تلبیس ابلیس

1 1 1 1 1 1 1 1 1 1
امام عبد الرحمٰن الجوزی
ابومحمد عبد الخالق
محمدسرورعاصم
مکتبہ اسلامیہ، لاہور
572
11440.00 (PKR)
title-page-talbees-e-iblees
امام عبدالرحمن الجوزی کی کتاب تلبیس ابلیس اپنے موضوع کے اعتبار سے بلندپایہ تصانیف میں سے ایک ہے-مصنف نے اپنے کتاب  کو مختلف ابواب میں تقسیم کرتے ہوئے تیرہ ابواب میں مختلف قسم کے بڑے اہم موضوعات کا احاطہ کیا ہے-پہلے باب میں کتاب و سنت کواختیار کرنے کی اہمیت وافادیت پر روشنی ڈالی ہے اور دوسرے باب میں بدعت اور بدعتیوں کے مختلف  گروہوں  کی مکمل تفصیل جیسے معتزلہ،خوارج،مرجئہ،وغیرہ کے ساتھ ساتھ خلافت راشدہ پر روشنی ڈالی گئئ ہے-اسی طرح شیطان انسان کو کس طریقے سے گمراہ کرتا ہے اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے شیطان کے مختلف حیلوں کو مختلف ابواب میں مختلف لوگوں کے اعتبار سے تقسیم کیا ہے-مثلا مختلف ادیان کے اعتبار سے شیطان کیسے تلبیس یا اختلاط پیدا کرتا ہے،غلط عقائد کی ترویج کے لیے لوگوں کے ذہنوں میں شیطان کیسے وسوسے پیدا کرتا ہے،علماء کو گمراہ کرنے کے لیے کیسے حربے استعمال کرتا ہے اور عوام الناس کو گمراہ کرنے کے لیے کیسے حربے استعمال کرتا ہے-غرضیکہ مصنف نے جمیع موضوعات  اور معامالات کوزیر بحث لا کر یہ سمجھایا ہے کہ شیطان تمام معاملات میں دخل اندازی کس طریقے سے دیتا ہے اور لوگوں کو راہ ہدایت سے کیسے بھٹکاتا ہے-راہ ہدایت کے متلاشی کے لیے اس کتاب کا مطالعہ انتہائی ضروری ہے-

عناوین

 

صفحہ نمبر

خطبۃ الکتاب

 

19

عقائد میں اختلافات کی ابتدااور خواہشات کی پیروی

 

21

انبیاء کی بعثت میں حکمت

 

21

ابلیس کی مکاریوں کا افشا

 

22

سبب تالیف کتاب

 

23

مضامین ابواب کا مجمل بیان

 

23

باب نمبر1

 

25

سنت اور جماعت کو لازمی پکڑنے کا بیان

 

25

جماعت کو اختیار کرنے کے بارے میں احادیث

 

25

جماعت پر اللہ کا ہاتھ ہے

 

26

بنی اسرائیل کی بہتر(72)فرقوں میں تفریق

 

27

سنت اختیارکرنے کے بارے میں آثار

 

28

باب نمبر 2

 

32

ہرقسم کی بدعت اور بدعتیوں کی مذمت کابیان

 

32

خلافت راشدہ

 

33

مرتدین سے قتال

 

34

فرقئہ مرجیہ کے باطل عقائد

 

35

بدعتیوں سے دور رہنے کی تاکید

 

36

سنت کیا ہے ؟ اور بدعت کسےکہتے ہیں ؟

 

38

برزگارسلف ہر بدعت سے احتراز کرتے تھے

 

39

اہل بدعت کی اقسام

 

43

بہتر بدعتی فرقوں کی چھ اصلوں اور ہر ایک اصل کی بارہ بارہ شاخوں کابیان

 

45

فرقہ حروریہ کی بارہ (12)شاخوں کابیان

 

45

ازرقیہ

 

45

اباضیہ

 

46

ثعلبیہ

 

46

خوارج اور روافض کے عقائد باطلہ

 

46

حازمیہ

 

47

خلفیہ

 

47

کوزیہ

 

47

کنزیہ

 

47

شمراخیہ

 

47

اخنسیہ

 

47

محکمیہ

 

48

معتزلہ

 

48

میمونیہ

 

48

فرقئہ قدریہ کی بارہ (12)شاخوں کا بیان

 

48

احمریہ

 

48

ثنویہ

 

48

معتزلہ

 

48

کیسانیہ

 

48

شیطانیہ

 

48

شریکیہ

 

48

وہمیہ

 

49

ربویہ(راوندیہ)

 

49

بزیہ

 

49

ناکثیہ

 

49

قاسطیہ

 

49

نظامیہ

 

49

فرقئہ جہمیہ کی بارہ(12)شاخوں کابیان

 

49

معطلہ

 

49

مرسیہ(مریسیہ)

 

49

ملتزقہ

 

49

واردیہ

 

50

زنادقہ

 

50

حرقیہ

 

50

مخلوقیہ

 

50

فانیہ

 

50

عریہ(غیریہ)

 

50

واقفیہ

 

51

قبریہ

 

51

لفظیہ

 

51

فرقئہ مرجیہ کی بارہ(12)شاخوں کابیان

 

51

تاریکہ

 

51

سائبیہ

 

51

راجیہ

 

51

شاکیہ

 

51

بہییہ

 

51

عملیہ

 

51

مستثنیہ

 

51

مشبہہ

 

52

حشویہ

 

52

ظاہریہ

 

52

بدعیہ

 

52

منقوصیہ

 

52

فرقئہ رافضیہ کی بارہ(12)شاخوں کابیان

 

52

علویہ

 

52

امریہ

 

52

شیعیہ

 

52

قدیم شیعیہ کاقول اوربعدوالوں کاغلو

 

53

اسحاقیہ

 

53

ناووسيہ

 

53

امامیہ

 

53

زیدیہ

 

53

عباسیہ

 

53

متناسخہ

 

53

رجعیہ

 

53

لاعنیہ

 

54

متربضہ

 

54

فرقئہ جبریہ کی بارہ(12)شاخوں کابیان

 

54

مضطریہ

 

54

افعالیہ

 

54

مفروغیہ

 

54

نجاریہ

 

54

مبائینہ(مبانیہ)

 

54

کسبیہ

 

54

سابقیہ

 

54

حبیہ

 

54

خوفیہ

 

55

فکریہ

 

55

حسنیہ

 

55

معیہ

 

55

باب نمبر3

 

56

ابلیس کی مکاری،چالوں اور فتنوں سے بچنے کی تاکید کا بیان

 

56

سب سے پہلے ابلیس خودشبہ میں پڑااور حجت بازی کرنے لگا

 

57

ابلیس اور اس کے لشکر کی فتنہ پروریوں کا بیان

 

60

ابلیس اور حضرت یحی علیہ السلام کے مابین مکالمہ

 

60

بنی اسرائیل کے ایک راہب (عابد) کے ساتھ ابلیس کا معاملہ

 

61

حضرت عیسی علیہ السلام کی شبیہ میں ایک راہب کے پاس ابلیس کی آمد

 

64

کشتی نوح علیہ السلام میں میں ابلیس کی موجودگی

 

65

حضرت موسی علیہ لسلام کو ابلیس کی نصیحت

 

65

ابلیس کے مکروفریب کے متفرق واقعات

 

66

ابلیس کی پانچ اولادیں او ران میں سے ہر ایک کے ذمہ کام کی تفصیل

 

69

ہرانسان کےساتھ ایک شیطان ہے

 

70

شیطان آدمی میں خون کی طرح دوڑتاہے

 

71

شیطان سے پناہ مانگنے کا بیان

 

72

باب نمبر 4

 

76

تلبیس اور غرور کےمعانی کا بیان

 

76

قلب انسانی کی ایک عجیب مثال

 

76

 

   

باب نمبر5

 

78

عقائد اور دیانات(مذاہب)میں شیطان کی تلبیس کا بیان

 

78

سوفسطائیہ پرشیطان کی تلبیس

 

78

عقائدسوفسطائیہ کابیان اور ان کی تردید

 

78

دہریہ(ملحدین)پر شیطان کی تلبیس

 

81

اللہ تعالی کے وجود کی ایک قطعی دلیل اور ملحدوں کے اعتراض کا جواب

 

82

طبیعیات(طبائعیین)والو ں پر شیطان کی تلبیس

 

83

ثنویہ(دوخداماننے والوں)پرشیطان کی تلبیس

 

84

فلاسفہ اورمتبعین پرشیطان کی تلبیس

 

86

ارسطاطالیس کاقول کہ عالم قدیم ہے

 

86

سقراط کا علت،عنصر اور صورت والا قول

 

87

اکثرفلاسفہ کا عقیدہ کے اللہ تعالی کو فقط اپنی ذات کا علم ہے

 

88

ابن سینا اور معتزلہ کا عقیدہ

 

88

اللہ تعالی کے علم کے متعلق فلاسفہ کے قول کی تردید

 

89

اہل اسلام میں سے ان لوگوں کی تردیدجوفلاسفہ کی پیروی کو ثواب جانتے ہیں

 

90

مسلمانوں میں ان لوگوں کی مذمت جوفلاسفہ او ررہبان کی پیروی کرتے ہیں

 

92

ہیکل پرستوں  پر ابلیس کی تلبیس

 

92

سات ستاروں کی پرستش اور ان پرچڑھاوے

 

92

بت پرستوں پرتلبیس ابلیس

 

95

بت پرستوں پرابلیس کی ابتدائی تلبیس کا ذکر

 

95

مشرکین عرب کے بت اور ان کی تعداد

 

95

سب سے پہلا شخص جس نے دین اسمعیل کو بگاڑ ااور اہل عرب کو بت پرستی کی طرف لایا

 

97

ان بتوں کاذکر جوخانہ کعبہ کے اردگرد جمع کیے گئے تھے

 

101

زمانہ جاہلیت میں آگ اور بتوں کی پرستش کا بیان

 

106

اہل ہند میں بت پرستی

 

107

آگ،سورج اور چاند پوجنے والوں پر ابلیس کی تلبیس

 

108

زرداشت کا حال اور ان کا قول

 

108

قدیم آتش کدے

 

109

چاند اور ستاروں کےپجاری

 

109

فرشتوں ،گھوڑوں اورگایوں کی پرستش

 

110

اسلام سے قبل اہل جاہلیت پر ابلیس کی تلبیس

 

110

زمانہ جاہلیت کےبعض وہ لوگ جواللہ تعالی،اس کی خالقیت،قیامت،ثواب اور عذاب کو مانتے تھے

 

111

زمانہ جاہلیت کی بعض بدعات کا ذکر

 

113

منکرین نبوت پر تلبیس ابلیس

 

114

انکارنبوت میں برہمنوں کے چھ شبہات اور ان کے جوابات

 

115

ابن الروندی اور ابوالعلاالمعری جیسے ملحدین کی مذمت جواسلام کا لباد ہ اوڑھ کراس کی شریعت کی بربادی کے درپے رہے

 

119

ہندوؤں کی بعض عجیب عبادتوں کابیان

 

122

یہودپرتلبیس ابلیس

 

124

نصاری پرتلبیس ابلیس

 

128

یہودونصاری کا دعوی کے ہمارے بزرگوں کی وجہ سے ہم کو عذاب نہ ہوگا

 

129

صائبین پر تلبیس ابلیس

 

130

صابی کی تحقیق کے متعلق علما ء کے اقوال

 

130

مجوس پرتلبیس ابلیس

 

132

مزدک کا فتنہ

 

133

فلکیات والوں اور منجموں پرتلبیس ابلیس

 

135

منکرین حشروقیامت پر تلبیس ابلیس

 

136

منکرین حشر کے شبہات اور ان کے جوابات

 

136

تناسخ(آواگون)والوں پرتلبیس ابلیس

 

139

امت مسلمہپر عقائدودیانات میں تلبیس ابلیس

 

140

اس امت کےعقائد میں شیطان نے دوطرح کےرخنے ڈالے

 

140

پہلاطریق،باب دادوں کی اندھادھندتقلید

 

140

تقلیدواجتہادکے بارے میں مؤلف کی رائے

 

141

دوسراطریق ایسے امور میں غوروخوض جس کی تہہ نہیں مل سکتی،مثلافلسفہ اور علم الکلام کی مباحث

 

142

علم الکلام  کی مذمت

 

143

معتزلہ کی گمراہی

 

144

متکلمین کی بالآخر علم کلام سے بیزاری اور حق کی طرف رجوع

 

145

فرقئہ مجسمہ کے عقائد کی تردید

 

149

تلبیس ابلیس سے محفوظ طریقہ جس پررسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین اور تابعین رحمۃ اللہ علیم قائم تھے

 

152

خوراج پرتلبیس ابلیس

 

154

سب سے پہلا خارجی ذولخویصرہ تھا

 

154

خوارج کی جضرت علی رضی اللہ عنہ کے لشکر یوں سے علیحدگی

 

156

خوارج کے اعتراضات اور ابن عباس رضی اللہ عنہما کا ان سے مناظرہ

 

156

خوارج کے کچھ حالات واقوال

 

159

خوارج کے مختلف فرقے

 

163

امامت کے بارے میں خوارج کا عقیدہ

 

164

روافض پر تلبیس ابلیس

 

165

رافضی مذہب کی اصل  غرض وغایت

 

167

روافض نے حضرت علی رضی اللہ عنہ کےساتھ دوستی میں یہاں تک غلو کیاکہ آپ کے فضائل میں اپنی طرف سے بہت سی ایسی روایتیں گھڑ لیں جن میں ان  کی نادانی سے  حضرت علی رضی اللہ عنہ کی مذمت نکلتی ہے

 

169

فرقہ امامیہ کے چندمخصوص دینی مسائل

 

169

حضرت ابوبکر اور حضرت عمر رضی اللہ عنہم کے فضائل میں حضرت علی رضی اللہ عنہ کا خطبہ

 

171

فرقئہ باطنیہ پرتلیس ابلیس

 

174

باطنیہ کے آٹھ نام اور ان کے عقائد کا بیان

 

174

باطنیہ

 

174

اسماعیلیہ

 

175

سبعیہ

 

176

بابکیہ

 

176

محمرہ

 

177

قرامطہ

 

177

خرمیہ

 

179

تعلیمیہ

 

179

باطنیہ کا اس گمراہی اور ضلالت پھیلانے کامقصد

 

179

عوام کو پھانسنے کےلیے اس بدکار فرقہ کے حیلے

 

181

ملاحدہ باطنیہ کے بعض مذہبی اعتقادات کا ذکر

 

182

باطنیہ کا شروفساد اور ان کی سرکوبی

 

185

ابن الراوندی کا الحاد

 

188

ابولعلاء المعری کا الحاد

 

188

باب نمبر 6

 

 

عالموں پر فنون علم میں تلبیس ابلیس

 

190

قاریوں پر شاذقرات حاصل کرنے میں تلبیس

 

190

قرآت کا اصل مقصد

 

190

قرآت کو راگنی کے اصول پر لانےکی ممانعت

 

192

محدثین پر تلبیس ابلیس

 

193

محدثین کی پہلی قسم ،وہ لوگ جنہوں نے حفاظت شریعت کاقصد کیا

 

193

بعض محدثین نے فقہ سے ناواقفیت کے باوجودفتاوی دئیے کہ کہیں لوگ ان کو فقہ سے نادان نا سمجھنے لگیں

 

194

محدثین کی دوسری قسم ،وہ لوگ جنہوں نے اپنا مقصود یہ بنایاکہ عالی اسانید حاصل کریں،غرائب روایات جمع کریں،ملک درملک پھریں،محض اس لیے کے انہی امور کو فخریہ بیان کرنے کا موقع ملے

 

196

بعض محدثین اپنےدل کی تشفی کےلیے ایک دوسرے پر قدح وطعن کرتے ہیں

 

197

بعض محدثین موضوع حدیثیں روایت کرتے ہیں  لیکن ان کاموضوع ہونا ظاہر نہیں کرتے

 

199

فقہاء پر تلبیس ابلیس

 

200

فقہائے متقدمین اور فقہائے متأخرین میں فرق

 

200

فقہاء جدل کے فن میں فلاسفہ کے قواعدداخل کرتے ہیں اور ان پر اعتماد کرتے ہیں

 

201

مناظرہ(مباحثہ)کا مقصد اور ان کےآداب

 

202

بزگان دین کی فتوی دینے سے پہلو تہی اور احتیاط

 

204

فقہاء کاامراء وسلاطین سے میل جول

 

205

فقیہ وہی شخص ہے جواللہ تعالی کا خوف رکھتاہے

 

208

قصہ گو اور واعظوں پرتلیس ابلیس

 

209

یہ لوگ ترغیب وترہیب کی غرض سے حدیثیں گھڑتے ہیں

 

209

بعض واعظ شرع سے خارج امور بیان کرتے ہیں اور ان پر شاعروں کے عاشقانہ اشعار سند لاتے ہیں

 

211

بعض واعظوں کے دلوں میں جاہ طلبی سرایت کرجاتی ہے

 

212

بعض واعظوں کی مجلس میں مرد اور عورتیں یکجاجمع ہوتی ہیں

 

212

لغت وادب کے عالم ومتعلم پر تلبیس ابلیس

 

213

لغت وادب برائے کتاب اللہ اور سنت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم قریب الحصول ہیں اور اس سے زائد فضول

 

214

ابواسحاق زجاج اور وزیر قاسم بن عبداللہ کا واقعہ

 

215

شعرا پر تلبیس ابلیس

 

218

علمائے کاملین پر تلبیس ابلیس

 

219

علم وعمل میں علماء پرتکبر کی راہ پر تلبیس

 

220

علوم میں کامل لوگوں پرنام ونمود کی راہ سے تلبیس

 

221

علمائے کاملین پر ایک اور مخفی تلبیس

 

222

باب نمبر 7

 

224

والیان ملک اور سلاطین پر تلبیس ابلیس

 

224

والیان ملک او رسلاطین پر تلبیس ابلیس کے بارہ طریقوں کابیان

 

224

باب نمبر8

 

231

عابدوں پر عبادت میں تلبیس ابلیس

 

231

قضائے حاجت اور حدث میں تلبیس ابلیس

 

231

عابدوں پر وضو ء میں تلبیس ابلیس

 

232

عابدوں پر اذان میں تلبیس ابلیس

 

237

عابدوں پر نماز میں تلبیس ابلیس

 

237

عابدوں پرمخارج حروف میں تلبیس ابلیس

 

242

راتوں کو دیر تک عبادت گزاری میں تلبیس ابلیس

 

244

عبادت اور تہجد کےلیے مساجد مخصوص کرلینے میں تلبیس ابلیس

 

245

عابدوں پر قرأت قرآن میں تلبیس ابلیس

 

247

عابدوں پر روزے رکھنے میں تلبیس ابلیس

 

248

فرضہ حج اداکرنےمیں تلبیس ابلیس

 

250

مجاہدین پر تلبیس ابلیس کا بیان

 

252

نصیحت کرنے والوں پر تلبیس ابلیس کا ذکر

 

256

باب نمبر 9

 

260

زاہدوں پر تلبیس ابلیس

 

260

اس باب میں مؤلف کی مفید تمہید

 

260

زہد عبادت کی خاطرتحصیل علم کو پس پشت ڈالنے میں تلبیس ابلیس

 

261

زاہدوں پر لباس اور طعام میں تلبیس ابلیس

 

261

ریاکاری اور ظاہرداری میں تلبیس ابلیس

 

264

زاہدوں پر گوشہ نشینی میں تلبیس ابلیس

 

267

پھٹے حال رہنے اور بالوں کی اصلاح نہ کرنےمیں تلبیس ابلیس

 

270

علمی بے بضاعتی کےباوجوداپنی گھڑی ہوئی باتوں پر عمل پیرا ہونے میں تلبیس ابلیس

 

272

علماء کی حقارت اور ان پربلاوجہ عیب لگانے میں تلبیس ابلیس

 

274

مباحات کے استعمال میں حاتم بلخی کو مغالطہ

 

274

 

   

باب نمبر 10

 

278

صوفیوں پر تلبیس ابلیس کا بیان

 

278

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانہ میں نسبت اسلام وایمان کی طرف ہوتی تھی ،چنانچہ مسلم یامؤمن کہا جاتا تھا

 

278

صوفیہ کی وجہ تسمیہ اور تحقیق

 

278

صوفیہ کی بعض بدعات ورسومات کا ذکر

 

281

صوفیہ کی بعض تصانیف پر ایک نظر

 

282

صوفیہ کی تصانیف میں بے سند باتیں جمع کی گئی ہیں

 

284

اوائل صوفیہ کااعتماد کتاب وسنت پہ تھا

 

286

بعض شیوخ صوفیہ کی غلطیوں کا بیان

 

287

`جماعت صوفیہ کی طرف سے سوء اعتقاد  کی روایات

 

288

حلولیوں کےعقائد اور ان کے اقوال کاذکر

 

289

حلاج کا دعوئ ربوبیت

 

290

جاہل صوفیہ کی طرف سے حلاج کی طرف داری

 

294

طہارت کےبارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

295

نماز میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

295

رہائش میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

296

مال ودولت سےالگ تھلگ رہنےمیں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

297

مال سے کیا مراد ہے؟

 

301

اغنیائے صحابہ رضی اللہ عنہم کاذکر

 

305

حلال طور پرمال جمع کرنےکی فضیلت

 

307

محتاجی ایک مرض ہےاور مال ایک نعمت ہے

 

308

مال سے علیحدگی کے برے نتائج کا ذکر

 

309

مال کے متعلق صوفیہ کی غلط فہمی

 

311

توکل کے صحیح معنی

 

312

مال کےمتعلق متقدمیں اور متأخرین صوفیہ کے مقاصد میں فرق

 

313

مال کےمتعلق اوائل کی احتیاط

 

315

لباس کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

316

لباس کے بارے میں مصنف کےزمانہ میں صوفیہ کی عادات

 

317

ان لوگوں کی مذمت جوصوفیہ کے ساتھ تشبیہ چاہتے ہیں

 

317

مرقع وغیرہ کے مکروہ ہونے کی وجوہات

 

319

مرقع کے بارے میں صوفیہ کا طریقہ اور ان کی اسناد کی تردید

 

322

رنگین کپڑے پہننےکاطریقہ اور اس کی تردید

 

322

لباس شہرت کے مکروہ وممنوع ہونےکابیان

 

324

صوف کالباس اختیار کرنےکاوبال

 

325

لباس کےبارےمیں سلف وصالحین کی عادت

 

329

معیوب لباس اختیارکرنے کی برائی کابیان

 

330

نفیس لباس پہننا جائز خواہش نفسانی ہے

 

331

صوفیہ کا کپڑاپہنتے وقت اس کاکچھ حصہ پھاڑڈالنے کاذکر

 

333

شبلی اور ابن مجاہد کے مابین مناظرہ

 

333

بلاوجہ مال ضائع اور برباد کرنے  کی ممانعت

 

336

لباس چھوٹا رکھنے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

336

کھانے پینےکے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

338

متقدمین میں صوفیہ کے افعال کا مختصر بیان

 

338

بعض صوفیہ کا گوشت سےپرہیز

 

342

کھانے پینے کےبارے میں صوفیہ کی غلط روش کی تردید

 

349

خراب اور ردی غذا کھانےکے نقصانات

 

349

صاف پانی کے منافع اور گندے پانی کے نقصانات

 

351

احادیث نبوی صلی اللہ علیہ وسلم سے صوفیہ کی غلطیوں کاثبوت

 

354

مصنف کےزمانہ  میں صوفیہ کا دعوتوں  میں طرز عمل

 

359

سماع ورقص کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

360

لفظ غنا(راگ)کی تحقیق

 

361

زمانہ قدیم اورآج کل کے غنامیں فرق

 

361

مباح (جائز)اشعار اورناجائز اشعار کا بیان

 

364

غنا(راگ)کےحلال یاحرام ہونے کی بحث سے قبل ایک جامع نصیحت

 

366

غناکے بارے میں امام احمد رحمہ اللہ کامسلک

 

368

غناکےبارے میں امام مالک رحمہ اللہ کامسلک

 

369

غناکے بارے میں امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ کامسلک

 

370

غنا کےبارے میں امام شافعی رحمہ اللہ کامسلک

 

`370

غنا کےمکروہ وممنوع ہونے کے دلائل کابیان

 

371

ان شبہات کا بیان جن سے گانا سننے والے دلیل لاتے ہیں

 

379

بعض صوفیہ کے اس قول کی تردید کہ گانا بعضوں کےحق میں مستحب ہے

 

393

بعض صوفیہ کےاس دعوی کی تردید کہ سماع سے قربت الہی حاصل ہوتی ہے

 

394

وجد میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

395

تلاوت قرآن مجید کے وقت صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین کی کیفیت

 

397

جوشخص وجد کے دفعیہ پرقادر نہ ہواس کےلیے طریق کار

 

401

راگ سنتے وقت سرور میں صوفیہ کےافعال

 

402

حالت سرور میں رقص کےجائز کرلینےمیں صوفیہ کی دلیل

 

402

حالت سرور میں صوفیہ کاکپڑا اتار پھینکنا اور پھاڑنا

 

406

صوفیہ کی بعض بدعتوں کے جوازمیں عذرتراشی

 

412

نوجوانوں کی مصاحبت کےبارے میں اکثرصوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

412

اچھی صورتوں کو تلذذ کی نظر سے دیکھنےکی ممانعت

 

419

نوجوانوں کےساتھ مصاحبت میں بعض صوفیہ کے حالات

 

420

جوشخص علم سے بے بہرہ رہے گایاعلم حاصل کرنے کے بعد اس پر عمل نہ کرے گاوہ ضرور مصیبت میں پڑے گا

 

428

خوبصورت لڑکوں کی طرف دیکھنےکاوبال

 

432

توکل کا دعوی رکھنےاور مال واسباب فراہم نہ کرنے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

433

توکل اور اسباب میں باہم مخالفت نہیں ہے

 

434

توکل کسب(روزی کمانے)کے خلاف بھی نہیں ہے

 

438

انبیاء علیہم السلام ،صحابہ رضی اللہ عنہم وتابعین رحمہ اللہ علیہم خودکسب کرتے تھے اور دوسروں کو بھی اس کاحکم دیتے تھے

 

439

کسب چھوڑ کرکاہل بیٹھنے والوں کےدلائل قبیحہ اور ان کا رد

 

444

ترک علاج کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

445

تنہائی اور گوشہ نشینی اور جمعہ وجماعت ترک کرنے میں تلبیس ابلیس

 

447

خشوع اور سرجھکانے اور ناموس قائم رکھنے کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

449

ترک نکاح میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

452

ترک نکاح کی طبی خرابیوں کابیان

 

457

اولاد نہ چاہنے پر صوفیہ میں تلبیس ابلیس

 

458

سفروسیاحت کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

459

رات کو تنہا سفرکرنا ممنوع ہے

 

460

زادراہ کےبغیرطویل سفر پرنکل جانے میں تلبیس ابلیس

 

461

ان امور کابیان جوصوفیہ سے سفروسیاحت میں خلاف شریعت صادر ہوئے

 

466

ابوحمزہ صوفی کی کنوےمیں گڑ پڑنے کی حکایت

 

466

درندوں سے تعرض کرنا او راپنے آپ کو ہلاکت میں ڈالناخلاف شریعت ہے

 

469

سفرسے واپسی پر صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

482

میت کے بارے میں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

483

شغل علمی ترک کرنے میں صوفیہ پر تلبیس

 

486

ایک فقیہ اورایک صوفی کا واقعہ

 

488

شریعت اور حقیقت میں تفریق کرنا نادانی ہے

 

492

حقییقت کو شریعت کے خلاف کہنے کے بارے میں امام غزالی  کا قول

 

493

علمی کتابیں دفن کرنے یا دریا میں بہادینےمیں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

493

علمی شغل رکھنے والوں پراعتراض کرنے کے بارےمیں صوفیہ پر تلبیس ابلیس

 

498

علمی مسائل میں کلام کرنےمیں صوفیہ میں تلبیس ابلیس

 

501

قرآن پاک کی تفسیر میں صوفیہ کے کلام اور ان  کی جرأت کامختصر بیان

 

501

حدیث او رعلوم حدی<

مصنف کی مزید تصانیف

title-page-talbees-e-iblees
title-pages-shaitani-hathkandy

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

 

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 463 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

       99--جے ماڈل ٹاؤن،
     نزد کلمہ چوک،
     لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

      KitaboSunnat@gmail.com

      بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں

 :