تاریخ حدیث و محدثین ( جدید ایڈیشن )

1 1 1 1 1 1 1 1 1 1
محمد ابو زہرہ مصری
مکتبہ رحمانیہ لاہور
627
15675.00 (PKR)
title-pages-tareekh-hadith-w-muhaddiseen--jadeed-audition--copy

حدیث شریعتِ اسلامیہ کا دوسرا اور آخری الہامی ذخیرہ وماخذ ہے جسے قرآن کریم کی طرح بذریعہ وحی زبان رسالت نے پیش کیا ہے ۔ یہ اس ہستی کا عطا کردہ خزانہ ہے جس کا ہر قول وعمل ،لغرش وخطاء سے پاک اور محفوظ ہے اسی لیے اس منصب عالی کے نتائج بھی ہر خطا سےمحفوظ ہیں ۔جب کہ دوسرے مناصب کی شخصیت کو یہ مقام حاصل نہیں۔یہ وہ دین ہے جس کے بغیر قرآن وفہمی ناممکن اور فقہی استدلال فضول نظرآتے ہیں۔اس میں کسی کی پیونکاری کی ضرورت نہیں۔ یہ اس شخصیت کے کلمات ہیں جنہیں مان کر ابو بکروعمر ،عثمان وعلی یا ایک عام شخص صحابی رسول بنا اور اللہ تعالیٰ کے ہاں کا رتبہ پایا ۔ جس نے اسے نہ مانا وہ ابو لہب اور ابو جہل ٹھہرا۔ یہ وہ منزل من اللہ وحی ہے حسے نظر انداز کر کے کوئی شخص اپنے ایمان کو نہیں بچا سکتا ہے ۔ اللہ تعالیٰ نے ہر رسول کی بعثت کا مقصد صرف اس کی اطاعت قراردیا ہے ۔جو بندہ بھی نبی اکرم ﷺ کی اطاعت کرے گا تو اس نے اللہ تعالیٰ کی اطاعت کی اور جو انسان آپ کی مخالفت کرے گا ،اس نے اللہ تعالی کے حکم سے روگردانی کی ۔ اللہ تعالیٰ نے رسول اللہ ﷺ کی اطاعت کی تاکید کرتے ہوئے ارشاد فرمایا: وَمَا آتَاكُمُ الرَّسُولُ فَخُذُوهُ وَمَا نَهَاكُمْ عَنْهُ فَانْتَهُوا(الحشر:7) اللہ تعالیٰ کے اس فرمان ِعالی شان کی بدولت صحابہ کرام ،تابعین عظام اور ائمہ دین رسول اللہ ﷺ کے ہر حکم کو قرآنی حکم سمجھا کرتے تھے اور قرآن وحدیث دونوں کی اطاعت کویکساں اہمیت وحیثیت دیا کرتے تھے ،کیونکہ دونوں کا منبع ومرکز وحی الٰہی ہے ۔عمل بالحدیث کی تاکید اورتلقین کے باوجود کچھ گمراہ لوگوں نےعہد صحابہ ہی میں احادیث نبویہ سےمتعلق اپنےشکوک وشبہات کااظہارکرناشروع کردیا تھا ،جن کوپروان چڑہانےمیں خوارج ، رافضہ،جہمیہ،معتزلہ، اہل الرائے اور اس دور کے دیگر فرق ضالہ نےبھر پور کردار ادا کیا۔ حدیث نبویﷺ میں مہارت حاصل کرنےکے لیے اصول حدیث میں دسترس اور اس پر عبور حاصل کرناضروری ہے اس علم کی اہمیت کے پیش نظر ائمہ محدثین اور اصول حدیث کی مہارت رکھنےوالوں نے اس موضوع پر کئی کتب تصنیف کی ہیں۔ زیر تبصرہ کتاب’’تاریخ حدیث ومحدثین‘‘ مصرکے عالم دین استاذ محمد ابو زھو کی عربی کتاب ’’ الحدیث والمحدثون‘‘ کا اردو ترجمہ ہے۔فاضل مصنف نے ا س کتاب میں حدیث پر قیمتی مباحث ،مقام حدیث، حدیث بحیثیت تفسیر قرآن ، تاریخ تدوین حدیث ، منکرین سنت کےشبہات کا ازالہ اور محدثین کرام کی خدمات کا جلیلہ کا جامع انداز میں تذکرہ کیاہے۔فاضل مصنف نے حدیث نبوی ﷺ کی تائید وحمایت کاحق ادا کردیا ہے۔ آپ نے تاریخی ادوار کےاعتبار سے تدوین حدیث کی جو مفصل تاریخ بیان کی ہے اس سے مستشرقین کے تمام شکوک وشبہات کا ازالہ ہوجاتاہے۔اس کتاب کی اہمیت وافادیت کے پیش نظر محترم جناب پروفیسر غلام احمد حریری ﷫ (مترجم کتب کثیرہ )نے اسے اردو قالب میں ڈھالا ہے۔ زیر تبصرہ ایڈیشن اس کتاب کا جدید ایڈیشن ہے اس لیے اسے بھی سائٹ پر پبلش کردیاگیا ہے۔اللہ تعالیٰ خدمت حدیث کےسلسلے میں مصنف ومترجم کی اس کاوش کو قبول فرمائے ۔ (آمین)( م۔ا)

عناوین

صفحہ نمبر

تقدمہ اتعارف

11

مقدمہ

18

سنت کالغو ی مفہوم

18

سنت کا اصلاحی مفہوم

19

سنت وحی پر مبنی ہے

21

وحی اور اقسام وحی

22

وحی متلو

25

وحی غیر متلو

26

حدیث قدسی

28

سنت کی شرعی حیثیت

32

حدیث کاوجوب اتباع

32

منکرین حجیت حدیث کی تردید

34

اخبار آحاد کےمنکرین پر تفدوجرح

39

ثفہ راوی سے منقول خبرواحد واجب العمل ہے

40

بعض احادیث پر ترک عمل کے وجوہ

43

جب ایک مسلم کسی حدیث کو اپنے مسلک کے خلاف پائے تووہ کیا کرے

49

ترک تقلید سے متعلق ائمہ اربعہ کے اقوال

50

اتباع حدیث وترک اقوال ائمہ

54

حدیث تفسیر قرآن ہے

58

حدیث کی اقسام اربعہ

58

آیا حدیث مستقل ماخذ تشریع ہے

61

بیان بطریق الحاق

62

بیان بطریق قیاس

64

بیان بطریق استنباط

65

حدیث نبوی مختلف اورا وار میں

70

حفاظت حدیث میں صحابہ کاکردار

70

سرور کائنا ت کی علمی مجالس

76

اخذ حدیث کے سلسلہ میں صحابہ کاطرز وانداز

79

اشاعت حدیث میں خواتین کاحصہ

81

حدیث کی اشاعت میں قبائلی وفود

83

مدینہ پہنچنے والے قبائلی وفود

85

اشاعت حدیث میں حجتہ الوداع کے اثرات

91

دوسرا دور

92

حدیث نبوی خلافت راشہ میں

92

خلاف راشدہ کے سیاسی حالات

92

روایت حدیث میں صحابہ کا طرزومنہاج

94

صحابہ کو تقلیل روایت کاحکم

96

روایت حدیث میں حزم واحتیاط

99

عسیر الفہم احادیث روایت کرنے کی ممانعت

103

صحابہ کے طرز روایت پر اعتراض  او راس کاجواب

106

اس بات کی تردید کہ صحابہ خبر واحد پر اعتماد نہیں کرتے تھے

112

تیسرا دور

112

حدیث خلافت راشدہ کے بعد

115

تا اختتام پہلی صدی ہجری

115

اسلامی فرقوں کا ظہور وشیوع

115

خوارج شیعہ وجمہور

117

خوارج کے عام نظریات

119

فقہ خوارج

123

خوارج اوروضع حدیث

124

شیعہ او ران کے افکار ومعتقدات

125

حدیث نبوی پر تشیع کے اثرات

129

شیعہ کی دروع بانی

131

حضرت علی کی جانب سے شیعی اکاذیب

133

شیعہ کی ملمتع سازی

137

حدیث کی جمع وتدوین میں صحابہ

140

تابعین کی مساعی جمیلہ

140

اسلامی فتوحات کی وسعت

143

بلاومختلفہ میں دار الحدیث

144

دار الحدیث مکہ مکرمہ

145

دار الحدیث کوفہ

146

دار الحدیث بصرہ

147

دار الحدیث شام

148

دار الحدیث مصر

150

طلب حدیث میں علماء کے سفر

152

طلب حدیث کے لیے سفر کی ضرورت

153

حدیث کی چھان میں پر رحلت کے اثرات

153

روایت حدیث کی اشاعت پر رحلت کااثرات

159

حدیث میں دروغ گوئی کاآغاز

160

کتابت حدیث

167

رسول کریم اور اشاعت کتابت

169

کیا قرآن کی طرح حدیث کی کتابت

170

منع وجواز کتابت کی احاددیث

172

عہد رسالت کے بعد کتابت حدیث

174

اولین خلیفہ جس نے تدوین سنت کا آغاز

177

مشاہیر صحابہ کا تعارف

180

صحابی کون ہے

180

صحابی کی پہچان

181

عدالت صحابہ ؓ پر اجماع

182

صحابہ کی تعداد

183

حضرت ابو ہریرہ

184

حضرت ابو سعید خدری ؓ

187

حضرت انس بن مالک ؓ

189

حضرت عائشہ صدیقہ ؓ

190

حضرت عبداللہ بن عباسؓ

191

حضرت عبداللہ بن عمر بن العاص ؓ

196

حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ

198

روایت حدیث میں صحابہ میں فرق مراتب

201

کثیرارویتہ  صحابہ ؓ

203

عدالت صحابہ میں واردشدہ اعتراضات

205

انسائیکلوپیڈیا آف اسلام اور حضرت ابو ہریرہ

221

اتہامات کی حقیقت

222

محدیث حاکم وابوہریرہ

230

اکابرتابعین کاتعارف

234

تابعی کی تعریف

234

ابن شہاب زہری 

236

عکرمہ مولی ابن عباسؓ

237

حضرت عمربن عبدالعزیز

242

کعب الاحبار

244

وہب بن منبہ

248

اسرائیلیات

251

سعید بن المستیب

261

عروہ بن زبیر

262

نافع مولی ابن عمر

263

ابراہیم نخعی

267

علقمہ

268

پہلی صدی ہجری میں کتابت حدیث پر اعتراضات اور ان کی تردید

270

 روایت بالمعنی پر اعتراض

270

سید رشید رضا کاموقف

296

ابوہریرہ کی روایات پر اعتراض

301

صحیفہ علی وکتاب عمروبن حزم

302

چوتھادور

324

حدیث دوسری صدی ہجری میں اس عصرحاضر میں تدوین حدیث اور مشہور کتب مولئفہ

324

موطاامام مالک

327

احادیث موطا کا درجہ

328

احادیث موطا کی تعداد

330

شروع موطا

333

موطا کی اہمیت

335

امام مالک محدیث نہ تھے

236

اس بات کی تردید کہ موطا حدیث کی کتاب نہیں

237

اس عصر میں وضع حدیث کاآغاز

245

وضاعین سے علماء کامقابلہ

252

دوسری صدی ہجری میں حجیت

361

سنت میں نزاع

361

امام شافعی اور منکر حدیث کامناظرہ

362

حجیت خبرواحد پر امام شافعی کا استدالال

370

خبر واحد کے قبول کرنے میں احتیاط

373

قبولیت خبر واحد کے شرائط

374

امام ابو حنیفہ کی حدیث دائی

377

دوسری صدی ہجری کے محدثین  کاتعارف

382

امام مالک

382

یحییٰ بن سعید القطان

387

وکیع بن الجراح

388

سفیان ثوری

389

شعیہ بن الحجاج

392

اوزاعی

395

امام شافعی

398

حدیث نبوی سے امام شافعی کا شغف

400

مستشرقین کی فریب کاری کا ابطال

404

پانچواں دور

423

حدیث نبوی تیسری صدی ہجری میں خلق قرآن کاابتلا

428

عقیدہ خلق قرآن سے خلیفہ واثف کارجوع

430

خلیفہ متوکل ناصر السنتہ

431

متکلین کی جانب سے اہل حدیث کی تحقیر

432

مستشرقین کی علمی خیانت

436

مسئلہ خلق قرآن کی حقیقت

443

عقیدہ خلق قرآن  کے اثرات ونتائج

445

وضع حدیث میں گمراہ  فرقوں کی چابکدستی

447

قومی تعصب اور وضع حدیث پر اس کے اثرات

449

شعوبیت کے حدیث پر اثرات

450

امام ابو حنیفہ کی مدح میں احادیث  موضوعہ

453

زندقہ او روضع حدیث پر اس کے اثرات

453

زندقہ کی احادیث موضوعہ

454

عباسی خلفاکی وندقہ کے خلاف معرکہ آرائی

456

قصہ گوئی کا فن او رحدیث پر اس کے اثرات

457

اس دور کے مشہور ائمہ حدیث کا تعار ف

461

علی بن المدینی

461

یحیی بن معین

462

ابوبکر بن ابی شبہ

464

ابو زرعہ رازی شیبہ

465

ابو حاتم رازی

466

محمد بن جریر طبری

466

ابن خزیمہ

467

محمد بن سعد کاتب الوقدی

469

اسحاف بن راہویہ

471

امام احمدبن حنبل

473

امام بخاری

475

ترمذی

485

امام ابن ماجہ

487

امام ابن قیبہ

487

امام مسلم بن حجاج

480

امام نسائی

481

امام ابوداؤد

484

تدوین حدیث میں محدثین کی سرگرحی

490

تاویل مختلف الحدیث

495

مسندامام احمد

498

احادیث مسند کادرجہ

501

صحیح بخاری

509

صحیح مسلم

514

صحیح  بخاری ومسلم کے شروط

516

کیا صحیحین کی احادیث یقین سے ثابت ہیں ظن ہے

532

شیخین پر فقد وجرح

535

صحیحین کے مستخرجات

542

مستخرجات صحیح بخاری

543

مستخرجات صحیح مسلم

543

کتب مستخرجہ سے روایت کا حکم

544

مستخراجات کے فوائد

545

مستخرج علی الصیحین کی زیارت کاحکم

546

مسند گاعی الصیحین

547

سنن نسائی

550

نسائی کے شرائط

550

سنن ابی داود

551

ابو داود کی احادیث کا درجہ اور شرائط

553

شررح مختصرات

556

جامع ترمذی

557

جامع ترمذی او ر سنن ابی داوداور نسائی کاموازنہ

559

ترمذی کی شروح

560

سنن ابی ماجہ

561

چھٹا دور

565

اس دور کے سیاسی حالات

565

سنت چوتھی صدی ہجری میں

567

امام حاکم

568

دار قطنی

569

ابن حبان

570

طبراقی

573

قاسم بن اصبغ

574

ابن السکن

574

ابو جعفر احمد بن محمد الطحاوی

575

سنت چوتھی صدی کے بعد تا  سقوط بغداد

576

جمع بین الصیحین

576

مجموعہ صحاح ستہ

576

مجموعہ ہاے احادیث مختلفہ

578

احادیث احکام پر مشتمل کتب

579

کتب الاطراف

581

ساتواں دور

582

ازسقوط بغداد تاعصر حاضر

582

اس عہد کے سیاسی حالات

582

اس دور میں روایت حدیث کا طرز انداز

584

بلاوسلامیہ میں حدیث کے ساتھ مسلمانوں کا اعتنا

586

حدیث نبوی کے سلسلہ میں مصٰر کی خدمات جلیلہ

588

ارض ہندوپاک میں شاعت حدیث

588

سعودی عرب میں علمی تحریک

590

اس دور کے علماء کا انداز تصف

592

کتب الزواید

592

الحوامع العامہ

594

کتب جامع احادیث احکام

595

علمی کتب میں مندرج احادیث کی تخریج

596

زبان زد عام احادیث کی تخریج

600

کتب الاطراف

601

خاتمہ الالکتاب

604

علم الجر ح والتعدیل

605

کتب الثقات

613

ثقات ارضعفاء

614

علم معرفہ الصحابہ

616

علم تاریخ الرواۃ

618

نام کنیت اور لقب کی پہچان

622

ان راویوں کے اسماپر مشتمل کتب

623

جواپنی کنیت کے ساتھ مشہور ہیں

623

القاب پر مشتمل کتب

624

امتفق والمفترق

625

المولف والمختلف

625

المتشابہ

627

علم تاویل مشکل الحدیث

627

معرفتہ الناسخ والمنسوخ

629

معرفتہ غریب الحدیث

631

معرفتہ علی الحدیث

636

موضوعات کابیان او رمحاربہ وضاعین

647

علم اصول الروایتہ

649

تعریف

649

ابتداوارتقا

650

اصول الروابتہ پر مشتمل اہم کتب

652

مصنف کی مزید تصانیف

title-pages-imam-ahmad-bin-hanble-ehad-w-hayat-copy
title-pages-imam-malik-copy
title-pages-tareekh-hadith-w-muhaddiseen--jadeed-audition--copy
title-pages-hurmat-e-sood-copy
title-pages-hayat-imam-ibne-hazam-copy
pages-from-hayaat-imam-ahmad-bin-hambal
title-pages-hayat-imam-abu-hanifa-copy
title-pages-hayaat-shaikh-ul-islam-ibne-temia

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

 

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 2169 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

       99-جے ماڈل ٹاؤن،
     نزد کلمہ چوک،
     لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

      KitaboSunnat@gmail.com

      بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں