آئینہ پرویزیت

1 1 1 1 1 1 1 1 1 1
عبد الرحمن کیلانی
مکتبۃ السلام، وسن پورہ، لاہور
915
27450.00 (PKR)
title-page-ainaeparwaiziathqcomplete

اسلام کے ہر دور میں مسلمانوں میں یہ بات مسلم رہی ہے کہ حدیث نبوی قرآن کریم کی وہ تشریح اور تفسیر ہے جو صاحب ِقرآن صلی اللہ علیہ وسلم سے صادر ہوئی ہے۔ قرآنی اصول واحکام کی تعمیل میں جاری ہونے والے آپ کے اقوال و افعال اور تقریرات کو حدیث سے تعبیر کیا جاتا ہے۔ چنانچہ قرآن کریم ہماری راہنمائی اس طرف کرتا ہے کہ قرآنی اصول و احکام کی تفاصیل و جزئیات کا تعین رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے منصب ِرسالت میں شامل تھا اور قرآن و حدیث کا مجموعہ ہی اسلام کہلاتا ہے جو آپ نے امت کے سامنے پیش فرمایا ہے، لہٰذا قرآن کریم کی طرح حدیث ِنبوی بھی شرعاً حجت ہے جس سے آج تک کسی مسلمان نے انکار نہیں کیا۔ انکارِ حدیث کے فتنہ نے دوسری صدی میں اس وقت جنم لیا جب غیر اسلامی افکار سے متاثر لوگوں نے اسلامی معاشرہ میں قدم رکھا اور غیر مسلموں سے مستعار بیج کو اسلامی سرزمین میں کاشت کرنے کی کوشش کی۔ اس وقت فتنہ انکار ِ حدیث کے سرغنہ کے طور پر جو دو فریق سامنے آئے وہ خوارج اور معتزلہ تھے۔ خوارج جو اپنے غالی افکار ونظریات کو اہل اسلام میں پھیلانے کا عزم کئے ہوئے تھے، حدیث ِنبوی کو اپنے راستے کا پتھر سمجھتے ہوئے اس سے فرار کی راہ تلاش کرتے تھے۔ دوسرے معتزلہ تھے جو اسلامی مسلمات کے ردّوقبول کے لئے اپنی ناقص عقل کو ایک معیار اور کسوٹی سمجھ بیٹھے تھے، لہٰذا انکارِحد رجم، انکارِ عذابِ قبر اور انکارِ سحر جیسے عقائد و نظریات اس عقل پرستی کا ہی نتیجہ ہیں جو انکارِ حدیث کا سبب بنتی ہے۔دور ِجدید میں برصغیر پاک و ہند میں فتنہ انکارِ حدیث نے خوب انتشارپیدا کیا اور اسلامی حکومت ناپید ہونے کی وجہ سے جس کے دل میں حدیث ِ نبوی کے خلاف جو کچھ آیا اس نے بے خوف وخطر کھل کر اس کا اظہار کیا۔ دین کے ان نادان دوستوں نے اسلامی نظام کے ایک بازو کو کاٹ پھینکنے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگایا اور لگا رہے ہیں۔ اس فتنے کی آبیاری کرنے والے بہت سے حضرات ہیں جن میں سے مولوی چراغ علی، سرسیداحمدخان، عبداللہ چکڑالوی، حشمت علی لاہوری، رفیع الدین ملتانی، احمددین امرتسری اور مسٹرغلام احمدپرویز وغیرہ نمایاں ہیں۔ ان میں آخر الذکر شخص نے فتنہٴ انکار ِحدیث کی نشرواشاعت میں اہم کردار ادا کیا، کیونکہ انہیں اس فتنہ کے اکابر حضرات کی طرف سے تیارشدہ میدان دستیاب تھا جس میں صرف کسی غیر محتاط قلم کی باگیں ڈھیلی چھوڑنے کی ضرورت تھی۔ چنانچہ اس کام کا بیڑہ مسٹر غلام احمدپرویز نے اٹھا لیا جو کہ فتنوں کی آبیاری میں مہارتِ تامہ رکھتے تھے۔ زیر تبصرہ کتاب ’آئینہ پرویزیت‘ میں مدلل طریقے سے فتنہٴ انکارِ حدیث کی سرکوبی کی گئی ہے، اور مبرہن انداز میں پرویزی اعتراضات کے جوابات پیش کئے گئے ہیں-

عناوین

 

صفحہ نمبر

فہرست

 

5

دیباچہ ( طبع دوم )

 

29

دیباچہ ( طبع سوم )

 

31

تبصرے

 

32

پیش لفط

 

34

حصہ اول

 

 

معتزلہ سے طلوع اسلام تک

 

 

باب اول : عقل پرست فرقوں کا آغاز

 

41

عقل پرست اور ان کے مختلف فرقے

 

42

مادہ پرست اور دہریے

 

42

فلاسفر اور سائینس داں

 

43

الٰہیات ارسطو

 

44

لا ادریت

 

45

وحی الٰہی اور بنیادی سوالات کا حل

 

45

ہندو مت اور عقل پرستی

 

46

مذہب میں بگاڑ کی صورتیں

 

47

عقل پرستی کا بگاڑ

 

48

باب دوم : عجمی تصورات کا پہلا دَور

 

49

فرقہ جہمیہ

 

49

معتزلین (RATIONALISTS)

 

50

معتزلہ کے عقائد و نظریات

 

51

مسئلہ تقدیر یا جبر و قدر

 

51

تقدیر کی بحث

 

52

افعال کی نسبت

 

53

تاویلات

 

55

عدل یا قانونِ جزا و سزا

 

55

صفاتِ باری تعالٰی ، معتزلہ کی توحید

 

56

مسئلہ خلقِ قرآن

 

57

امام احمد بن حنبل (رحمۃ اللہ علیہ)

 

57

امام موصوف پر دورِ ابتلاء

 

58

خلق قرآن کی حقیقت اور معتزلہ کا انجام

 

59

عقل کی برتری اور تفوق

 

60

عقل کا جائز مقام

 

60

عقل اور ہدایت

 

61

عقل اور ضلالت

 

62

عقل کا دائرہ کار

 

64

عقل کی ناجائز مداخلت

 

65

اپنے دور کی علمی سطح

 

66

معتزلہ کے زوال کے اسباب

 

67

نتائج

 

68

باب سوم: عجمی تصورات کا دوسرا دور

 

69

سرسید احمد خاں

 

70

جدید علم کلام کی ضرورت اور خصوصیات

 

71

حدیث اور فقہ سب ناقابل حجت ہیں

 

71

قرآن اور نیچر

 

72

سرسید احمد خاں کے نظریات

 

73

سرسید کا نظریہ معجزات

 

74

قوانین قدرت میں تبدیلی

 

75

قوانین قدرت اور استثنائی صورتیں

 

76

معجزات سے انکار کی اصل وجہ

 

77

قرآن کریم میں مذکور معجزات

 

77

آگ کا ٹھنڈا ہونا

 

77

اصحاب فیل

 

78

عصائے موسٰی اور ید بیضا

 

78

دریا کا پھٹنا

 

80

بارہ چشموں کا پھوٹنا

 

81

حضرت عیسٰی علیہ السلام کی پیدائش اور وفات

 

81

حضرت عیسٰی علیہ السلام کے دوسرے معجزات

 

82

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے معجزات

 

84

انشقاق قمر

 

84

واقعہ اسراء

 

84

وما رمیت اذ رمیت ولٰکن اللہ رمٰی

 

86

دوسرے خرق عادت امور سے انکار

 

86

کیا دعا کا کچھ فائدہ ہوتا ہے؟

 

86

بنی اسرائیل کا بندر بننا

 

88

اللہ کے مارنے اور زندہ کرنے کی قدرت

 

88

حضرت عزیر علیہ السلام کی موت اور زندگی

 

88

پرندوں کی موت اور زندگی

 

89

جنت اور دوزخ کی حقیقت

 

91

جنت اور دوزخ کے خارجی وجود کا انکار

 

92

خدا اور رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے متعلق تصور؟

 

93

باب چہارم:  نظریہ ارتقاء کا سرسید کے عقائد پر اثر

 

94

فرشتوں پر ایمان

 

94

سرسید کے خیالات کے ماخذ

 

95

سرسید اور صوفیہ کا ذہنی اتحاد

 

96

فرشتوں کے ذاتی تشخص کے دلائل

 

97

جبرئیل علیہ السلام کی حقیقت اور نبوت کا مقام

 

98

فطری ملکہ اور نبوت میں فرق

 

99

فطری ملکہ اور علامہ اقبال رحمہ اللہ

 

99

   

نبوت اور قرآن کریم

 

101

جبرئیل اور میکائیل

 

102

ابلیس یا شیطان

 

102

جن

 

103

ابلیس کے خارجی وجود کا ثبوت

 

104

جنوں کے خارجی وجود کا ثبوت

 

104

قصہ آدم علیہ السلام و ابلیس

 

105

قصہ آدم میں گفتگو کے فریق

 

106

جنت، شجر ممنوعہ اور ہبوط آدم  کی تاویلات

 

107

تاویلات کا جائزہ

 

108

سرسید پر کفر کا فتوٰی

 

109

سرسید کے افکار و نظریات پر ایک نظر

 

111

پہلا نظریہ، عقل کا تفوق

 

111

دوسرا نظریہ، ذات و صفات باری تعالٰی کی تنزیہہ

 

111

تیسرا نظریہ، جبر و قدر

 

112

چوتھا نظریہ، خوارق عادت اور معجزات سے انکار

 

112

اپنے دور کی علمی سطح کی قباحت

 

114

پانچواں نظریہ ، نظریہ ارتقاء

 

115

نگہ باز گشت

 

116

باب پنجم:  عجمی تصورات کا تیسرا دور

 

118

عبوری دور کے منکرین حدیث

 

118

چند مشہور منکرین حدیث کا مختصر تعارف

 

119

عبد اللہ چکڑالوی

 

119

نیاز فتح پوری

 

121

علامہ عنایت اللہ مشرقی

 

123

ڈاکٹر غلام جیلانی برق

 

124

حافظ اسلم جے راج پوری

 

126

حافظ اسلم صاحب کا نظریہ حدیث

 

126

غلام احمد پرویز اور طلوع اسلام

 

127

طلوع اسلام کا اپنے پیشروؤں کو خراج عقیدت

 

128

معتزلین اور طلوع اسلام

 

128

سرسید احمد خاں اور طلوع اسلام

 

129

علامہ مشرقی اور ادارہ طلوع اسلام

 

129

حافظ اسلم صاحب اور ادارہ طلوع اسلام

 

129

طلوع اسلام اور حافظ عنایت اللہ اثری

 

131

طلوع اسلام کے عجمی افکار

 

131

عقل کا تفوق اور برتری

 

131

تاویلات کا دھندا

 

133

طلوع اسلام کا لٹریچر

 

133

مسلمانوں سے شکوہ؟

 

134

اہل مغرب میں پرویز صاحب کی مقبولیت

 

134

باب اول:  حسبنا کتاب اللہ

 

137

لفظ کتاب کے مختلف معانی

 

137

کتاب کا اصطلاحی مفہوم

 

140

کتاب و سنت یا قرآن و حدیث

 

140

کتاب و سنت لازم و ملزوم ہیں

 

140

قرآن میں سنت رسول کا ذکر

 

141

احادیث میں کتاب اللہ کا ذکر

 

141

کتاب اللہ اور "واقعہ عسیف"

 

141

کتاب اللہ اور حق تولیت

 

142

"حسبنا کتاب اللہ" سے عمر رضی اللہ عنہ کی مراد

 

143

کتاب اللہ اور کلام اللہ کا فرق

 

144

کتاب اللہ کے پرویزی معانی کا تجزیہ

 

144

مدون شکل میں

 

145

سلی ہوئی شکل میں

 

146

قرآن کی ماسٹر کاپی

 

147

مدون اور سلی ہوئی کتاب کا ایک نقلی ثبوت

 

148

حفاظت قرآن کے پرچار میں غلو

 

149

اللہ کی ذمہ داری پوری شریعت کی حفاظت ہے

 

150

قرآن کے بیان کو لغت سے متعین کرنے کے مفاسد

 

151

کثیر المعانی الفاظ

 

151

اصطلاحات

 

152

مقامی محاورات

 

152

عرفی معانی

 

153

پرویزی اصطلاحات

 

153

نتائج

 

154

باب دوم:  عجمی سازش اور زوال امت

 

155

اسلام میں عجمی تصورات کی آمیزش

 

155

عجمی سازش کیا ہے؟

 

155

عجمی سازش کے راوی

 

156

سازش کی ابتداء

 

156

سازش کی انتہا

 

156

حدیث کے جامعین کے اوصاف

 

157

طلوع اسلام کے مکر و فریب

 

157

حدیث کے عرب جامعین

 

