دینی امور پر اجرت کا جواز(138#)

ڈاکٹر ابو جابر عبد اللہ دامانوی
مکتبہ دار الرحمانیہ،کراچی
83
1660 (PKR)
1.76 MB

دور حاضر میں ایک اہم ترین مسئلہ بہت اہمیت اختیار کر گیا ہے کہ آیا قرآن وسنت کی تعلیم دینے پر حاصل کیا جانے والا وظیفہ کس نوعیت سے تعلق رکھتا ہے؟آیا کہ ایک معلم شریعیت کے لیے اس کا لینا جواز رکھتا ہے یا نہیں؟جدید دور کے ایک نوزائیدہ گروہ (جسے عرف عام میں توحیدی گروہ کے نام سے یاد کیا جاتا ہے) کے نزدیک دینی امور مثلاً امامت، قرآن پڑھانے وغیرہ پر اجرت لینا شرعی تعلیمات کے خلاف اور حرام ہے۔ ان کی طرف سے اس سلسلے میں ذہن سازی کیلئے مفت اردو لٹریچر تقسیم کیا جا رہا ہے۔فاضل مؤلف نے ان کے اس دعوی کے بطلان پر کتاب و سنت کی روشنی میں دلائل پیش کئے ہیں اور اس گروہ کی طرف سے پیش کئے جانے والے اعتراضات کے بھرپور جوابات دیے ہیں۔
 

 

 

 

عناوین

 

صفحہ نمبر

دینی امور پر اجرت کا جواز

 

10

دلیل نمبر1- ابو سعید خدری کی روایت

 

10

عبداللہ بن عباس کی روایت

 

13

حافظ ابن حجر العسقلانی کی وضاحت

 

15

امام نووی رحمہ اللہ کی وضاحت

 

16

امام ترمذی کی وضاحت

 

17

امام ابن العربی کی وضاحت

 

18

امام البہیقی کی وضاحت

 

18

امام خطابی کی وضاحت

 

19

امام ابن حزم الاندلسی کا وضاحت

 

20

سید محمود آلوسی الحنفی کی وضاحت

 

21

مولانا خلیل احمد سہارنپوری کا وضاحت

 

22

احناف کا مؤقف

 

22

دوسری دلیل ( قرآن کریم کو مہر قرار دینے والی روایت)

 

23

امام الترمذی کی وضاحت

 

25

ام المؤمنین صفیہ کا مہران کی آزادی قرار پایا

 

25

ام سلیم کا مہر ابو طلحہ کا اسلام قبول کرنا قرار پایا

 

26

جناب موسی علیہ السلام کا نکاح

 

28

بعض اعتراضات کے جوابات

 

29

یہ ایک خاص واقعہ تھا؟جس کی وجہ قبیلہ والوں کی بے مروتی تھی اور اس کا جواب

 

30

قبیلہ والوں کا صحابہ کرام کی دودھ سے تواضع کرنا

 

33

قد اصبتم اور احسنتم کے الفاظ کو نقل نہ کرنا

 

33

دینی علوم پڑھانے والوں کے وظائف پر پابندی لگانے کامقصد دینی علوم کا خاتمہ ہے

 

33

قیامت کی علامات میں سے علم کا اٹھ جانا بھی ہے

 

35

انس بن مالک کی روایت

 

35

عبداللہ بن عمروبن العاص کی روایت

 

35

عتبہ بن عامر کی روایت کی وضاحت

 

36

حافظ ابن حجر العسقلانی کی وضاحت

 

36

دوسرا اعتراض

 

38

اگر یہ اجرت تھی تو صرف دم کرنے والے کا حق تھا

 

38

امام نووی رحمہ اللہ کی وضاحت

 

40

تیسری دلیل خارجہ بن الصلت کی روایت

 

42

قیس بن ابی حازم رضی اللہ عنہ کی روایت

 

44

چوتھی دلیل - والعالمین علیہا

 

45

حافظ صلاح الدین یوسف کی وضاحت

 

45

عمربن الخطاب رضی اللہ عنہ کی روایت

 

46

محمد داؤد دراز رحمہ اللہ کی وضاحت

 

47

پانچویں دلیل ’’ فی سبیل اللہ ,,

 

48

حافظ صلاح الدین یوسف کی وضاحت

 

48

عبدالرحمان کیلانی کی وضاحت

 

48

سورة البقرہ آیت 273 سے اس کی وضاحت

 

49

 

   

اس مصنف کی دیگر تصانیف

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1696
  • اس ہفتے کے قارئین: 15124
  • اس ماہ کے قارئین: 29945
  • کل قارئین : 46431577

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں