بابری مسجد شہادت کے بعد حصہ دوم

1 1 1 1 1 1 1 1 1 1
محمد عارف اقبال
فرید بک ڈپو، نئی دہلی
464
11600.00 (PKR)

مسلمان اللہ کے گھر کی شہادت کے ساتھ ساتھ اس ملک کی صدیوں قدیم مذہبی آہنگی کے ملیامیٹ ہونے کا غم مناتے ہیں۔ عدلیہ پر اپنے اٹوٹ ایقان کے متزلزل ہونے کا ماتم کرتے ہیں۔ ہم اور ہماری پیشرو نسل کے لوگ بابری مسجد کی تاریخی حقیقت، اہمیت سے بھی واقف ہیں‘ اور اُن لرزہ خیز واقعات کے بھی ٹیلیویژن چیانلس کے ذریعہ چشم دید گواہ بھی ہیں جب تاریخی بابری مسجد کو تاریخ کا ایک حصہ بنانے کے لئے ہندوستان بھر سے کرسیوک جمع ہوئے جنہیں حکومت کی جانب سے سیکوریٹی فراہم کی گئی۔ ساری دنیا سے اکٹھا ہونے والے میڈیا نمائندوں کے سامنے کرسیوکوں نے سنگھ پریوار کے سرکردہ قائدین کی موجودگی میں اُن کے نعرۂ ہائے تحسین کی بازگشت میں بابری مسجد کے گنبدوں پر چڑھ کر کدالوں سے اسے دیکھتے ہی دیکھتے شہید کردیا۔ 6؍دسمبر 1992ء کو ہندوستان کا ہر مسلمان اپنی نظر سے خود گردیا۔ زیر نظر تبصرہ کتاب ’’بابری مسجد شہادت سے قبل‘‘ محمد عارف اقبال کی ہے جس میں مسجد بابری کی معلومات فراہم کی گئی ہے۔بابری مسجد مغل بادشاہ ظہیر الدین محمد بابر ( 1483ء - 1531ء) کے حکم سے دربار بابری سے منسلک ایک نامور شخص میر باقی کے ذریعہ سن 1527ء میں اتر پردیش کے مقام ایودھیا میں تعمیر کی گئی۔ یہ مسجد اسلامی مغل فن تعمیر کے اعتبار سے ایک شاہکار تھی۔مزید اس کتاب میں بابری مسجد کی دینی و شرعی و تاریخی حیثیت ، بابری مسجدارباب فقہ و فتاویٰ کی نظراور دیگر تنازعات کو اجاگر کیا ہے روزِ روشن کی طرح اور یہاں تک کہ  ساری دنیا سے اکٹھا ہونے والے میڈیا نمائندوں کے سامنے کرسیوکوں نے سنگھ پریوار کے سرکردہ قائدین کی موجودگی میں اُن کے نعرۂ ہائے تحسین کی بازگشت میں بابری مسجد کے گنبدوں پر چڑھ کر کدالوں سے اسے دیکھتے ہی دیکھتے شہید کردیا۔ بابری مسجد کا تنازع اس وقت بھی مسلمانوں اور ہندوؤں کے درمیان شدید نزاع کا باعث ہے اور اس کا مقدمہ بھارتی سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے۔اللہ رب العزت سے دعا ہے کہ اللہ پاک مساجد کی حفاظت فرمائے اور جو کام محمد اقبال عارف نے کیا ہے اس قبول فرمائے۔ آمین۔ (رفیق الرحمن)

عناوین

صفحہ نمبر

عرش ناشر

4

عرض مرتب

11

بابری مسجدشہادت     سےقبل

 

ہندتوکےمضرت رساں اصول بےنقاب ہوگئے

15

6دسمبر کاآپریشن ترشول چشم دید سورت کابدترین دین

18

ہندتوکاجنگل راج

29

قومی رسوائی قوم کاسرشرم سےجھک جاناچاہیے

31

ہندوسماج شرمندہ ہے

34

بابری مسجد کاتالاکانگریس کی سازش سےکھولاگیا

38

مرکزی نامردحکومت اورکلیان سنگھ کےداؤپیچ

43

شہادت بابری مسجدزبردست المیہ

47

روزنامہ انڈی بنڈنٹ کااداریہ

52

شہادت بابری مسجدپہلےسےخبرتھی

55

مسجدکی شہادت ایک نئےباب کاآغاز

57

مسلمان کہاں جائیں

59

کرامتی بابری مسجد جس نےتخریبی نظر ڈالی اس کانام ونشان مٹ گیا

61

انہدام بابری مسجدایک ایسازخم ہوناسوربن چکاہے

64

روزنامہ کلکتہ میں اڈوانی کےنام کھلاخط

66

اجودھیامیں تبین دن

70

ناکارہ پارلیمنٹ جوہندتوکےخلاف تجویزبھی پاس نہ کراسکی

77

بھارت میں نام نہادجمہوریت کی قلعی کھل گئی

81

بابری مسجدکی شہادت کاخون ملک کےدرودویوار سےٹپک رہاہے

84

مسٹرراؤغلطی نہیں گناہ

87

منصوبہ بندسازش

90

بابری مسجد کےتنازعہ کوبین الاقوامی مسئلہ بنانےوالے اہم فیصلے

95

صدرجمہوریہ ڈاکٹرشنکردیال کاشرماکااطہاررنج

102

عالمی ردعمل

102

امریکہ

103

پاکستان وبنگلہ دیش

104

انگلینڈ اوریورپ

105

ایران

107

باب  2:اجودھیاتنازعہ اوروزیراعظم واجپی کےبیانات

 

تبصرہ وتجزیہ ردعمل

108

حرف بہ حرف بیان نمبر یکم اگست 2003ء

111

حرف بہ حرف بیان نمبر3اگست 2033ء

111

وزیراعظم اپنےبیانات کےآئینےمیں

112

وزیراعظیم کابیان غیرآئینی

114

سنگھ کےدباؤکاشاخسانہ

115

سنگھ کوخوش کرنےکاحربہ

117

ردعمل

118

اپوزیشن پارٹیاں

119

وزیراعظیم نےعدلیہ کاوقامجروح کیا

120

سویم سیوک وزیراعظم کی مجبوری یاکوٹ نیتی

122

وزیراعظم وقدم کےآگآایک قدم پیچھے

127

باب 4 متنازعہ مقام کی کھدائی اورمحکمہ آثارقدیمہ کی رپورٹ

 

تجزیہ تبصرہ کاردعمل

131

متنازعہ مقام کی کھدائی

133

اےایس آئی کی رپورٹ کےاہم نکات

134

جھوٹ کاپلندہ

135

محکمہ آثارقدیمہ کی رپورٹ کی حقیقت

138

وی ایچ پی کی نئی تھیوری

139

ستون کی بنیادیں

141

متبادل نظریہ

142

ہندوؤں کےلیے متبرک جگہ

143

مشہوراسکالروں کی تنقید

144

رپورٹ کی ثانونی حیثیت

145

کھدائی کی ضرورت

146

محکمہ آثارقدیمہ کازعفرانی رنگ

146

بابری مسجدکےنیچے محکمہ آثارقدیمی کی تخریب کاری

147

عہدکی ابواب بندی میں بدنظمی

148

کوری خام خیالی

149

دائرہ بندغلط فہمیاں

152

مندرسےوابستہ چندمتفرق اشیاء

153

آثارقدیمہ کی رپورٹ صرف رائے سےثبوت ہےنہیں

155

اےایس آئی کی رپورٹ کتنی معتبر

162

محکمہ آثارقدیمہ کی کھدائی رپورٹ بےبنیاداورگمراہ کن

168

محکمہ آثارقدیمہ کی زعفرانی کی رنگت ردعمل

176

رپورٹ سیاسی دباؤ میں تیارکی گئی

176

ہنگامہ آرائی سےماحول خراب

176

بین الاقوامی مسئلہ ندائے خلافت لاہور

177

منردہونےکوئی ثبوت نہیں

178

ایک غلط نظریقائم ہوئی

179

بابری مسجدکی کھدائی عینی اشاہدکی زبانی

182

اجودھیارپورٹ پرماہرین آثارقدیمہ کی رائے

187

محکمہ آثارقدیمہ نےاپنی 140سالہ ساکھ مٹی میں ملادی

189

اےایس آئی رپورٹ کی روشنی میں اجودھیاتنازعہ

191

مصنف کی مزید تصانیف

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

 

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 2470 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

       99--جے ماڈل ٹاؤن،
     نزد کلمہ چوک،
     لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

      KitaboSunnat@gmail.com

      بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں

 :