#2630.04

مصنف : پیر محمد کرم شاہ الازہری

مشاہدات : 13487

تفسیر ضیاء القرآن جلد پنجم

  • صفحات: 788
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 31520 (PKR)
(بدھ 03 جون 2015ء) ناشر : ضیاء القرآن پبلی کیشنز، لاہور۔ کراچی

ضیاء الامت جسٹس پیر محمد کرم شاہ الازہری  ایک عظیم صوفی و روحانی بزرگ ہونے کے ساتھ ساتھ ایک مایہ ناز مفسر، سیرت نگار، ماہر تعلیم، صحافی، صاحب طرز ادیب اور دیگر بیشمار خوبیوں کے مالک تھے۔ آپ ۲۱یکم جو لائی ۱۹۱۸ بھیرہ شریف میں پیدا ہو ئے۔سات سال کی عمر میں 1925 کو پرائمری سکول میں داخل ہوئے ۔ اور 1936ء میں گورنمنٹ ہائی سکول بھیرہ سے میٹرک کا امتحان پاس کیا۔1941ء میں اوریئنٹل کالج لاہور میں داخلہ لیا اور فاضل عربی میں شیخ محمدعربی، جناب رسول خان صاحب، مولانا نورالحق جیسے اساتذہ سے علم حاصل کیا۔ آپ نے 600 میں سے 512 نمبر لیکر پنجاب بھر میں پہلی پوزیش لیکر فاضل عربی کا امتحان پاس کیا۔علوم عقلیہ و نقلیہ سے فراغت کے بعد 1942ء سے 1943ء دورہ حدیث مکمل کیا اور بعض دیگر کتب بھی پڑھیں۔1941ء میں جامعہ پنجاب سے بی۔اے کا امتحان اچھی پوزیشن سے پاس کیا۔ستمبر 1951ء میں جامعہ الازہر مصر میں داخلہ لیا ایم۔اے اور ایم۔فِل نمایاں پوزیشن حاصل کی ۔ یہاں آپ نے تقریباً ساڑھے تین سال کا عرصہ گزارا۔1981ء میں 63 سال کی عمر میں آپ وفاقی شرعی عدالت کے جج مقرر ہوئے اور 16 سال تک اس فرض کی پاسداری کرتے رہے۔ آپ نے متعدد تاریخی فیصلے کیے جو عدالتی تاریخ کا حصہ بن چکے ہیں۔7 اپریل 1998ء طویل علالت کے بعد آپ کا وصال ہوا۔سینکڑوں مشائخ اور علما ء نے نماز جنازہ میں شرکت فر مائی۔ آپ نے متعدد تصانیف لکھیں اور ماہنامہ ضیائے حرم جاری کیا ۔ آپ کی مایہ ناز تصنیف زیر تبصرہ کتاب ’’ تفسیر ضیا ء القرآن‘‘ ہے یہ تفسیر 3500 صفحات اور 5 جلدوں پر مشتمل ہے جسے آپ نے 19 سال کے طویل عرصہ میں مکمل کی۔اس کی پہلی جلد کا پہلا ایڈیشن ۱۹۶۵ء میں شائع ہوا۔ انھوں نے اپنی تفسیر میں عام فہم اسلوب اختیار کیا ہے۔ وہ ان مقامات کی تفسیر کا خصوصی اہتمام کرتے ہیں جن کی تفسیر میں عام طور پر اختلاف ہے یا جن کی بنیاد پر بریلوی مکتبۂ فکر کی طرف شرک یا بدعت کی نسبت کی جاتی ہے۔ ایسے مقامات پر انھوں نے قرآن مجید پر براہِ راست غور کرکے کوئی راے قائم کرنے کے بجاے کسی روایت یا تفسیری قول ہی کو اپنی ترجیح کی بنیاد بنایا ہے۔ اسی طرح وہ معاصر تفاسیر سے بھی وسعت قلب کے ساتھ استفادہ کرتے ہیں۔اس تفسیر کے بعض حصے چونکہ یونیورسٹیوں کے نصاب میں شامل ہیں اس لیے   طلباء کے اصرار پر اسے کتاب وسنت ویب سائٹ پر پبلش کیا گیا ہے ہے ۔ تفسیر کے مندرجات سے ادار ے   کا کلی اتفاق ضرورری نہیں ہے۔ (م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

سورة النجم

5

سورة القمر

49

سورة الرحمن

63

سورة الواقعة

84

سورة الحديد

104

سورة المجادلة

133

سورة الحشر

155

سورة الممتحنة

189

سورة الصف

208

سورة الجمعة

227

سورة المنافقون

243

سورة التغابن

258

سورة الطلاق

271

سورة التحريم

291

سورة الملك

308

سورة القلم

327

سورة الحاقة

345

سورة المعارج

357

سورة نوح

371

سورة الجن

383

سورة المزّمّل

39

سورة المدّثر

413

سورة القيامة

428

سورة الإنسان

440

سورة المرسلات

451

سورة النبأ

463

سورة النازعات

477

سورة عبس

489

سورة التكوير

498

سورة الإنفطار

507

سورة المطفّفين

513

سورة الإنشقاق

522

سورة البروج

527

سورة الطارق

534

سورة الأعلى

539

سورة الغاشية

547

سورة الفجر

553

سورة البلد

563

سورة الشمس

570

سورة الليل

576

سورة الضحى

583

سورة الشرح

595

سورة التين

603

سورة العلق

609

سورة القدر

617

سورة البينة

622

سورة الزلزلة

630

سورة العاديات

636

سورة القارعة

641

سورة التكاثر

646

سورة العصر

651

سورة الهمزة

656

سورة الفيل

660

سورة قريش

671

سورة الماعون

677

سورة الكوثر

682

سورة الكافرون

691

سورة النصر

697

سورة المسد

701

سورة الإخلاص

709

سورة الفلق والناس

719

تحقیقات لغویہ

729

تحقیقات نحویہ

749

فہرست مطالب

750

 

اس کتاب کی دیگر جلدیں

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

فیس بک تبصرے

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 32382
  • اس ہفتے کے قارئین 383847
  • اس ماہ کے قارئین 1355784
  • کل قارئین99780328
  • کل کتب8672

موضوعاتی فہرست