اشاعت بتاریخ : جمعہ 31 مئی 2013ء
مشاہدات : 803

ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر

  • نام : ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر

کل کتب 6

دکھائیں
کتب
  • 1 #1524

    مصنف : ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر

    مشاہدات : 19180

    منافقین کا کردار اور علامات

    (منافقین کا کردار اور علامات) ناشر : مکتبہ اسلامیہ، لاہور

    انسانی رویہ میں منفی و مثبت رجحانات ایک معمول کی بات ہوتی ہے اور دونوں پہلو اپنے اپنے مقام پر ایک مستقل حیثیت رکھتے ہیں او ردونوں پہلوؤں میں ہر ایک ایک مستقل رویہ ظاہر کررہا ہوتا ہے۔ چاہے وہ  درست ہو یا صحیح۔ لیکن ان دونوں پہلوؤں کو نظر انداز کرتے ہوئے ایسا رویہ اختیار کرنا جس سے آدمی کی شخصیت کا تعین مشکل ہوجائے یہ کسی بھی مذہب اور سوسائٹی میں اچھا خیال نہیں کیا گیا۔ شریعت میں کفر اور اسلام  وہ اصطلاحات ہیں جو حق و باطل کے رویہ کو ظاہر کرتی ہیں اسی طرح جو ان دونوں میں سے کسی راہ کو متعین نہ کرپائے بلکہ اس کے قول یا شخصیت سے دونوں پہلوؤں کی آمیزش نظر آئے اس دو رُخے انسان کو اسلامی اصطلاح میں منافق کہتے ہیں او راس  کی  سزا کفر سے بھی زیادہ ہے۔ مسلمانوں کو نفاق سےبچنے کی تلقین کی گئی ہے اور شارع نے اس کی علامات بھی واضح کردی ہیں۔زیر نظر کتاب انہی علامات نفاق پر مشتمل ہے جو قرآن و سنت کےدلائل سے مرتب ہے۔(ک۔ط)
     

