر دے گا اور سجدہ صرف اللہ وحدہ کے لیے ہوگا۔ اس سے واضح ہوتا ہے کہ عیسٰی ﷤کے زمانہ میں تمام روئے زمین پر اسلام کی حکمرانی ہوگی اور اس کے علاوہ کوئی دین باقی نہ رہے گا۔قیامت پر ایمان ویقین سےانسان کی دینوی زندگی خوشگوار ہوجاتی ہے اور آخرت سنور جاتی ہے۔ اسی لیے اسلام میں ایمان بالآخرۃ اور روز قیامت پر ایمان لانا فرض ہےاوراس کےبغیر بندہ کاایمان صحیح نہیں ہوسکتا۔علامات قیامت کے حوالے  سے   ائمہ محدثین نے  کتبِ احادیث میں     ابواب بندی بھی کی  ہے اور  بعض  اہل علم نے    اس موضوع پر  کتب  لکھی ہیں ۔ زیر نظر کتاب’’ قیامت کی نشانیاں صحیح احادیث کی روشنی میں ‘‘ڈاکٹر حافظ مبشر حسین  لاہور ی ﷾ (فاضل جامعۃ الدعوۃ الاسلامیۃ،مرید کے ،سابق  ریسرچ سکالرمجلس التحقیق الاسلامی ،لاہور) کی اہم تصنیف ہے جس میں انہوں قربِ قیامت  کی نبوی پیش گوئیوں(شخصیات، حیوانات، ظہور مہدی ونزول مسیح،یاجوج ماجوج، وغیرہ  کے  متعلقہ پیش گوئیاں) کوقرآن واحادیث کی  روشنی میں  بیان کرنے ساتھ ساتھ   پیش گوئیوں  کی تعبیر وتعیین کےحوالےسے بعض معاصر مفکرین کی آراء کاتنقیدہ جائزہ اور صحیح نکتہ نظر بھی پیش کیا ہے ۔اس کتاب کی تیاری میں  حافظ عبد الرحمن مدنی ﷾(مدیر اعلی ماہنامہ محدث،لاہور) کی  کوشش سے مجلس التحقیق الاسلامی کے  زیر اہتمام  منعقد ہونے والے  علمی مذکرہ  (مؤرخہ 26جنوری2003ء) کی  رپورٹ بھی شاملِ اشاعت ہے  جس میں جید علماء کرام نے  شریک ہوکر اپنی علمی آراء پیش کیں۔ کتاب کے  فاضل مؤلف اس کتاب کے علاوہ بھی کئی کتب کے  مصنف ومترجم ہیں  ۔اور تقریبا عرصہ 15 سال  سے ادارہ تحقیقات اسلامی  ،اسلام آباد میں  بطور  ریسرچ سکالر    خدمات  انجام دےرہے ہیں  ۔ اللہ تعالیٰ اشاعتِ دین کےلیے  ان کی  جہود کوشرف ِقبولیت سے نوازے  او راس  کتاب کو  لوگوں کے  عقائد کی اصلاح کا ذریعہ بنائے  (آمین) پاکستان میں یہ کتاب  ’’پیش گوئیوں کی حقیقت اور دورِ حاضرمیں ان کی تعبیر کا صحیح منہج‘‘کے نام سے شائع ہوئی ہے ۔ بعد ازاں  فرید بک ڈپو ،دہلی نےاسے’’قیامت کی نشانیاں صحیح احادیث کی روشنی میں ‘‘ کے نام سے شائع کیا ہے ۔(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

پیش لفظ

11

مقدمہ

12

عالم غیب

13

عالم شہادت

14

عالم شہادت میں عالم غیب کی جھلک

15

انسانی معلومات کے ذرائع اور وحی الہٰی

16

حواس خمسہ کی حدود و قیود

17

انسانی حواس جن چیزوں کے تدارک سے عاجز ہوں کیا ان کا انکار درست ہے ؟

19

ایمان کیا ہے ؟

23

ایمان بالآخرت

24

قیامت برحق ہے

25

قیامت کا ایک منظر

27

قیامت قریب ہے

28

ایک اشکال کا جواب

30

وقوع قیامت کا علم صرف اللہ تعالیٰ کے پاس ہے

34

منکرین قیامت کی سزا

36

قیامت کے مختلف نام

37

قیامت کی حقیقت

41

قیامت کی نشانیاں ،کیوں؟

42

قیامت کی علامات صغری و کبری

43

کیا خبر واحد حجت نہیں ؟

45

خبر واحد

46

خبر واحد کی حجیت قرآن مجید کی روشنی میں

50

خبر واحد کی حجیت احادیث کی روشنی میں

52

عقائد میں بھی خبر واحد حجت ہے

54

لسان نبوت سے وجود دجال کی خبر واحد کی تائید

55

خبر واحد اور ائمہ سلف

55

خبر واحد سے انکار

57

باب: 1

 

