#4544

مصنف : محمد حسین صدیقی

مشاہدات : 4780

روضۃ المسلم شرح مقدمۃ المسلم

  • صفحات: 331
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 8275 (PKR)
(جمعہ 15 جولائی 2016ء) ناشر : زمزم پبلشرز کراچی

صحیح مسلم کتب صحاح ستہ میں صحیح بخاری کے بعد شمار کی جاتی ہے ، امام مسلم بن حجاج ﷫نے اس کی احادیث کو انتہائی محنت اور کاوش سے ترتیب دیا ہے حسن ترتیب اور تدوین کی عمدگی کے لحاظ سے یہ صحیح بخاری پر بھی فوقیت رکھتی ہے اور زمانہ تصنیف سے لیکر آج تک اس کو قبولیت عامہ کا شرف حاصل رہا ہے۔ متقدمین میں سے بعض مغاربہ اور محققین نے صحیح مسلم کو بے حد پسند کیا ہے اور ا س کو صحیح بخاری پر بھی ترجیح دی ہے چنانچہ ابو علی حاکم نیشاپوری اور حافظ ابوبکر اسماعیلی صاحب مدخل کا یہی قول ہے اور امام عبد الرحمان نسائی نے کہا کہ امام مسلم کی صحیح امام بخاری کی صحیح سے عمدہ ہے(الشیخ محی الدین ابوذکریا یحیٰی بن شرف النووی المتوفی 676 ھ مقدمہ شرح مسلم ص 13مطبوعہ نور محمد اصح المابع کراچی1375ھ) اور مسلم بن قاسم قرطبی معاصر دارقطنی نے کہا کہ امام مسلم کی صحیح کی مثل کوئی شخص نہیں پیش کرسکتا ، ابن حزم بھی صحیح مسلم کو صحیح بخاری پر ترجیح دیتے تھے۔(حافظ الشہاب الدین ابن حجر عسقلانی المتوفی 852ھ ہدی الساری جلد 1صفحہ 24مطبوعہ مصر)اور خود امام مسلم نے اپنی کتاب کے بارے میں فرمایا تھا کہ اگر محدثین دو سو سال بھی احادیث لکھتے رہیں پھر بھی ان کا مدار اسی کتاب پر ہوگا (شیخ محی الدین ابو ذکریا یحیٰی بن شرف نووی متوفی 676ھ مقدمہ شرح مسلم ص 13 مطبوعہ نورمحمد اصح المطابع کراچی 1375ھ) ۔ اور اب تو دو سو برس چھوڑکر گیارہ سو برس ہونے کو آئے لیکن ان مرد خدا کے قول کی صداقت میں کوئی فرق نہیں آیا اور شاہ عبد العزیز بیان کرتے ہیں کہ ابو علی زعفرانی کو کسی شخص نے وفات کے بعد خواب میں دیکھا اور ان سے پوچھا کہ تمہاری بخشش کس سبب ہوئی تو انہوں نے صحیح مسلم کے چند اجزا کی طرف اشارہ کرکے فرمایا ان اجزا ءکے سبب اللہ تعالی نے مجھے بخش دیا ۔(شاہ عبد العزیز محدث دہلوی متوفی 1229 ھ بستان المحدثین ص281مطبوعہ سعید اینڈ کمپنی کراچی) امام مسلم ﷫ نے صحیح مسلم کے شروع میں ایک عظیم الشان مقدمہ قائم کیا ہے جس میں انہوں نے اس کتاب میں احادیث بیان کرنے کے اپنے منہج اور اسلوب کو بیان کیا ہے۔ زیر تبصرہ کتاب" روضۃ المسلم شرح مقدمۃ المسلم " جامعہ بنوریہ میں حدیث کے استاذ مولانا محمد حسین صدیقی صاحب کی تصنیف ہے، جس میں انہوں نے امام مسلم ﷫ کے مقدمے کی شرح بیان فرمائی ہے۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ مولف کی اس کاوش کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے ۔آمین(راسخ)

عناوین

صفحہ نمبر

پیش لفظ

13

تقریظ :شیخ الحدیث حضرت مولانا الحاج ابو عمر عبدلرشید صاحب دامت برکاتہم

15

تقریظ :حضرت مولانا عبدالحمید وامت برکاتہم

16

تعارف امام مسلم ﷫

18

ولادت

18

اساتذہ

18

اسفار حصول علم

18

اامام مسلم ﷫ کےفضائل وکمالات

19

امام مسلم ﷫ کامذہب ومسلک

19

تلامذہ

19

تصنفات

20

صحیح مسلم اورا س کی وجہ تصنیف

20

زمانہ تصنیف

20

تعداد روایا ت

21

تراجم وابواب

21

وفات

22

کیا مسلم شریف جامع ہے  یانہیں

22

شروحات وحواشی

23

صحاح ستہ میں صحیح مسلم  کامقام

26

صحیح مسلم کی خصوصیات

26

ضبط تفاوت  لفظ

27

ازالہ التباس

27

حدثنا اوراخبرنا میں فرق

27

سلامت متون وجمع طرق

27

قلت آثار تعلیقات

28

احادیث

28

مقدمہ مسلم

28

کیا مسلم کامقدمہ کتاب کاجزا ہے

28

چند ضروری اصطلاحات

29

سنت

29

اثر

30

راوی

30

مروی

30

متن

30

اسناد

 

محدث

31

حافظ

31

مرفوع

31

موقوف 

31

مقطوع

32

متصل

32

ضعیف

32

معلق

32

مرسل

32

منقطع

34

تدلیس

34

تدلیس الاسناد

34

تدلیس الشیوخ

34

معنعن

35

اسناد عالی

35

اسناد نازل

38

راویوں پر طعن کرنا

36

کذب (موضوع )

36

تہمت کذب (متروک )

36

منکر

37

بدعت

37

جہالت (حدیث مجہول )

36

زبانی اغلاط

37

سوء حفظ

38

حکم

38

غفلت

38

کثرت وہم

38

مخالفت  ثقات

38

مدرج

39

مقلوب

39

المزید فی متصل لاسانید

39

مضطرب

39

مصحف یامحرف

39

شاذ ومحفوظ

39

منکر ومعروف

40

جرح وتعدیل کی تعریف

40

صرف سلام پر اکتفا کی مثالیں

44

صحیح مسلم کیوجہ تالیف

45

ائمہ احادیث اورائمہ اسماء الرجال کاامت پر احسان

61

روایت صحیح

62

روات کےتین طبقات

69

طبقہ اول

69

طبقہ دوم

69

طبقہ سوم

70

پہلا قول

70

دوسرا قول

70

حدیث کو مختصر کرناجائز ہے یانہیں

71

طبقہ اول کے روات کی تفصیل

72

طبقہ اول کےروایوں کے نام دین وفات

75

ان پانچ راویوں کےمختصر حالات

75

حضرت منصور بن المعتمر ؒ کےمختصر حالات

75

حضرت سلیمان الاعمش ﷫ کےمختصر حالاات

76

سماعیل بن ابی خالد ﷫ کے مختصر حالات

76

ابن عو ن ﷫ کےمختصر حالات

77

ایو سختیانی ﷫ کے مختصر حالات

77

طبقہ دوم کےروات کی تفصیل

78

اول مجہول الذات

79

دوم مجہول الوصف

79

سوم مستور العیب

80

چہارم مبہم

80

پنجم مجہول الذات والوصف

81

طبقہ ثانی کےراویوں کے نام

81

ان راویوں کے مختصر حالات

82

حضرت عطاء بن السائب ی متوفی کے136ھ مختصر حالات

82

حضرت یزید بن ابی زیاد ؒ تعالی متوفی 136ھ کے مختصر حالات

82

اشعت الحمرانی ؒ تعالی متوفی 143ھ کے مختصر حالات

83

راویوں کے آپس میں تفاوت

87

مثالیں دینے کی وجہ

89

گھڑی ہوئی احادیث مسلم شریف میں نہیں ہیں

91

عبداللہ بن  مسور ؒ تعالی کے مختصر حالات

94

عمروبن خالد ؒ تعالی کے مختصر حالات

94

عبدالقدوس الشامی کےمختصر حالات

95

محمد بن سعید المصلوب کے مختصر حالات

95

غیاث بن ابراہیم کےمختصر حالات

95

سلیمان بن عمروابی داؤد کے مختصر حالات

95

حدیث موضوع کی تعریف

96

مسلم شریف میں منکر اورغلط روایات بھی نہیں ہیں

96

منکر کی تعریف

99

عبداللہ  بن محرر ؒ تعالی کے مختصر حالات

100

یحیی بن ابی کے مختصر حالات

100

ابو العطوف  جراح بن المنہال کےمختصر حالات

101

عبادبن کثیر کےمختصر حالات

101

حسین بن عبداللہ بن ضمیرہ کےمختصرحالات

101

عمربن صہبا ن کےمختصر حالات

102

راوی کی وزیادتی کاکب اعتبار ہوگا

102

مسلم شریف کی تصنیف کی ایک اور وجہ

108

حدیث مشہور کی تعریف

112

حدیث معروف کی تعریف

112

مالک بن انس ؒ تعالی کےمختصر حالات

113

شعبۃ بن الحجاج ؒ تعالی کےمختصر حالات

113

سفیان بن عیینہ  رحمہ االلہ تعالی کےمختصر حالات

114

یحیی بن سعید القطان ؒ تعالی کےمختصر حالات

115

عبدالرحمن بن مہدی ؒ تعالی کےمختصر حالات

115

صرف صحیح روایتوں کوبیان کرنا چاہیے

116

ثقہ لوگوں کی روایات مقبول ہونے پر آیات قرآنیہ  سے استدلال

120

خبر اورشہادت میں فرق

121

شہادت اوخبر میں وجود اتفاق

122

شہادت اورخبر میں وجوہ فرق

123

آپ ﷺ پرجھوٹ بولنے پر سخت وعید

127

ربعی بن  حراش رحمہ للہ کےمختصر حالات

130

جمہور کی دلیل

133

جمہور کی طرف سے جواب

133

کیا فضائل میں اپنی طرف سے روایات بیان کرسکتے ہیں

134

باب النهي عن الحديث بكل ماسمع

135

باب النهي  عن الرواية عن الضعفاء والاحتياط في تحملها

142

باب في الضعفاء والكذابين ومن يرغب عن حديثهم

142

حدیث ضعیف کی تعریف

145

احادیث کوتحقیق کےبعد قبول کیاجائے

1478

بشیر بن  کعب ؒ تعالی کے مختصر حالات

149

جرح کےجوا ز کےدلائل

163

پہلی دلیل

163

دوسری دلیل

163

تیسری دلیل

164

حدیث میں اسنادکی حیثیت

165

ایصال ثواب میت  کےلئے درست ہے یانہیں

170

عمروبن ثابت کےمختصر حالات

175

حضر ت قاسم ؒ تعالی

176

یہاں سےامام مسلم ضعیف راویوں کی نشان دہی اوران پر جرح  کررہے ہین

177

شہر بن حوشب کےمختصر حالات

181

عباد بن کثیر ؒ تعالی کےمختصر حالات

182

محمد بن سعید مصلو ب کےمختصر حالات

183

صوفیوں کی حدیث کی حیثیت

184

غالب بن عبیداللہ کےمختصر حالات

189

ابوالمقدام ہشام ؒ تعالی بصر ی مختصر حالات

191

سلیمان بن حجاج ؒ تعالی کےمختصر حالات

194

روح بن غطیف ؒ تعالی کےمختصر حالات

196

بقیہ ؒ تعالی کےمختصر حالات

197

حارث اعور کےمختصر حالات

200

مغیرہ بن سعید کےمختصر حالات

202

ابوعبدالرحیم کےمختصر حالات

202

عقیدہ رجعت کیاہے

208

جابر جعفی کےمختصر حالا ت

208

حارث بن حصیرہ کےمختصرہ حالات

213

عبدالکریم ؒ تعالی کے مختصر حالات

217

ابو داؤد داعمی کےمختصر حالات

218

ابو جعفر ہاشمی مدنی کےمختصر حالات

218

آپ کے براؤزر میں پی ڈی ایف کا کوئی پلگن مجود نہیں. اس کے بجاے آپ یہاں کلک کر کے پی ڈی ایف ڈونلوڈ کر سکتے ہیں.

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 1162
  • اس ہفتے کے قارئین 14515
  • اس ماہ کے قارئین 23059
  • کل قارئین54189328

موضوعاتی فہرست