الاصلاح(486#)

حافظ محمد گوندلوی
مرکز التربیۃ الاسلامیۃ
ام القریٰ پبلی کیشنز، گوجرانوالہ
576
17280 (PKR)

حضرت العلام، محدث العصر جناب محمد گوندلوی رحمہ اللہ تعالیٰ اپنے وقت کے امام تھے۔ ان کی تدریس اور تالیف کے میدان میں نمایاں خدمات ہیں۔ حضرت العلام کا مطالعہ بہت وسیع اور فکر میں انتہائی گہرائی تھی ۔ ان کے حافظے کی پختگی کی وجہ سے لوگ انہیں چلتی پھرتی لائببریری کہا کرتے تھے ۔ان کی یہ کتاب ایک گوہر نایاب ہے جو ایک بریلوی عالم دین کی تصنیف’جواز الفاتحہ علی الطعام‘ کے جواب میں تحریر کی گئی ہے لیکن اس میں اس خاص مسئلہ کے علاوہ دیگر بدعات، اجتہاد وتقلید، قیاس، شرکیہ عقائد اور رسومات سے متعلق بھی انتہائی وقیع اور علمی تحقیقات پیش کی گئی ہیں۔اس کتاب میں تقلید، ندائے یا رسول اللہ، بشریت رسول، قبروں پر قبے بنانا، چالیسواں اور فاتحہ علی الطعام جیسے مسائل پر سیر حاصل بحث کی گئی ہے۔ کتاب میں ان فروعی مسائل کے ساتھ ساتھ کچھ اصولی مباحث بھی زیر بحث آئے ہیں جن میں ایک اہم مسئلہ قیاس اور بدعت میں فرق کا ہے۔ کتاب اس قدر علمی مواد پر مشتمل ہے کہ عوام الناس تو کجا، علماء اور متخصصین بھی اس کے مطالعے سے اپنے علم میں گہرائی، وسعت اور رسوخ محسوس کریں گے۔ہم یہ بھی یہاں واضح کرنا چاہتے ہیں کہ حضرت العلام کی ابحاث میں انتہائی گہرائی ہوتی ہے جس کی وجہ سے عوام الناس کو انہیں سمجھنے میں دقت ہوتی ہے لیکن ایسی مشکل کتابوں کا مطالعہ کرنے سے انسان کی فکر کی پرواز میں بلندی اور علم میں گہرائی و رسوخ پیدا ہوتا ہے۔اللہ تعالیٰ’مرکز التربیۃ الإسلامیۃ‘ کو اس کی جزا دے کہ انہوں نے واقعتاً علم کے ایک خزانے کو عوام الناس کے سامنے لانے کے لیے اپنی کوششیں صرف کیں ہیں۔اللہ تعالیٰ حضرات العلام کی اس مساعی جمیلہ کو قبول فرمائے۔

عناوین

 

صفحہ نمبر

عرض ناشر

 

3

پیش لفظ

 

5

مقدمہ از فضیلۃ الشیخ حافظ صلاحالدین یوسف حفظہ اللہ

 

11

تقدیم از فیضلۃ الشیخ ڈاکٹر عبدالرحمٰن فریوائی

 

85

مقدمۃ التحقیق

 

112

سوانح مؤلف

 

118

الاصلاح    (حصّہ اوّل)

 

 

آغاز کتاب

 

131

تعّصب

 

134

غرض تصنیف

 

134

اہلحدیث اور حنفیہ میں نہ اصولی اختلاف ہے نہ فروعی

 

135

تنبیہ

 

137

قیاس کے متعلق ابن حزم کی رائے

 

138

مصلحت و علت میں فرق اور مذہب اہلحدیث

 

139

اہل ظاہر اور اہل حدیث میں فرق

 

140

اصحاب قیاس کی غلطیاں

 

141

نصوص محیط حوادث ہیں

 

142

منکرین قیاس کی غلطیاں

 

142

استصحاب کی اقسام

 

143

صحیح مذہب

 

143

فائدہ

 

144

ایک اشکال اور اس کاجواب

 

144

قیاس جلی

 

145

اجماع کی حجیت

 

146

اہل حدیث اور اہل رائے کا طریق استدلال

 

150

اہل حدیث اور اہل الرائے میں فروعی اختلاف کی نفی کیوں؟

 

152

قراءت فاتحہ کے متعلق شاہ عبدالعزیز رحمہ اللہ کافتویٰ

 

155

اہل حدیث اور احناف میں تقلید کا اختلاف

 

158

تقلید کے جواز یاوجوب کی صورت

 

159

چار قسم کےلوگوں کےلیےتقلید منع او رحرام ہے

 

161

ائمہ محققین کاطرز استدلال

 

162

احکام شرعیہ کی معرفت کے لیےکتاب و سنت کا تتبع کتنی قسم پر ہے؟

 

164

اجتہادمتجزی ہے یا نہیں؟

 

165

عامی کا مذہب

 

166

تبدیلی مذہب پر تعزیر

 

167

کیا کوئی حنفی خلاف مذہب حدیث پر عمل کرنے سے حنفیت سے خارج ہوجاتاہے؟

 

169

مسلک اہلحدیث کی حقانیت

 

171

منکرین بدعات کو تنبیہ

 

173

تقلید شخصی کا حکم

 

174

مکلّف کی اقسام

 

190

شرائط اجتہاد

 

192

موافقات سے اجتہاد کا بیان

 

193

اجتہاد کی اقسام

 

194

ابن عربی کی وصیت

 

197

سواد ِاعظم

 

201

فائدہ

 

204

اہل حدیث کے ناری ہونے کی چار وجوہ اور ان کا جواب

 

207

وجہ اوّل

 

207

قیاس کے دلائل

 

207

وجہ دوم

 

215

حدیث ترمذی پر گفتگو

 

215

مذہب کیا شے ہے؟

 

216

لفظ اہلحدیث کا استعمال

 

218

اہل اسلام کا اتحاد کیسے ہوسکتا ہے؟

 

219

تنبیہ

 

220

مجتہد کی اقسام

 

222

کیا اہل حدیث ائمہ اربعہ کو بُرا مانتے ہیں؟

 

227

بخاری کی صحت پرمؤلف کا اعتراض

 

233

مسئلہ علم غیب غیر باری تعالیٰ

 

237

تنبیہ

 

238

بحث نداءِ یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

 

242

نداءِ یارسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دلائل

 

246

مسئلہ استعانت

 

250

تمہید

 

250

مقصد

 

255

بشریت

 

259

قدم بوسی

 

261

عرس

 

265

قبروں پرقبے بنانا

 

266

کیا اللہ تعالیٰ کو حاضر ناظر کہنا جائز ہے؟

 

268

کیا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو ہر جگہ حاضر ناظر کہنا درست ہے؟

 

269

الاصلاح    (حصہ دوم)

 

 

سبب تالیف

 

274

الاستفتاء

 

274

شرعی بدعت کی تعریف

 

277

حافظ ابن تیمیہ کی رائے عالی

 

284

بدعت اور عام یامطلق دلیل سے استدلال

 

285

بدعات کیوں عام یا مطلق دلائل کے نیچے داخل نہیں  یا کس طرح مستثنیٰ ہیں؟

 

286

بدعت کے ردّ میں ایک حدیث

 

287

کھجوروں کو تلقیح کرنے کا واقعہ

 

294

حافظ ابن قیم رحمہ اللہ اور بدعت۔ امر دین اور امردنیا میں فرق

 

296

جناب شیخ احمد سرہندی (المعروف مجدد الف ثانی) کافتویٰ

 

296

بدعت کی اقسام

 

298

حضرت عمر رضی اللہ عنہ او رحجر اسود کا بوسہ

 

300

ایک بات جو یاد رکھنے کے قابل ہے

 

301

رسو ل اللہ  صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا ایک فرمان

 

304

بعض عبادات کے تعینات اور تخصصات پرسلف کا انکار

 

307

اعتراض

 

309

جواب

 

310

شاہ اسماعیل رحمہ اللہ کا بیان

 

311

اس امر کی ذرا وضاحت کہ بدعات عام او رمطلق ادلہ کا فرد کیوں نہیں؟

 

312

وعظ میں تعیین

 

317

تیجے کی ممانعت پر دلائل

 

317

بدعت کی مذمت میں دو احادیث

 

318

اہل بدعت کی طرف سے اعتراض

 

318

جواب

 

319

دوسری حدیث

 

319

تنبیہ

 

321

اس کی کچھ تفصیل

 

324

بدعت کی تقسیم

 

324

شرعی بدعت کے غیر منقسم ہونے پر دلائل

 

325

2۔تیجا، ساتواں اور چالیسواں کے بدعث ہونے پر دوسری دلیل

 

330

اہل بدعت کی طرف سے اس حدیث کاجواب

 

331

<p style="text-align: justify;<

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 471
  • اس ہفتے کے قارئین: 3591
  • اس ماہ کے قارئین: 24201
  • کل مشاہدات: 41894193

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں