#2813.03

مصنف : شاہ معین الدین احمد ندوی

مشاہدات : 12244

تاریخ اسلام ( معین الدین ندوی ) جلد چہارم

  • صفحات: 360
  • یونیکوڈ کنورژن کا خرچہ: 9000 (PKR)
(بدھ 26 اگست 2015ء) ناشر : مکتبہ اسلامیہ، لاہور

قوموں کی زندگی میں تاریخ کی اہمیت وہی ہے جو کہ ایک فرد کی زندگی میں اس کی یادداشت کی ہوتی ہے۔ جس طرح ایک فرد واحد کی سوچ، شخصیت، کردار اور نظریات پر سب سے بڑا اثر اس کی یادداشت کا ہوتا ہے اسی طرح ایک قوم کے مجموعی طرزعمل پر سب سے زیادہ اثر انداز ہونے والی چیز اس کی تاریخ ہوتی ہے ۔ کوئی بھی قوم اس وقت تک اپنی اصلاح نہیں کر سکتی جب تک وہ اپنے اسلاف  کی تاریخ اور ان کی خدمات کو محفوظ نہ رکھے۔اسلامی تاریخ مسلمانوں کی روشن اور تابندہ مثالوں سے بھری پڑی ہے۔لیکن افسوس کہ آج کا مسلمان اپنی اس تاریخ سے کٹ چکا ہے۔اپنی بد اعمالیوں اور شریعت سے دوری کے سبب مسلمان آج پوری دنیا میں ذلیل ورسوا ہو رہے ہیں۔اور ہر میدان میں انہیں شکست وہزیمت کا سامنا ہے ۔آج 57 آزاد ممالک کی شکل میں قوت ،عددی اکثریت اور قدرتی وسائل سے مالا مال ہونے کے  باوجود ذلت ،عاجزی اور درماندگی میں اسی مقام پر کھڑی ہے جہاں سوسال پہلے کھڑی تھی۔اس کا سب سے برا سبب مسلمانوں کا  دین سے دور ہونا اور غیروں کے قریب ہونا ہے۔کافر ہمیں اس لئے مارتے ہیں کہ یہ مسلمان ہیں اور ہم اس لئے  مار کھا رہے ہیں  کہ ہم صحیح معنوں میں مسلمان نہیں ہیں۔تمام مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ  قرآن و سنت کی تعلیمات، اسلام کے انسانیت نواز پیغام اور اپنی روشن تہذیبی اَقدار کو پوری قوت اور خود اعتماد ی کے ساتھ دنیا پر آشکارا کریں،اور خود بھی اسی کے مطابق اپنی زندگی گزاریں۔ زیر تبصرہ کتاب " تاریخ اسلام "شاہ معین الدین احمد ندوی صاحب کی کاوش ہے جو دو ضخیم جلدوں پر مشتمل ہے۔اس کی پہلی جلد عہد رسالت،خلافت راشدہ اور عہد بنو امیہ ،جبکہ دوسری جلد خلافت عباسیہ پر مشتمل ہے۔مولف نے اسلامی تاریخ کو جمع فرما کر مسلمانوں کو اپنے اسلاف سے جوڑنے کی ایک کامیاب کوشش کی ہے۔ اللہ تعالی سے دعا ہے کہ وہ مولف کی اس محنت کو اپنی بارگاہ میں قبول فرمائے اور ان کے میزان حسنات میں اضافہ فرمائے۔آمین(راسخ)

عناوین

 

صفحہ نمبر

مقدمہ

 

 

فہرست

 

 

مستکفی باللہ

 

377

333ھ مطابق 944ء تا 334 ھ مطا بق 945ء

 

 

واسط پر معز الد و لہ کا قبضہ اور اس

 

 

کا اخراج

 

377

ناصر والد ولہ کی بغاوت اور مصالحت

 

378

ابوالحسن بریدی کا قتل

 

378

تورون کی موت اور ان شیرازاد کی

 

 

امیر الامرائی

 

378

معز کہ الدولہ دیلمی کا بغداد میں داخلہ اور

 

 

دیالمہ کا آغاز

 

379

مستکفی کی معزولی

 

380

مطیع للہ

 

381

334ھ مطابق 945 ءتا 363 ھ مطابق 974ء

 

 

جاگیروں پر فو جو ن کا قبضہ اور محکمہ خراج کا تعطل

 

382

بنی بویہ اور ا ٓل حمد ان کی لڑائیاں اور

 

 

مصالحت

 

382

بنی بویہ اور بنی حمد ان کی کشمکش

 

383

ابو القاسم برید ی کی بغاوت اور اس کا خاتمہ

 

383

بطیحہ میں شاہینی حکومت کا قیام

 

384

روز بہان دیلمی کی بغاوت اور اس کاخاتمہ

 

384

یوسف بن و جیہ والی عمان کی مخ لفت اور

 

 

اس کا خاتمہ

 

385

شیعیت کا فتنہ

 

385

معزالد ولہ کا انتقال

 

386

عزالد ولہ بختیار کی تخت نشینی اور اس کی

 

 

نااہلی

 

387

رعایا کے مال پر دست درازی اور

 

 

بغدادمیں ہنگامہ

 

387

ترکوں پر بختیار کی زیادتی اور اس کی

 

 

مخالفت

 

388

بغداد پر ترکوں کا قبضہ

 

388

سر حدی علاقوں میں رومیوں کی عام

 

 

یورش اور ان کی تباہی

 

389

مطیع کی دست برداری

 

392

عام حالات

 

392

طائع اللہ

 

394

363 ھ مطابق 974 ءتا 38 ھ مطا بق 991ء

 

 

بغداد پر عضد الدولہ کا قبضہ

 

394

رکن الدولہ کی بر ہمی

 

396

عضد الدولہ کی بغداد سے واپسی اور

 

 

بختیار کی بحالی

 

397

رکن ولدولہ کی وفات

 

398

بغداد پر عضدالدولہ کا دوبارہ قبضہ

 

399

بختیار کا قتل اور بغداد پر عضد الدولہ کا قبضہ

 

400

ابو تغلب کا قتل اور حمد انی حکومت کا خاتمہ

 

400

دولت حسنیہ کر دستان کی اطاعت

 

401

ہمدان اور رے پر قبضہ

 

402

عضد الدولہ کا انتقال

 

403

اوصاف و کارنامے

 

403

بارگاہ خلافت سے تعلقات

 

404

صمصام الدولہ

 

405

موصل پر بازکر قبضہ

 

405

اسفار کی بغاوت

 

406

صمصا م الدو لہ کی قید

 

406

شرف الدولہ

 

406

ترک اور دیا لمہ کی جنگ

 

406

عراق عجم پر بد ربن حسنو یہ کا قبضہ

 

407

بہا و الدولہ

 

407

ابو علی کی مخا لفت

 

408

عراق پر فخر الدولہ کی فو ج کشی اور ناکامی

 

408

بہا و لدو لہ اور اصمصا م میں جنگ اورصلح

 

408

مو صل پر ا ٓ ل حمد اور ان کا دوبارہ قبضہ

 

409

موصل پر بازکی فوج کشی اور اس کا قتل

 

409

آل حمد ان کی شکست اور عقیلی حکومت

 

409

کاقیام

 

 

دولست غزنویہ کا قیا م اور اس کی مختصر

 

410

تاریخ

 

 

طائع کیگر فتاری

 

411

قادر باللہ

 

413

381ھ مطابق 991ء تا 422 ھ مطابق 1031ء

 

 

فارس پر بہاو الدولہ کا قبضہ

 

413

صمصام الدو لہ کا قتل

 

413

عمید العراق کے عہدہ کا قیام

 

414

ابو طاہر کا قتل

 

414

بنی عقیل اور دیا لمہ کے معرکے

 

414

ابو العباس کی بغاوت اور قتل

 

415

بہاو الدولہ کا انتقال

 

415

سلطان الدولہ

 

416

ابو الفو ارس کی بغاوت واطاعت

 

416

عراق پر مشر ف الدو لہ کا قبضہ

 

416

جلال الدولہ

 

417

امیر سبکتگین غزنوی کی فتو حات

 

418

ہندوستان پر سبکتگین کا حملہ

 

418

امیر نو ع سامانی اور سبکتگین کا انتقال

 

419

سامانیہ کا خاتمہ

 

420

غزنویوں کا عروج

 

420

محمود اور خلافت بغداد کے تعلقات

 

423

محمود کا انتقال

 

424

ولایت عہد

 

426

وفات

 

426

اوصاف و کمالات

 

426

قائم بامر اللہ

 

429

422ھ مطابق 1031ء تا 467 ھ مطابق 1074ء

 

 

جلال الدو لہ کے خلاف فوج کی بغاوت

 

429

ابو کا لیجار

 

431

سلجو قیوں کا ظہور

 

431

سلجوقی حکومت

 

435

الملک الرحیم

 

436

خلافت بغداد سے سلجو قی حکومت کی

 

 

تصدیق

 

437

بغداد میں جنگ اور بد امنی

 

438

فوج کی بغاوت اور نظام حکومت کی

 

 

برہمی

 

438

بساسیری کا عروج اور اس کا  اور ریئس

 

 

الرو سا کا اختلاف

 

438

بغداد میں علوی حکو مت کے قیام کی

 

 

کوشش

 

439

طغرل بک کی ا ٓمد

 

440

اہل بغداد اور سلجو کیوں میں جنگ اور

 

 

ملک الرحیم کی واپسی

 

442

عرب فرمانر و اوں کی مخالفت اور

 

 

اطاعت

 

442

جلیل القدر منصب پر طغر ل کا تقرر اور

 

 

عزت افزائی

 

443

ابراہیم کی بغاوت اور قتل

 

443

بغداد بسا سیری کا قبضہ اور قائم کی حدیثہ روانگی

 

444

بسا سیری کا اخراج اور قائم کی واپسی

 

444

بسا سیری کا قتل

 

445

طغرل کی واپسی

 

445

قائم کی لڑکی سے طغر ل کا نکاح

 

446

اوصاف

 

446

الپ ارسلان

 

447

گر جستان کی فتح

 

448

ارمانو س کی شکست اور گر فتاری

 

449

حرمین میں عباسی خطبہ کا اجراء

 

451

والی حلب کی اطاعت

 

452

فلسطین پر قبضہ

 

452

ملک  شاہ کی ولی عہدی

 

452

الب ارسلان کی وفات

 

452ا

ا وصاف و کمالات

 

453

ملک شاہ

 

454

قاروت بک کی مخا لفت اور اس کا قتل

 

454

ولایت عہد

 

455

قائم کی وفات

 

455

اوصاف

 

455

مقتد ی با مراللہ

 

456

467ھ مطابق 1074ء تا 487 ھ مطابق 1094ء

 

 

اشاعر ہ اور حنا   بلہ کی جنگ

 

456

دمشق پر سلجو قیوں کا قبضہ

 

457

شام میں سلجو قی حکومت کا قیام

 

457

ترکستان پ رقبضہ

 

459

مقتدی اور ملک شاہ کے تعلقات

 

560

نظام الملک کی معزولیل

 

462

باطنی تحریک

 

465

نظام الملک کا قتل

 

467

نظام الملک کے مختصر حالا ت اور کارنامے

 

468

مذہبی خدمات

 

471

قیام عدل

 

471

غربا پروری

 

472

دینداری

 

472

ملک شاہ کا اخری سفر بغداد اور وفات

 

472

اوصاف و کمالات

 

474

محمو د بن ملک شاہ

 

476

مقتدی کی وفات

 

476

اوصاف

 

476

مستظہر باللہ

 

478

487ھ مطابق 1094ء تا 515ھ مطابق 1118ء

 

 

آذر بائیجان پر تتش ارسلان  کی فوج کسی

 

478

اور ناکامی

 

 

امیر اسماعیل کی مخالفت  اور  اس کا قتل

 

478

بغداد میں تتش کا خطبہ

 

478

محمود کی موت اور بر کیا ر ق کی تخت نشینی

 

479

خراسان پر ارسلان ارغون کا قبضہ

 

479

سلطان محمد کی مخا لفت

 

480

بغداد میں محمد کا خطبہ

 

480

ملک شاہ ثانی بن بر کیا رق

ٍ

481

سلطان محمد

 

482

صدقہ بن دبیس کا قتل

 

482

موصل پر سلطانی قبضہ

 

483

باطنیوں کی مصیبت

 

483

پہلی صلیبی جنگ

 

486

سلطان محمد کا انتقال

 

498

سلطان محمود

 

500

مستظہر کی وفات

 

500

اوصاف

 

500

آن لائن مطالعہ وقتی طور پر موجود نہیں ہے - ان شاءالله بہت جلد بحال کر دیا جائے گا

اس کتاب کی دیگر جلدیں

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈ وانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین 629
  • اس ہفتے کے قارئین 3736
  • اس ماہ کے قارئین 58046
  • کل قارئین64324849

موضوعاتی فہرست