دولت عثمانیہ جلد دوم

1 1 1 1 1 1 1 1 1 1
ڈاکٹر محمد عزیر
دار المصنفین شبلی اکیڈمی اعظم گڑھ، انڈیا
422
10550.00 (PKR)
title-pages-dolat-e-usmania-2-copy

سلطنت عثمانیہ یا خلافت عثمانیہ سن 1299ء سے 1922ء تک قائم رہنے والی ایک مسلم سلطنت تھی جس کے حکمران ترک تھے۔ اپنے عروج کے زمانے میں (16 ویں – 17 ویں صدی) یہ سلطنت تین براعظموں پر پھیلی ہوئی تھی اور جنوب مشرقی یورپ، مشرق وسطٰی اور شمالی افریقہ کا بیشتر حصہ اس کے زیر نگیں تھا۔ اس عظیم سلطنت کی سرحدیں مغرب میں آبنائے جبرالٹر، مشرق میں بحیرۂ قزوین اور خلیج فارس اور شمال میں آسٹریا کی سرحدوں، سلوواکیہ اور کریمیا (موجودہ یوکرین) سے جنوب میں سوڈان، صومالیہ اور یمن تک پھیلی ہوئی تھی۔ مالدووا، ٹرانسلوانیا اور ولاچیا کے باجگذار علاقوں کے علاوہ اس کے 29 صوبے تھے۔ زیر تبصرہ کتاب ’’دولت عثمانیہ ‘‘دار المصنفین شبلی اکیڈمی ،اعظم گڑھ ہند کے رفیق خاص جناب ڈاکٹر محمد عزیر کی تصنیف ہے ۔ بقول سید سلیمان ندوی﷫ (سابق ناظم دارالمصنفین)یہ کتاب اپنی تصنیف کے وقت دولت عثمانیہ کے تاریخ کے متعلق تحریری کی جانی والی اردو زبان میں پہلی کتاب تھی ۔اس سے پہلے دولت عثمانیہ کے متعلق جوکچھ لکھا گیا وہ محض پورپین مصنفین کے تراجم اورخیالات تھے ۔ لیکن مصنف کتاب ہذا نے سات برس کی محنت ومطالعہ کے بعد اسے تصنیف کیا ۔ اس میں عثمانی ترکوں کی تاریخ سے متعلق انگریزی، عربی، اور فارسی کی مستند کتابوں نیز بعض منتخب ترکی اور فرانسیسی تاریخوں کے ترجموں سے مدد لے کرسلطنت کے عروج وزوال کی تاریخ اور جمہوریہ ترکیہ کے کارناموں کی دو جلدوں میں مکمل تفصیل پیش کردی ہے۔کتاب کے دیباچہ سے معلوم ہوتا کہ یہ کتاب پہلی دفعہ 1939ء میں طبع ہوئی ۔ زیر تبصرہ ایڈیشن 2009ء طبع ہونے والا جدید ایڈیشن ہے ۔(م۔ا) 

عناوین

صفحہ نمبر

 دیباچہ

5

محمود ثانی

6

ینی چری کی بغاوت

1

زار اورنپولین کاخفیہ معاہدہ

2

نگلستا ن سے صلح

4

روس سےجنگ

4

صلح نامہ بخار سٹ

5

سرویا کی خودمختاری

6

میلوش حکمراں سرویا

7

سلطنت عام کی کمزوری

7

افریقی مقبوضات

9

محمد علی

9

حجاز کی مہم

11

وہابی بغاوت کاانسداد

11

محمد علی کی بغاوت

12

بغاوت یونان

13

یونانیوں کی بحری قوت

14

ارماٹولی اورکلیفٹ

15

حکومت میں یوناینوں کااقتدار

16

عام یونانیوں کی حالت

17

تعلیم اورتحریک آزادی

19

انقلاب فرانس کااثر

21

ہستیریا

22

روس کی سازشیں

23

برات

25

علی پاشا

26

مولڈیویا کی بغاوت

29

انتقام

30

ہتیر یا سے بطریق ارزار کی مخالفت

31

بغاوت مولڈیویاکااستیصال

32

موریا میں ترکوں کاقتل عام

32

باب عالی کی طرف سے جوابی کارورئی

33

گریگوریوس کی پھانسی

34

ایک غلط فہمی کاازالہ

34

یونانیوں کاقتل

35

یونانی سفاکیاں

36

باغیوں کےساتھ مغرب کی ہمدردی

39

برطانیہ کی معاندانہ روش

40

مصرکی مدد

41

موریا کی تسخیر

43

ینی چڑی کااستیصال

43

محمود کےکارنامے

45

دول عظمی کی دشمنی

46

معاہدہ آق کرمان

48

مسیحی اتحاد

49

واقعہ نوارینو

50

نوار ینو کی شکست کااثر

52

جنگ روس

53

ایک شدید غلطی اورشدید ترغلط فہمی

55

طلسم قوت

56

صلح نامہ اورنہ

58

ہجوم مصائب

60

محمد علی کی بغاوت

60

روس کی مدد

62

معاہدہ کو تاہیہ

63

معاہدہ خونکار اسکہ سی

63

محمد علی سے دوبارہ جنگ

63

محمود کی وفات

64

محمود کی عظمت

64

محمدعلی سے صلح

69

خط شریف گلخانہ

70

دستور ثانی

76

دیگر اصلاحات

80

فوجی اصلاحات

81

اصلاحات کااثر

81

سلطنت عثمانیہ کی تقسیم کی تجویز

83

جنگ کریمیا کےاسباب

84

اعلان جنگ

85

انگلستان اورفرانس کی حمایت

86

سباسٹوپول کی فتح

87

سقوط قارص

87

صلح  کی گفتگو

87

صلح نامہ پیریں

88

ضمنی معاہدے

89

صلح نامہ پیرس پر ایک نظر

89

مختلف شورشیں کریٹ

91

جد ہ پر گولہ باری

92

فتنہ لبنان

92

سلطان کی وفات

95

اس عہد کی خصوصیت

95

سلطان عبدالعزیز

97

مالی اصلاحات کی کوشش

98

سیاسی فتنے رومانیا

100

سرویا کااستقلال

101

کریٹ کی بغاوت

101

معاہد ہ پیرس کی خلاف ورزی

102

بلغار یا کاقومی کلیسا

103

باب عالی میں روس کااثر

104

جمعیۃ سلافیہ

106

مدحت پاشا کی اسکیم

107

سلطان کی فضول خرچی

108

مدحت پاشا کی صدارت

109

مالی ابتر ی

11

بغاوت ہرزیگودینا

111

اندراسی نوٹ

113

جرمن اورفرانسیسی قنصلوں کاقتل

114

بغاوت بلغاریا

115

حقیقت حال

117

یادداشت برلن

122

دولت علیہ کی مشکلات

123

سلطان کاعزل

124

سلطان مراد خامس

126

 وفات عبدلعزیز

127

کپتان حسن کاواقعہ

127

معزولی کاسوال

128

مراد کاعزل

130

سلطان عبدالحمید خاں ثانی

131

صدارت مدحت پاشا

132

دستور ساسی کااعلان

133

قسطنطینہ کی کانفرنس

137

مجلس عالیہ کافیصلہ

140

روس سےجنگ

140

پلونا

142

مضبط اورنہ

144

معاہدہ سان اسٹیفا نو

145

اس معاہد ہ کی مخالفت

146

روس اوربرطانیہ کاخفیہ معاہدہ

147

برلن کانگریس

149

عہد نامہ برلن

149

مونٹی نیگر کی نزاع

152

یونان کاقضیہ

153

مشرقی رومیلیا اوربلغار ریا کی اتحاد

153

سرویا اور بلغار کی جنگ

155

اتحاد بلغار کی تکمیل

156

دول یورپ کی مداخلت

157

کریٹ

158

جنگ یونان

163

یونان سےکریٹ کاالحاق

163

مسئلہ آرمینیا

165

تونس

176

مصر

181

ترقی واصلاحات

181

ملکی قرضہ کاربار

182

نہر سویز کےحصوں کی فروخت

182

نہرسویز کی اہمیت

183

مصر میں فرانسیسی اوربرطانوی اقتدار

184

توفیق پاشا

185

دستوری حکومت کااعلان

186

انگلستان اورفرانس کاطرز عمل

187

درویش پاشا

188

اسکندر یہ کابلوہ

189

حقیقت حال

189

اسکندریہ کی گولہ بار ی

191

جنگ آزادی

192

خدیوکی وطن دشمنی

195

قومی  حکومت

196

کفردوار

196

اسماعیلہ

197

پروفیسر پامر کی کی خفیہ مہم

198

خدیو کی غداری

201

وطنی فوج کی بدقسمتی

202

معرکہ قصاصین

202

تل الکبیر

203

مصر پر انگریزوں کاقصہ

205

جرمنی کافوجی اورقتصادی اثر

207

بغداوریلوے

207

بغدادریلوے کی اہمیت

208

اتحاد ثلاثہ

209

اندرونی اوربیرونی سازشیں

209

مقددنیاکی بدامنی

211

مرزٹگ پروگرام

212

مقدونیا کی تقسیم کےمنصوبے

214

عبدالحمید کااستبداد

215

فوج کی تعلیم

217

نظام کی تعلیم

217

نظام جاسوسی

217

عوام کی بیزاری

222

انجمن اتحاد وترقی

224

غیر اسلامی انجمنوں سےمفاہمت

224

پیرس کی انقلابی کانگریس

226

مقدونیا کاانتخاب 

226

انجمن کی احتیاطی تدبیر

229

عورتوں کی خدمات

230

خفیہ جلسے اورنئے ممبروں کاداخلہ

230

سالونیکا کمیٹی

231

تحقیقاتی کمیشن

232

انقلاب میں عجلت

232

اعلان انقلا ب

233

الطاف خسر وانہ کافریب

234

مناستر پر قبضہ

236

یلدیز کی سراسمیگی

237

دستوری حکومت کااعلان

237

خط ہمایوں یکم اگست

339

ایک اعتراض

240

نئی وزرات

241

انجمن اتحاد پر یورپ کاپہلا وار

243

انجمن کاسیاسی پروگرام

243

پارلیمنٹ کاافتتاح

244

جوابی انقلا ب

244

بغاوت کااستیصال

346

سلطان کی معزولی

346

نوجوان ترک

248

اندرونی مخالفتیں عیسائی

248

غیر ترک مسلمان

349

ترک

250

بیرونی دشمن

250

روس اورآسٹریا کی اسکیم

250

بلغار یا

251

بوسنیا وہرز یگودینا

252

طرابلس

254

جنگ طرابلس

254

انور بے

255

صلح نامہ لوزان

257

بلقائی ریاستوں کااتحاد

258

روس کی سازشیں

259

البانیا کی بغاوت

261

ترکی اندرونی حالت

261

جنگ بلقان

263

عثمانی شکست کےاسباب

264

یورپ کاپاس عہد

265

عارضی صلح

265

صلح کانفرنس لندن

266

انقلاب وزرات

266

استقلال البانیا

267

اعادہ جنگ

268

سقوط اورنہ

268

سقوطری

269

صلح نامہ لندن 30مئی 1913ء

270

اتحا د میں افتراق

270

آغاز جنگ جون 1993ء

273

جنگ تقسیم

273

فتح اورنہ

274

عارضی صلح

274

صلح نامہ بخار سٹ

274

جنگ کےنتائج

275

جنگ عظیم

279

جنگ عظیم کی شرکت

280

دردانیال کی مہم

284

معرکہ گیلی پولی

285

ایشیا ےکوچک

288

عراق

289

عرب کی بغاوت

290

مصر

291

بالشو یک انقلا ب مارچ

291

شام وفلسطین

291

صلح نامہ مدرس

292

خفیہ معاہدے

294

اندرونی حالت

295

صلح کانفرنس کی بےپروائی

298

عدالیہ پر اٹلی کاقبضہ

299

سمرنا پریونانی قبضہ

299

سمرنا کاقتل عام

300

وطنی تحریک

301

نظام حکومت

303

ادارہ حکومت

305

داخلہ کاطریقہ

306

ادراہ حکومت کاتعلیمی نظام

307

بنیادی اصول

310

ارکان ادارہ کے حقوق

311

سلطان

312

قانون وراثت

316

دیوان

316

وزراء

317

دفتر دار اور نشانجی

317

بیلربے

317

ینی چری

318

باب عالی کےسپاہی

320

جاگیری سپاہی

321

قپودان پاشا

322

ادارہ اسلامیہ

323

تعلیمی نظام

324

مفتی

324

نظام عدالت

326

قاضی

327

صد راعظم کی عدالت

327

ملتیں

328

انقلابی تبدیلیاں

329

ممالک محروسہ

331

تعلیم

333

دینی دور

334

دور تنظیمات

337

اتبدائی تعلیم

338

ثانوی تعلیم

339

اعلی تعلیم

340

چند خاص باتیں

346

بعض باتوں کی کمی

347

نوجوان ترکوں کی تعلیمی اصلاحات

347

عثمانی ترک

 

ادبی تمدنی اورسیاسی تحریکیں

351

قدیم ادب

353

فطرت پسند انہ شاعری

355

عہد تنظیمات

355

شناسی

355

مامق کمال

357

عبدالحق حامد

361

ضیاء پاشا

362

ادبیات جدید ہ

362

حیات وکائنا ت کاایک نیاتصور

366

پریس کی سرگرمی

369

رسم الخط کامسئلہ

370

تحریک اتحاد عثمانی

371

تحریک اتحاد اسلامی

372

تحریک اتحاد تورانی

376

عثمانی ترک

 

معاشرت اخلاق وعادات

379

معاشرت کی سادگی

380

حمام

386

قہو خانے

388

شہری زندگی کی ایک خصوصیات

389

حرم کی زندگی

392

عورتوں  کی بیرونی تفر تکسی

396

تعدداز واج

398

غلام اورکنیزیں

398

اخلاق وعادات

401

مصنف کی مزید تصانیف

title-pages-dolat-e-usmania-1-copy
title-pages-dolat-e-usmania-2-copy

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

 

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 1496 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

       99-جے ماڈل ٹاؤن،
     نزد کلمہ چوک،
     لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

      KitaboSunnat@gmail.com

      بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں