#6510

مصنف : حافظ شفیق الرحمن زاہد

مشاہدات : 1544

مقام رسالت کا عملی تصور

  • صفحات: 50
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 1250 (PKR)
(ہفتہ 07 جولائی 2018ء) ناشر : الحکمہ انٹر نیشنل

اس روئے ارض پر انسانی ہدایت کے لیے حق تعالیٰ نے جن برگزیدہ بندوں کو منتخب فرمایا ہم انہیں انبیاء ورسل﷩ کی مقدس اصطلاح سے یاد رکرتے ہیں اس کائنات کے انسانِ اول اور پیغمبرِاول ایک ہی شخصیت حضرت آدم کی صورت میں فریضۂ ہدایت کےلیے مبعوث ہوئے ۔ اور پھر یہ کاروانِ رسالت مختلف صدیوں اور مختلف علاقوں میں انسانی ہدایت کے فریضے ادا کرتے ہوئے پاکیزہ سیرتوں کی ایک کہکشاں ہمارے سامنے منور کردیتاہے ۔درخشندگی اور تابندگی کے اس ماحول میں ایک شخصیت خورشید جہاں تاب کی صورت میں زمانےاور زمین کی ظلمتوں کو مٹانے اورانسان کےلیے ہدایت کا آخری پیغام لے کر مبعوث ہوئی جسے محمد رسول اللہ ﷺ کہتے ہیں ۔ آج انسانیت کےپاس آسمانی ہدایت کا یہی ایک نمونہ باقی ہے۔ جسے قرآن مجید نےاسوۂ حسنہ قراردیا اور اس اسوۂ حسنہ کےحامل کی سیرت سراج منیر بن کر ظلمت کدۂ عالم میں روشنی پھیلارہی ہے ۔ رہبر انسانیت سیدنا محمد رسول اللہ ﷺ قیامت تک آنے والےانسانوں کےلیے’’اسوۂ حسنہ‘‘ ہیں ۔حضرت محمد ﷺ ہی اللہ تعالیٰ کے بعد ،وہ کامل ترین ہستی ہیں جن کی زندگی اپنے اندر عالمِ انسانیت کی مکمل رہنمائی کا پوراسامان رکھتی ہے ۔ انسان کے لکھنے پڑھنے کی ابتدا سے اب تک کوئی انسان ایسا نہیں گزرا جس کے سوانح وسیرت سے متعلق دنیا کی مختلف زبانوں میں جس قدر محمد رسول اللہ ﷺ سے لکھا جاچکا ہے اور لکھا جارہا ہے ۔اردو زبان بھی اس معاملے میں کسی بھی زبان سے پیچھے نہیں رہی اس میں حضورﷺ سے متعلق بہت کچھ لکھا گیا اور ہنوز یہ سلسلہ جاری ہے ۔حضور اکرم ﷺ کی ذات اقدس پر ابن اسحاق اورابن ہشام سے لے کر گزشتہ چودہ صدیوں میں اس ہادئ کامل ﷺ کی سیرت وصورت پر ہزاروں کتابیں اورلاکھوں مضامین لکھے جا چکے ہیں اورکئی ادارے صرف سیرت نگاری پر کام کرنے کےلیےمعرض وجود میں آئے ۔اور پورے عالمِ اسلام میں سیرت النبی ﷺ کے مختلف گوشوں پر سالانہ کانفرنسوں اور سیمینار کا انعقاد بھی کیا جاتاہے جس میں مختلف اہل علم اپنے تحریری مقالات پیش کرتے ہیں۔ ہنوذ یہ سلسلہ جاری وساری ہے ۔یہ سب اس بات کا بیّن ثبوت ہے کا انسانوں میں سے ایک انسان ایسا بھی تھا اور ہے کہ جس کی ذات کامل واکمل پر جس قدر بھی لکھا جائے کم ہے اور انسانیت اس کی صفات ِ عالیہ پر جس قدر بھی فخر کرے کم ہے ۔ زیرتبصرہ کتابچہ’’مقام رسالت کاعملی تصّور‘‘ الحکمۃ انٹرنیشنل ،لاہور کے مدیر حافظ شفیق الرحمٰن زاہد﷾ کامرتب شدہ ہے اس مختصر کتابچہ میں مرتب موصوف نے عصر حاضر میں امت مسلمہ میں پیداہونے والی بیماریوں او ر معاشرتی بگاڑ کی وجہ سیرت طیبہ سے دور رہ کر رجدید مغری نظریات اور الحاد پر مبنی غلط دینی تعبیرات اور مغربی تہذیب کو اختیار کرنا قرار دیا ہے ۔ اوراس بات کو بھی واضح کیا ہے کہ امت مسلمہ میں پیدا ہونے والی ان بیماریوں کے علاج کے لیے ضروری ہے کہ نبی کریم ﷺ کی حیات طیبہ کو ہر زاویے سے قوم کے سامنے پیش کیا جائے ۔ کیونکہ امت کی کامیابی اور کائنات کی بقا کا راز صرف نبی ﷺکی سیرت مبارکہ میں مضر ہے ۔ آپ ﷺ نے حقوق العباد ، امن عالم ،اعلیٰ اخلاقی رویوں، باہمی اتفاق واتحاد ، محبت ومودت ، جذبہ ایثار قربانی ، دوسروں کو اپنے اُوپر ترجیح دینا اور انکا دکھ درد محسوس کرنا غرض زندگی کے انفرادی واجتماعی شعبہ جات میں ایک آئیدیل نمونہ ہمارے سامنے پیش کیا ہے ۔ آپ ﷺ کی تعلیمات جدید نسل کو جہاں نظریاتی وایمانی اعتبار سے دنیا کی مضبوط باخلاق اور مہذب قوم بنائے گی وہاں مادی اعتبار سے بھی انہیں دنیا کی ترقی یافتہ قوم بنائے گی۔کتابچہ ہذا کے مرتب اس کے علاوہ بھی متعدد اصلاحی کتابچہ جات کے مرتب وناشر ہیں ان مطبوعہ کتابچہ جات کی تفصیل اس کتاب کے بیک ٹائٹل پر موجود ہے ۔ اللہ تعالیٰ حافظ شفیق الرحمٰن ﷾ کے ادارے کو مزید کامیابیوں وکامرانیوں سے ہمکنار کرے اور ان کی تمام مساعی جمیلہ کو شرف قبولیت سے نوازے ۔ آمین (م۔ا)

فہرست زیر تکمیل

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 2288
  • اس ہفتے کے قارئین 4528
  • اس ماہ کے قارئین 13072
  • کل قارئین54061192

موضوعاتی فہرست