قیامت کی چھوٹی نشانیاں

58

خاتم النبیین کا ظہور

59

انشقاق القمر

63

نبی ؑ کی وفات

65

امت مسلمہ کا ظہور

68

ہرگھر میں اسلام داخل ہو گا

70

لسان نبوت سے وعدہ

72

ہر طرف امن وامان ہو گا

73

ہر طرف امن و امان ہو گا

73

فتنوں کا ظہور

77

حضرت عمر﷜فتنوں کے درمیان رکاوٹ ہیں

79

فتنے مشرق سے ظاہر ہوں گے

81

سالم بن عبد اللہ بن عمر﷜ کا فیصلہ

84

قتل عام ہو گا

85

شہادت عثمان بن عفان

87

جنگ جمل

90

جنگ صفین

95

خوارج کا ظہور

97

جھوٹے نبیوں اور دجالوں کا ظہور

102

مال و دولت کی فراوانی

107

بیت المقدس کی فتح

112

طاعون کی وبا

114

ارض حجاز سے آگ کا روشن ہونا

116

ترکوں سے جنگ

118

امانت مفقود اور خیانت بھر پور ہو گی

125

جابر حکمران

129

فحاشی پھیل جائے گی

132

قرآن مجید کا فیصلہ

133

عورتیں کپڑے پہننے کے باوجود ننگی ہوں گی

134

علم کا خاتمہ او رجہالت میں اضافہ

136

زنا کاری عام ہو گی

139

زنا کاری کے سدباب کے لیے کچھ تجاویز

141

شراب حلال سمجھی جائے گی

142

گانا بجانا رواج پا جائے گا

144

رشتہ داری اور ہمسائیگی

146

لوگ اجنبی بن جائیں گے

148

جھوٹ بکثرت بولا جائے گا

149

جھوٹی گواہی دی جائے گی

151

بدعملی پھیل جائے گی

152

لوگ بخیل ہو جائیں گے

155

امت مسلمہ شرک میں مبتلا

156

مساجد میں زیب و زینت

163

سود اور حرام مال

165

کاروبار میں عورتیں

167

سیاہ خضاب استعمال

169

سیاہ خضاب کی ممانعت

170

قریش کا خاتمہ ہو جائے گا

171

کفار کی تقلید

173

زلزلے بکثرت ہوں گے

176

صورتیں مسخ ہوں گی اور لوگ زمین میں دھنسائے جائیں گے

178

دل کا دورہ بکثرت ہو گا

173

اسلام صرف’’معروف ‘‘ لوگوں کو کیاجائے گا

184

قرآن کو بھیک مانگنے کا ذریعہ بنایا جائےگا

187

دعا اور طہارت میں زیادتی

190

’’نااہل‘‘ عہدے سنبھال لیں گے

192

غریب امیر ہو جائیں گے

196

فلک بوس عمارتیں میں مقابلے بازی ہو گی

199

قرطاس وقلم کا ظہور

201

عقل پرست استاد بن جائیں گے

203

زمانہ قریب ہو جائے گا

205

بازار قریب قریب ہوں گے

208

لونڈی اپنے مالک کو جنم دے گی

209

دنیا سے محبت اور موت سے نفرت ہو گی

211

نیک لوگ معدوم ہو جائیں گے

213

دین الہٰی ہو جائے گا

216

لوگ بدل جائیں گے

219

بارش بکثرت ہو گی مگر خیمے محفوظ رہیں گے

221

بارش بکثرت مگر پیداوار نہیں ہو گی

222

قسطنطنیہ کی فتح

224

روما فتح ہو گا

227

کفار مسلمانوں پر ٹوٹ پڑیں گے

229

ہر گھر میں فتنہ داخل ہوجائے گا

231

عیسائیوں سے مل کر مسلمان تیسرے ملک سے جنگ لڑیں گے اور مسلمانوں سے عیسائیوں کی جنگ

233

رومی کثرت تعداد سے بڑھ جائیں گے

239

دریائے فرات سے سونے کا پہاڑ

241

مرد قلیل اور عورتیں کثیر

244

مصر ،شام اور عراق اپنے پیمانے اورخزانے رو ک لیں گے

246

موت کی تمنا کی جائے گی

248

ایک قحطانی حکمران ہو گا

255

ایک جھجاہ نامی بادشاہ ہو گا

257

حیوانات  و جمادات انسان سے ہم کالمی

258

شجر و حجر پکار اٹھیں گے

261

مؤمن کا ہر خواب سچا ثابت ہو گا

262

عرب کے دشت و صحرا باغات میں بدل جائیں گے

264

مدینہ ویران ہو جائے گا

267

باب : 2

 

قیامت کی بڑی نشانیاں

272

قیامت کی دس بڑی بڑی نشانیاں

273

قیامت کی علامات کبری کا تسلسل

274

امام مہدی کا ظہور

275

خروج دجال

286

مسیح دجال بڑے غصے سے خروج کرے گا

288

دجال کی شکل و صورت

289

کیا دجال آدمی ہو گا ؟

293

کیادجال زندہ ہے ؟

294

کیا نبی کریم ﷺ نے دجال کو دیکھا تھا؟

298

دجال کی شعبدہ بازیاں

299

دجال دنیا کا سب سے بڑا  فتنا

303

دجال کی جنت اور جہنم

307

دجال کے بچنے کے لیے پہاڑوں سے پناہ

309

دجال مشرق کی طرف خراساں سے نکلے گا

309

جن لوگوں نے پسندیدہ لیڈر دجال

311

دجال خدانی کا دعویٰ کرے گا

313

دجال سے بچاؤ کے طریقے

316

دجال کی بے بسی کا نظارہ

319

اپنے ماتھے پر لکھا کافر نہ مٹا سکے گا

319

آنکھیں  دونوں عیب دار ہوں گی

319

مکہ اور مدینہ میں داخل نہ ہو سکے گا

320

قتل نہیں کر پائے گا

321

دجال سچے اور مخلص مسلمان کو نقصان نہ پہنچا سکے گا

321

دجال کے فتنے سے پناہ مانگنی چاہیے

322

بارگاہ الہٰی میں دجال کی حیثیت

324

دجال کتنے دن زمین پر دندنا پھرے گا

324

دجال مکہ اور مدینہ میں داخل نہیں ہو سکتا

326

دجال کے لیے سب سے سخت لوگ کون سے ثابت ہوں گے؟

328

دجال بیت اللہ اور بیت المقدس میں داخل نہیں ہوسکتا

329

دجال اوراس  کے لشکر کی ہلاکت

329

دجال ملعون کی جائے قتل

333

ابن صیاد دجال تھا؟

340

حافظ ابن کثیر کا فیصلہ

346

شیخ الاسلام ابن تیمیہ  کا فیصلہ

347

ابن صیاد کاہن تھا

347

ابن صیاد دجال کےبارے میں معلومات رکھتا تھا

349

ابن صیاد’’حرہ‘‘ کےدن گم ہو گیا

350

کیا ابن صیاد نے تائب ہو کر اسلام قبول کر لیا تھا؟

350

نزول عیسیٰ قرآن کی روشنی میں

353

نزول مسیح حدیث کی روشنی میں

354

صفت و مقام نزول عیسیٰ

355

وقت نزول عیسیٰ

356

علامات عیسیٰ

357

عیسیٰ جہاد کے ذریعے دین اسلام غالب کر دیں گے

359

حضرت عیسیٰ حج اورعمرہ کریں گے

360

حضرت عیسیٰ کتنی دیر زمین پر قیام فرمائیں گے

364

عیسیٰ کی وفات اور تجہیز و تکفین

365

یاجوج وماجوج قرآن مجید کی روشنی میں

370

یاجوج وماجوج حدیث کی روشنی میں

371

یاجوج وماجوج کی مصروفیت

372

یاجوج وماجوج کا خروج

373

یاجوج وماجوج کا فتنہ فساد

374

دیوار ذوالقرنین میں سوراخ

376

یاجوج وماجوج کی شکل وصورت

376

یاجوج وماجوج کی کثرت

377

یاجوج وماجوج کی ہلاکت

378

امن وامان کا سنہری دور

383

مشرق ، مغرب اورجزیرہ العرب .....

386

ہر طرف دھواں چھا جائے گا

390

احادیث کی روشنی میں

390

سورج مغرب سے طلوع ہو گا

396

احادیث کی روشنی میں

396

دابۃ الارض

403

احادیث کی روشنی میں

403

ہر بندہ مومن کی روح قبض کر لی جائے گی

406

بیت اللہ کی حرمت پامال کر دی جائے گی

410

زمین پر صرف بدترین لوگ باقی رہ جائیں گے

414

خوفناک آگ ظاہر ہو گی

417

جائے خروج

417

آگ لوگوں کو کس طرح ہانکے گی ؟

418

ارض محشر

420

اس مصنف کی دیگر تصانیف

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 2083
  • اس ہفتے کے قارئین 20278
  • اس ماہ کے قارئین 79010
  • کل قارئین57843343

موضوعاتی فہرست