تبلیغی جماعت علمائے عرب کی نظر میں(1189#)

محمد بن ناصر العرینی
ابو عبید فاضل مدینہ یونیورسٹی
حدیث اکیڈمی ڈیرہ غازیخان
74
2220 (PKR)
1.8 MB

قرآن کریم اور احادیث نبویہﷺ میں تبلیغ دین کی طرف بہت زیادہ توجہ دلائی گئی ہے۔ حضور نبی کریمﷺ نے دعاؤں کی قبولیت کو بھی نیکی کا حکم دینے اور برائی سے روکنے کے ساتھ خاص فرمایا ہے۔ لیکن تبلیغ دین کے لیے نبوی منہاج کو سامنے رکھنا از بس ضروری ہے  اور اس امر کی اشد ضرورت ہے کہ قرآن و حدیث کی روشنی میں لوگوں کی اصلاح کا کام کیا جائے۔ زیر مطالعہ کتابچہ میں برصغیر سے اٹھنے والی تبلیغی جماعت کے طریقہ تبلیغ اور عقائد پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ اس میں محمد بن ناصر العرینی  نے تبلیغی جماعت سے متعلق معلومات فراہم کرتے ہوئے اس جماعت سے متعلق علمائے عرب کے اقوال و فتاوی جات کو پیش کیا ہے۔ اردو ترجمہ کے فرائض فاضل مدینہ یونیورسٹی ابو عید نے ادا کیے ہیں۔ مصنف کے مطابق تبلیغی حضرات کا دوران تبلیغ مکمل دار و مدار تبلیغی نصاب پر ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے مبلغین لوگوں کی عقائد کی اصلاح کے بجائے عقائد بگاڑنے کا کام سرانجام دے رہے ہیں۔یہ کتابچہ جن علما کے فتاوی جات اور افادات پر مشتمل ہے ان میں شیخ ابن باز رحمۃ اللہ علیہ، شیخ صالح العثیمین رحمۃ اللہ علیہ، علامہ البانی رحمۃ اللہ علیہ اور متعدد کبار علمائے کرام شامل ہیں۔ (عین۔ م)
 

عناوین

 

صفحہ نمبر

ضروری نوٹ

 

5

ابتدائیہ

 

11

علمائے کرام کی نظر میں تبلیغی جماعت کا مقام

 

40

محمد ناصرالدین البانی رحمہ اللہ علیہ کا موقف

 

49

فضیلۃ الشیخ عبدالرزاق عفیفی رحمۃ اللہ علیہ کا موقف

 

50

صالح بن فوزان الفوزان رحمۃ اللہ علیہ کا موقف

 

51

معروف حنفی عالم دین فضیلۃ الشیخ عبدالقادرالارناووط کا موقف

 

55

الشیخ سعد الحصین کا موقف

 

58

تبلیغی جماعت کے متعلق بعض اشکالات

 

64

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1191
  • اس ہفتے کے قارئین: 5791
  • اس ماہ کے قارئین: 37755
  • کل مشاہدات: 45390117

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں