نقش ممات(6859#)

حکیم محمود احمد ظفر
دعوۃ اکیڈمی بین الاقوامی یونیورسٹی، اسلام آباد
312
7800 (PKR)
5.4 MB

موت ایک ایسی حقیقت ہے جس پر ہر شخص یہ یقین رکھتا ہے کہ اس سےدوچار ہونا اوراس کا تلخ جام پینا ضروری ہے یہ یقیناً ہر قسم کےکھٹکے وشبہے سے بالا تر ہے  کیونکہ جب سے دنیا قائم ہے کسی نفس وجان نے موت سے چھٹکارا نہیں پا ہے۔کسی بھی جاندار کے جسم سے روح نکلنے اور جداہونے کا نام موت ہے۔ہر انسان خواہ کسی مذہب سے وابستہ ہو یا نہ ہو اللہ یا غیر اللہ کو معبود مانتا ہو یا  نہ مانتا ہو اس حقیقت کو ضرور تسلیم کرتا ہےکہ اس کی دنیا وی زندگی عارضی وفانی ہےایک روز سب کو کچھ چھوڑ کر اس کو موت کا تلخ جام پینا ہے گویا موت زندگی  کی ایسی ریٹائرمنٹ  ہےجس کےلیے  کسی عمر کی قید نہیں ہے اور اس کےلیے ماہ وسال کی جو مدت مقرر  ہے وہ غیر معلوم ہے۔یہ دنیاوی زندگی ایک سفر ہے جوعالم بقا کی طرف رواں دواں ہے ۔ ہر سانس عمر کو کم اور ہر قدم انسان کی منزل کو قریب تر کر رہا ہے ۔ عقل مند مسافر اپنے کام سے فراغت کے بعد اپنے گھر کی طرف واپسی کی فکر کرتے ہیں ، وہ نہ پردیس میں دل لگاتے اور نہ ہی اپنے فرائض سے بے خبر شہر کی رنگینیوں اور بھول بھلیوں میں الجھ کر رہ جاتے ہیں ہماری اصل منزل اور ہمارا اپنا گھر جنت ہے ۔ ہمیں اللہ تعالیٰ نے ایک ذمہ داری سونپ کر ایک محدود وقت کیلئے اس سفر پر روانہ کیا ہے ۔ عقل مندی کا تقاضا تو یہی ہے کہ ہم اپنے ہی گھر واپس جائیں کیونکہ دوسروں کے گھروں میں جانے والوں کو کوئی بھی دانا نہیں کہتا۔انسان کوسونپی گئی  ذمہ داری اورانسانی زندگی کا مقصد اللہ تعالیٰ کی عبادت کرکے اللہ تعالیٰ کو راضی کرنا ہے۔موت کے وقت ایمان  پر ثابت  قدمی   ہی ایک مومن بندے کی کامیابی ہے ۔ لیکن  اس وقت موحد  ومومن بندہ کے خلاف انسان کا ازلی دشمن شیطان  اسے راہ راست سے ہٹانے اسلام سے  برگشتہ اور عقیدہ توحید   سے  اس کے دامن کوخالی کرنے کےلیے حملہ آور ہوتاہے اور مختلف فریبانہ انداز میں  دھوکے دیتاہے ۔ ایسےموقع پر صرف وہ انسان  اسکے وار سےبچتے ہیں جن  پر اللہ کریم  کے خاص رحمت ہو ۔ زیر نظر کتاب ’’ نقش ممات ‘‘   حکیم محمود احمد ظفر  صاحب کی تصنیف ہے۔یہ کتاب موت اور اس کے احوال کے متعلق ہے ۔ مصنف نے نہایت اہتمام کے ساتھ مستند معلومات کو اس  کتاب میں جمع کیا ہے دعوتی سرگرمیوں کےلیےیہ بہترین رہنما کتاب ہے ۔فاضل مصنف  اس کتاب کے علاوہ کئی کتب کے مصنف ہیں اللہ تعالیٰ   مصنف کی اس کاوش کو قبول فرمائے  اور اسے عامۃ الناس کے لیے نفع بخش بنائے ۔(آمین) (م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

کچھ اس کتاب کے بارے میں

7

پیش لفظ

9

اسلام میں موت کیا ہے؟

17

موت کی تمنا جائز نہیں

21

موت کی تمنا کی اجازت

23

موت کی فضیلت اور تیاری

33

قبروں کی زیارت

43

قبرستان کے آداب

49

مومن کی موت پیشانی کے پسینے سے ہو جاتی ہے

52

سکرات الموت

53

موت کے لیے موت کفارہ ہے

62

موت کے وقت اللہ تعالیٰ سے حسن ظن رکھنا

63

مرنے والے کو کلمہ طیبہ کی تلقین کرنا

66

مرنے والے کی اچھائی بیان کرنا

69

میت کی آنکھیں بند کرنے کے وقت کیا کہا جائے؟

71

موت کے وقت شیطان کے اثرات

73

اعمال کا تعلق خاتمہ سے ہے

75

موت سے قبل ملک الموت کے پیا مبروں کا آنا

81

موت سے قبل توبہ

84

جان کنی کے وقت فرشتوں کی آمد

95

مرنے والے کی روح سے دوسری ارواح کی ملاقات

105

میت کا تجہیز وتکفین کرنے والے کو پہچاننا

110

میت کو کفن دینے کے بیان میں

116

جنازہ میں جلدی کرنا

118

قبر کی حقیقت

120

عالم برزخ

123

دفن کے وقت قبر پر کپڑا تاننا

127

قبر پر قرآن کا پڑھنا

129

انسان اسی زمین میں دفن ہوتا ہے جس سے وہ پیدا ہوا

138

قبر کا سفر

141

قبر آخرت کی پہلی منزل

150

مدینہ طیبہ میں قبر

151

میت کے ساتھ قبر میں کیا کیا جاتا ہے؟

156

قبر ہر ورز آواز دیتی ہے

159

قبر کا بھینچنا

163

گھروں والوں کے رونے سے میت پر عذاب ہوتا ہے

166

میت کو قبر میں رکھنے وقت کیا کہا جائے؟

170

دفن کے بعد تثبیت کےلیے قبر پر ٹھہرنا

172

میت کے لیے نوحہ وماتم کرنا

174

فرشتوں کا قبر میں سوال

176

فوائد

193

کن باتوں سے عذاب قبر ہوتا ہے

197

مومن کو قبر میں خوشخبری دینے والے اعمال

198

بعض لوگوں سے قبر میں سوال نہ ہوگا

199

قبر میں مردوں کے احوال

204

عذاب قبر سے اللہ کی پناہ مانگنا

212

چوپائے عذاب قبر کو سنتے ہیں

213

جو کچھ کہا جاتا ہے مردہ اس کو سنتا ہے

215

قرآن ا ور عذاب قبر

228

کون سی چیزیں عذاب سے قبر سے بچاتی ہیں؟

230

مردہ کو صبح وشام اس کا ٹھکانہ دکھایا جاتا ہے

235

حیات شہداء

236

شہداء کی ارواح جنت میں ہوتی ہے

242

شہید کون ہیں؟

244

زمین شہداء اور انبیاء کے جسموں کو نہیں کھاتی

248

میت کو ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل کرنا

255

انبیاء﷩کی حیات قریہ

256

روضہ اقدس پر کہے گئے سلام کو سننا

267

علمائے مذاہب اربعہ کامسلک

269

علمائے اہل حدیث کامسلک

272

اجماع امت

273

حضور﷤کی قبر سے استشفاع

274

فتوی

277

استفتاء

277

حواشی

280

اس مصنف کی دیگر تصانیف

اس ناشر کی دیگر مطبوعات

ایڈوانس سرچ

اعدادو شمار

  • آج کے قارئین: 1533
  • اس ہفتے کے قارئین: 12178
  • اس ماہ کے قارئین: 39872
  • کل قارئین : 45996584

موضوعاتی فہرست

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

رجسٹرڈ اراکین

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں