#4500

مصنف : قاری حبیب الرحمن قریشی

مشاہدات : 2500

رہنمائے ترجمۃ القرآن

  • صفحات: 279
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 6975 (PKR)
(اتوار 29 مئی 2016ء) ناشر : ادارہ رجوع الی القرآن لاہور

قرآن مجید اللہ تعالیٰ کی نازل کردہ آخری کتابِ ہدایت ہےاور یہ کتاب اس قدر جامع اور مکمل ہے کہ یہ قیامت تک کے لیے آنے والی انسانی نسلوں کی رشد وہدایت کے لیے کافی ہے ۔نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ اس قرآن کے عجائب کبھی ختم نہیں ہوں گے اور نہ ہی کبھی علماء اس کے علوم سے سیر ہوں گے چنانچہ قرآن مجید کو آپ جس پہلو سے بھی دیکھیں یہ آپ کو عدیم النظیر ہی نظر آئے گا۔ مختلف ادوار میں مختلف فکری ،علمی اور تحقیقی صلاحیتوں کےحامل لوگوں نے اپنی اپنی کوششیں قرآن کریم کی شرح وتوضیح کے میدان میں صرف کی ہیں۔لیکن قریبا ہر ایک نے اپنی کم مائیگی کا اعتراف کیا اور کہا کہ وہ اس بحر ذخار سے چند موتی ہی نکال سکا ہے۔قرآن مجید کے معجزاتی پہلوؤں میں ایک پہلو یہ ہے کہ ہر دور کی ضروریات اور تقاضوں کے مطابق مختلف اسالیب اور پیرایوں میں اس کی تفاسیر،ترجمہ ،معانی ،تفہیم، وتسہیل کا اور تدریس وتعلیم کے لیے علوم آلیہ وغیرہ کی مدد سے اس پر نصاب سازی کا کام ہوتا رہاہے۔ اور یہ مبارک سلسلہ ہنوز جاری ہے ۔ خوش بخت اور عالی قدر ہیں وہ نفوس جنہیں اس خدمتِ عالیہ میں حظ اٹھانے کا موقع ملا۔ عصر حاضر میں قرآن مقدس کو عام فہم انداز میں لوگوں کے سامنے پیش کرنے کے لیے خانوں میں ترجمے ،رنگوں اورعلامات کے ذریعے ترجمہ پیش کرنے نیز اس کےفہم میں مزید دل چسپی پیدا کرنے کےلیے عربی زبان اور اس کےقواعد پر مشتمل نصاب سازی کےاسالیب اپنائے جارہے ہیں ۔اس سلسلے میں کئی اہل علم نے تعلیم وتدریس اور تصنیف کےذریعے کو ششیں اور کاوشیں کیں۔فہم قرآن کے سلسلے میں الہدیٰ انٹرنیشنل،ڈاکٹر اسرار، قرآن انسٹی ٹیوٹ،اسلامک انسٹی ٹیوٹ،لاہور ،دارالفلاح ،لاہور وغیرہ اور بالخصوص مولانا عطاء الرحمن ثاقب شہید (فاضل جامعہ لاہور الاسلامیہ ،لاہور کی خدمات ناقابل فراموش ہیں ۔ زیر تبصرہ کتاب’’رہنمائے ترجمان القرآن‘‘ از قاری حبیب الرحمن قریشی بھی فہم قرآن کے سلسلے میں ایک اہم کاوش ہے ۔اس کتاب میں مصنف نےہر عمر کے طالب علم کو مدنظر رکھتے ہوئے معروضی مشقوں کے ساتھ قرآن مجید کا ترجمہ سکھانے کی کوشش کی ہےاور طالب علم کی آسانی کے لیے ہرسبق کی معلومات ایک ہی جگہ پر میسر کی گئی ہیں۔ قرآنی ذخیرہ الفاظ ، معانی اور حوالہ جات اس طرح سے لکھے گئے ہیں کہ طالب علم خواہ کسی بھی عمر کا کیوں نہ ہو قرآن مجید کا ترجمہ سیکھ سکتا ہے۔نیز اس کتاب میں ہر قاعدے کی معروضی مشق، قرآنی حوالے اور ترجمہ کےساتھ بنائی گئی ہے ، تاکہ طالب علم مشق حل کرتے وقت قرآن مجید کے حوالے اور ترجمے سےمدد لےکر مشق حل سکے ۔(م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

پیش لفظ

1

فرمان نبوی ﷺ قرآن مجید کی عظمت وفضیلت

1

اظہار تشکر

3

تقریظات

7

تاثرات

9

عربی زبان میں صرف ونحو کی اہمیت

12

قرآن مجید سےدوری کےاسباب

13

(حصہ اول) وموز اوقاف

13

تلاوت قرآ ن مجید کےجملہ قواعد

20

تلاوت کاطریقہ معروف ومجہول

28

بیان مخارج

29

مخرج بدلنے سےمعافی کابدلنا

37

اظہار ،اقلاب ،ادغام اور اخفاء

39

عربی اصلاحات

46

حصہ دوئم)علم النحو

 

حرکت اوراعراب

50

اسم کی تعریف اوراس کی اقسام

53

شمسی وقمری حروف

54

اسم بلحاظ حالت

55

اسم بلحاظ وسعت

56

اسم معرفہ کی 7اقسام

57

اسم بلحاظ عدد

61

اسم بلحاظ جنس

67

لفظوں کی پہچان (اعراب کےحوالے سے )

73

ضمائر کابیان

78

ضمائر کاچارٹ

82

مرکب

83

مرکب کی اقسام

85

مرکب جاری

86

مرکب اضافی

88

مرکب اضافی میں ضمائر کااستعمال

89

مرکب اضافی میں حرف نداء کااستعمال

89

مرکب توصیفی

91

مرکب توصیفی کی قرآنی مثالیں

92

مرکب اشاری

93

مرکب عددی

94

مرکب تام جملہ اوراس کی اقسام

96

جملہ اسمیہ میں ضمائر کااستعمال

100

جملہ اسمیہ میں تاکید پیداکرنا

102

جملہ اسمیہ میں نفی کامفہوم

103

جملہ اسمیہ کوسوالیہ بنانا

104

اسماء استفہام

105

عربی اردوبول چال سیکھیں

109

علم الصرف

 

اسم مصدر میں فرق

111

مادہ حروف اصلی

112

وزن

113

فعل کی تعریف اوراس کی پہچان

114

فعل کی گردان

115

صیغہ کی تعریف

116

فعل ماضی کی ضمائر سےپہچان

118

فعل ماضی کی پہچان اورابواب

120

ماضی مجہول کی تعریف اوراس کی پہچان

122

قواعد افعال ناقصہ اورگردانیں

124

ماضی کی اقسام

128

فعل کی اقسام

132

فعل بافاعل اورفاعل کافرق

133

جملہ فعلیہ

134

جملہ فعلیہ میں ضمائر کااستعمال

136

جملہ فعلیہ میں لازم کومتعدی بنانے کاقاعدہ

139

جملہ فعلیہ کونافیہ بنانا

140

جملہ فعلیہ میں فعل ماضی کو حال بنانا

141

جملہ فعلیہ میں ماضی مجہول اورنائب الفاعل

141

فعل مضارع

 

فعل مضارع (حال اورمستقبل )

143

فعل مضارع کےاوزان

145

فعل مضارع میں مادہ نکالنے کاطریقہ

146

وزن کانکالنے کاطریقہ

147

فعل مضارع کاصیغہ

148

فعل مضارع معروف کونافیہ ومضارع مجہول بنانا

149

فعل مضارع معروف مجہول کومستقبل قریب وبعید بنانا

150

لام تاکید نون باثقلیہ ونون خفیفہ

152

مضارع معروف کاجملہ فعلیہ میں استعمال

153

فعل مضارع مجہول کےساتھ مفردنائب فاعل

157

مفاعیل خمسہ

 

مفعول بہ

158

مفعول مطلق

159

مفعول لہ

160

مفعول فیہ

161

مفعول معہ

162

مضارع کےتغیرات (مضارع کےناصبہ)

163

فعل مضارع کوجازمہ

165

ابواب ثلاثی مزید فیہ

 

ابواب ثلاثی مزید فیہ اورانکی خاصیتیں

170

حروف اصلی اورزائد حروف کی پہچان

171

ثلاثی مزید فیہ کی اہمیت اورضرورت

172

باب افعال

173

باب تفعیل

178

باب تفعل

182

باب مفاعلۃ

185

باب تعاعل

190

باب افتعال

193

باب استفعال

200

باب افعل

202

ابواب رباعی مجرد

203

ابواب رباعی مزید فیہ

204

ابواب رباعی مزید فیہ

205

ابواب رباعی مزید فیہ

206

اسمائے مشتقہ

 

اسم فاعل

207

اسم مفعول

210

اسم صفت مشبہ

211

اسم ظرف

213

اسم آلہ

214

افعل التفضیل

215

فعل کی ہفت اقسام

 

اجوف

227

مثال

234

ناقص

236

لفیف

342

مضاعف کےقواعد

244

مہمو ز

244

مہموز الالعین

244

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1591
  • اس ہفتے کے قارئین 17044
  • اس ماہ کے قارئین 25588
  • کل قارئین54228353

موضوعاتی فہرست