  • 2 #3668

    مصنف : ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر

    مشاہدات : 6809

    کامل ابواب الصرف

    (کامل ابواب الصرف) ناشر : مکتبہ احیاء الشریعہ سیالکوٹ

    اللہ تعالی کاکلام اور  نبی کریم ﷺکی احادیث مبارکہ عربی زبان میں  ہیں اسی وجہ  سے اسلام اور مسلمانوں سے  عربی کا رشتہ مضبوط ومستحکم ہے  عربی اسلام کی سرکاری زبان ہے ۔شریعت اسلامی  کے بنیادی مآخد اسی زبان میں ہیں  لہذا قرآن وسنت اور  شریعت اسلامیہ پر عبور حاصل  کرنےکا واحد ذریعہ عربی زبان ہے  اس لحاظ سے عربی سیکھنا اور  سکھانا   امت مسلمہ  کا اولین فریضہ ہے ۔عربی زبان  سیکھنے کےلیے نحو  وصرف کو بنیادی حیثیت حاصل ہے۔فن صرف علم نحو ہی کی  ایک شاخ ہے  شروع  میں اس کے مسائل  نحو کے تحت  ہی بیان کیےجاتے تھے معاذ بن مسلم ہرّاء  یاابو عثمان بکر بن محمدمزنی  نے  علم صرف کو علم النحو سے الگ کرکے مستقل فن کی حیثیت مرتب ومدون کیا۔ صرف ونحوصرف کی کتابوں کی تدوین وتصنیف میں علماء عرب کےساتھ ساتھ  عجمی علماء بھی   پیش پیش رہے  ۔جب یہ تسلیم کرلیا گیا کہ  تعلیم وتدریس میں  علم وفن کاپہلا تعارف طالب علم کی مادری زبان میں  ہی ہوناچاہیے تو مختلف علاقوں کے  اہل علم  نے  اپنی  اپنی مقامی زبان میں اس فن پر  کئی  کتب تصنیف کیں ۔تاریخ اسلام کا یہ باب  کس قدر عظیم ہے کہ  عربی زبان کی صحیح تدوین وترویج  کا اعزاز عجمی علماء اور بالخصوص کبار علمائے  ہندکے  حصے میں آیا  ہندوستان اور مغل حکمرانوں کی سرکاری زبان فارسی  ہونےکی وجہ سے  ہندی علماء   نے صرف ونحو کی کتب فارسی زبان میں ہی تصنیف کیں پھر رفتہ رفتہ   برصغیر کے باشندوں کے لیے فارسی زبان  بھی اجنبی  ہونے لگی توبرصغیر کے فضلا ءنےاردو میں نحووصرف  کے موضوع پرکتاب النحو، کتاب الصرف،عربی کا معلم کے علاوہ  متعدد کتب لکھیں ان  علماء کرام  کااردو زبان میں صر ف ونحو پر کتابیں لکھنےکا مقصد عربی وزبان وادب کی تفہیم وتسہیل اور اشاعت وترویج ہی تھا کیوں کہ  اگر ابتدائی  طور پرکوئی مضمون  مادری زبان میں ذہن نشین ہوجائے تو پھر اس زبان  میں تفصیل واضافہ کو بخوبی پڑھا  اورسمجھا جاسکتاہے  ۔مدارس میں پڑھنے والے طلباء صرف گردانیں یاد کرنے کےلیے ابواب الصرف کتاب پڑھتے ہیں بعض کتب میں مصادر کاترجمہ فارسی زبان میں  ہے  چونکہ اب فارسی زبان کی طرف قوم کا رجحان  بہت کم  ہوگیا ہے لہذا   طلباء کے لیے معانی  میں مشکل ہوتی ہے ۔ بعض کتب میں لازم  کے ابواب کی  مجہول گرادنوں کی متعدی باب کی مانند لکھ دیاگیا ہے جو کہ صرفی طور غلط ہے ۔ محترم جناب  ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر ﷾ نے  زیر تبصرہ کتاب’’ کامل ابواب الصرف‘‘ مرتب کی ہے جس میں انہوں نے  طلباء کی سہولت  وبہتری کےلیے  زیادہ ترمادے قرآن اور حدیث سے لیے ہیں تاکہ قرآ ن وحدیث کے زیادہ سے زیادہ الفاظ کا ذخیرہ جمع ہوسکے ۔قرآن وحدیث  سے اخذ کیے ہوئے مادے کے ساتھ آیت وحدیث کا ٹکڑا لکھا  ہے۔تمام ابواب کی  گردانیں مکمل کیں ہیں۔ مرکبات سےتقریباً  ہر قسم کاباب بنایا ہے۔ہر مصدر کا  ترجمہ اردو زبان میں کیاہے۔ مہموز ، مضاعف اور معتل کےقواعد لکھے  اور صیغوں کی تعلیلات کیں ہیں الغرض یہ کتاب ابواب الصرف اورعلم الصرف کی گردانیں بنانے کے طریقے ،مہموز، مضاعف اورمعتل کےقواعد اور صیغوں کی تعلیل کرنے  کےطریقوں کوجمع کرنےوالی ہے۔اللہ تعالیٰ مصنف کی اس کاوش کو  قبول فرمائے اور اسے  طلبہ وطالبات دینیہ کےلیے نفع بخش بنائے (آمین) (م۔ا)

  • 3 #3759

    مصنف : ابو یاسر عبد اللہ بن بشیر

    مشاہدات : 3038

    اسلام اور مسلمان کا مذاق اڑانے کا گناہ

    (اسلام اور مسلمان کا مذاق اڑانے کا گناہ) ناشر : مکتبہ احیاء الشریعہ سیالکوٹ

    اللہ تعالیٰ نے انسان کو اشرف المخلوقات بنایا ہے اور امت مسلمہ کو اسلام جیسی عظیم نعمت دےکر بہت بڑا شرف سےنوازا ہے۔تکریم ِانسانیت اور اسلام کا تقاضہ ہے کہ مسلمان آپس میں ایک دوسرے کا مذاق وتمسخر نہ آڑائیں اور اسی طرح اہل کفر اور غیر مسلم مسلمانوں اوراسلام کےشعائر کا مذاق نہ اڑائیں کیونکہ یہ صحریحاً اسلامی تعلیمات کے خلاف اور باعث گناہ ہے ۔لیکن آج بلاجھجک اسلام سےتمسخر کیا جاتاہے،نہ صرف اہل ایمان کامذاق اڑایا جاتا ہےبلکہ نبی کریم ﷺ کی سنتوں سےبھی مذاق کیا جاتاہے ۔کافر کس طرح قرآن کی بے حرمتی کررہے ہیں، اسلام سےمذاق کررہے ہیں۔صد افسوس کہ خود مسلمان کہنے والےبھی غیر شعوری طور پر مذاق وٹھٹھا کرتے نظر آتے ہیں کبھی شرعی پردے کو نشانہ بنایا جاتا ہے کبھی نیم برہنہ کر کےعورتوں کودوڑایا جاتا ہے یہ اسلام سےمذاق ہے ۔مزیدبرآں برائی کو روکنے والوں سے کہا جاتا ہے جو یہ منظر نہیں دیکھ سکتا وہ اپنی آنکھیں بند کرلے ۔ اسی طرح نماز میں رفع الیدین کے متعلق کہا جاتا ہےکہ یہ مکھیاں اڑانا ہے ۔ کیا نعوذ بااللہ نبی ﷺ نماز میں مکھیاں اڑاتےتھے؟شلوار ٹخنوں سے اونچی رکھنا فرض ہےاور رسول اللہ ﷺ کا حکم ہے ۔جبکہ مذاق اڑانے والے کہتے ہیں کہ مولوی صاحب ... کیا آپ نےدریاعبور کرناہے ۔ منافقین نےبھی صحابہ سے مذاق کیا تو اللہ تعالیٰ نےفرمایا: قُلْ أَبِاللَّهِ وَآيَاتِهِ وَرَسُولِهِ كُنْتُمْ تَسْتَهْزِئُونَ لَا تَعْتَذِرُوا قَدْ كَفَرْتُمْ بَعْدَ إِيمَانِكُمْ (التوبہ) ’’کہہ دیجئے کہ اللہ اس کی آیتوں اوراس کےرسول کےساتھ ہی تم ہنسی مذاق کرتے ہو۔تم بہانے نہ بناؤ یقیناً تم اپنے ایمان کے بعد کافر ہو گئے ہو۔‘‘ اکثر اہل علم کا قول ہے جواسلام سےیا اس پر عمل پیرا لوگوں کا مذاق اڑاتا ہے وہ کافر ہےاو ردین سے خارج ہے زیر تبصرہ کتاب’’اسلام اور مسلمانوں کامذاق اڑانے کاگناہ‘‘ محترم جناب ابو یاسر عبداللہ بن بشیر﷾ کی تصنیف ہے ۔ یہ کتاب دفاع ِ اسلام کی بہترین شکل ہے۔ کفار اوران کےگماشتوں کے منہ پر طمانچہ ہے۔اہل کفر کاانجام تو جہنم ہےہی کہ انہوں نے بڑی دیدہ دلیری سےدین اسلام کو گالی دی ہے سید ولد آدم محمد ﷺ کامذاق اڑایا ہے ۔یہ کتاب جہاں اہل کفر کےانجام کی طرف اشارہ کرتی ہے وہاں اہل حق کو صبر وہمت ،عزیمت واستقامت کاپیغام بھی دیتی ہے۔ لہذا یہ مختصرسی کتاب ہر گھر میں رکھنے کےلائق ہے تاکہ اس کامطالعہ کر کے اپنے آپ کو اورگھر والوں کوجہنم کی آگ سےبچانے کا ا ہتمام کرسکیں اور اپنے ایمان کومحفوظ کرسکیں۔اللہ تعالیٰ اس کتاب کوتمام مسلمانوں کے لیے ہدایت کا ذریعہ بنائے اور تمسخر جیسے فعل شنیع سےبچائے ۔(آمین) (م۔ا)

کل کتب 6

دکھائیں
کتب
  • 1 #2691

    مصنف : صبیح رحمانی

    مشاہدات : 803

    دعوت دین

    (جمعہ 12 دسمبر 2014ء) ناشر : مکتبہ اسلامیہ، لاہور

    اللہ تعالیٰ نے انسان کی فطرت کے اندر نیکی اور بدی کے پہچاننے کی قابلیت اور نیکی کو اختیار کرنے اور بدی سے بچنے کی خواہش ودیعت کردی ہے ۔تمام انبیاء کرام نے   دعوت کے ذریعے پیغام الٰہی کو لوگوں تک پہنچایا اوران کو شیطان سے بچنے اور رحمنٰ کے راستے   پر چلنے کی دعوت دی ۔دعوتِ دین اور احکام شرعیہ کی تعلیم دینا شیوۂ پیغمبری ہے ۔تمام انبیاء و رسل کی بنیادی ذمہ داری تبلیغ دین اور دعوت وابلاغ ہی رہی ہے،امت مسلمہ کو دیگر امم سے فوقیت بھی اسی فریضہ دعوت کی وجہ  سے  ہے۔ اور دعوت دین ایک اہم دینی فریضہ ہے ،جو اہل اسلام  کی اصلاح ، استحکام دین اور دوام شریعت کا مؤثر ذریعہ ہے۔لہذا ہر مسلمان پر لازم ہے کہ اسے شریعت کا جتنا علم ہو ،شرعی احکام سے جتنی واقفیت ہو اوردین کے جس قدر احکام سے آگاہی ہو وہ  دوسر وں تک پہنچائے۔علماو فضلا اور واعظین و مبلغین   پر مزید ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ فریضہ دعوت کو دینی وشرعی ذمہ داری سمجھیں اور دعوت دین کے کام کو مزید عمدہ طریقے سے سرانجام دیں۔دین کا پیغامِ حق ہر فرد تک پہنچانے کے لیے ضروری ہے کہ دعوت کے کام کو متحرک کیا جائے، منہج دعوت اور اصول دعوت کے حوالے سے   اہل علم نے عربی اور اردو زبان میں کئی کتب تصنیف کی ہیں ۔ان میں سے ڈاکٹر فضل الٰہی ﷾ کی کتب قابل ذکر ہیں جوکہ آسان فہم او ردعوت دین کا ذوق ،شوق اور دعوتی بیداری پیدا کرنے میں ممد و معاون ہیں۔ زیر نظر کتابچہ’’دعوت ِ دین‘‘سماحۃ الشیخ ابن باز ﷫ کے ایک عربی کتابچہ’’كُنْتُمْ خَيْرَ أُمَّةٍ أُخْرِجَتْ لِلنَّاسِ تَأْمُرُونَ بِالْمَعْرُوفِ وَتَنْهَوْنَ عَنِ الْمُنْكَرِ‘‘ کا ترجمہ ہے جس میں شیخ نےفریضہ امر بالمعروف ونہی عن المنکرکی اہمیت،اس فریضہ کے مراتب اور اس کے حکم کو بڑے احسن انداز میں بیان کیا ہے۔ اس کتابچہ کا سلیس اردو ترجمہ کرنے کی سعادت ابو عبداللہ بن بشیر نے حاصل کی ہے ۔اللہ تعالیٰ مصنف ،مترجم اور ناشرین کی تمام مساعی جمیلہ کو قبول فرمائے اور اسے عوام الناس کے لیے نفع بخش اور لوگوں میں امربالمعروف امر ونہی عن المنکرکے فریضہ کو ادا کرنے کاشعور پیدا کرنے کا ذریعہ بنائے۔ آمین( م۔ ا)

کل کتب 0

دکھائیں
کتب

اس سائٹ پر کوئی ایسی کتاب موجود نہیں جس کی ترتیب و تخریج ان صاحب نے کی ہو۔

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1589
  • اس ہفتے کے قارئین 14239
  • اس ماہ کے قارئین 37779
  • کل قارئین49234833

موضوعاتی فہرست