158

نظریہ عجمی سازش کے غلط ہونے کے دلائل

 

159

صحاح ستہ کا مواد اور ایرانی عقائد

 

159

اسلامی فقہ اور عجمی سازش

 

159

محدثین کا معیار صحت

 

160

یزدگرد کا قاتل؟

 

160

شہادت حضرت عمر رضی اللہ عنہ

 

161

اسلامی حکومت میں سازشیں

 

161

سازش کیلئے مناسب مقام

 

162

ایران میں ہی سازش کیوں؟

 

162

عجمی سازش اور تمنا عادی

 

163

امام زہری کا شجرہ نسب

 

164

تمنا عادی اور تدوین حدیث

 

165

تمنا عادی اور حافظ اسلام کے بیانات

 

165

حدیث مثلہ معہ اور عجمی سازش

 

166

عمادی صاحب کے جھوٹ کا جواب

 

166

حافظ اسلم صاحب کے اعتراضات کا جواب

 

167

پرویز صاحب اور قرآن کی مثلیت

 

167

حضرت عیسٰی اور آدم میں مثلیت

 

167

ملوکیت اور پیشوائیت کا شاخسانہ

 

168

ملوکیت اور پیشوائیت (مذہب) کی ایک کیمیائی مثال

 

170

کیا ملوکیت واقعی مورد عتاب ہے؟

 

171

ملوکیت سے بیر کی اصل وجہ

 

173

خلفائے بنو امیہ و بنو عباس کے مناقب و مثالب

 

173

مذاہب پر پرویز صاحب کی برہمی

 

174

ملوکیت اور پیشوائیت کا سمجھوتہ

 

176

علمائے دین کی حق گوئی و بے باکی

 

177

سعید بن مسیب اور اموی خلفاء

 

177

سالم بن عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہ اور ہشام بن عبد الملک

 

177

امام ابو حنیفہ رحمہ اللہ اور عراق کا گورنر

 

178

خلیفہ منصور کی خلافت کی توثیق امام ابو حنیفہ اور ابن ابی ذئب

 

178

امام ابو حنیفہ رحمہ اللہ کی بے نیازی

 

180

خالد بن عبد الرحمان کی خلیفہ منصور پر تنقید

 

181

امام مالک رحمہ اللہاور خلیفہ منصور

 

181

جبری بیعت سے متعلق امام مالک رحمہ اللہ کا فتوٰی

 

181

ابن طاؤس رحمتہ اللہ علیہ (محدث) اور خلیفہ منصور

 

182

امام سفیان ثوری رحمہ اللہ (۹۷۔۱۶۱ ھ)  اور عہدہ قضاء

 

182

ہارون الرشید اور فضیل بن عیاض رحمتہ اللہ علیہ

 

183

امام احمد بن حنبل رحمہ اللہ اور مامون الرشید

 

184

امام بخاری رحمتہ اللہ علیہ اور حاکم بخارا

 

185

نتائج

 

185

مسلمانوں کے زوال کے اسباب اور علاج

 

186

مقام آدمیت اور مقام انسانیت؟

 

186

علاج

 

187

کیا فلاح آخرت اور دنیوی خوشحالی لازم و ملزوم ہیں؟

 

187

مومن بننے کا طریقہ

 

188

انبیاء اور تسخیر کائنات

 

189

سائنسدان ہی حقیقی عالم ہیں

 

189

عالم یا لائبریرین

 

190

عقل کی بو

 

190

باب سوم:  مساوات مرد وزن

 

192

موضوع کا تعین

 

192

اسلام کے عطا کردہ حقوق

 

193

مرد کی فوقیت کے گوشے

 

194

مرد کی فوقیت اور طلوع اسلام

 

194

عورت کی پیدائش

 

194

مرد کی حاکمیت؟

 

195

عورت کی فرمانبرداری

 

197

مردوں کا عورتوں کو سزا دینے کا اختیار

 

199

اپنے بیانات کی خود تردید

 

200

عورت کی شہادت

 

200

مذکر کے صیغے

 

202

جنتی معاشرہ

 

203

تعدد ازدواج

 

203

حق طلاق مرد کو ہے

 

204

عدت صرف عورت کیلئے

 

204

عورت کی فضیلت بواسطہ حق مہر

 

205

بچپن کی شادی

 

206

عورت اور ولایت

 

207

مرد کی فوقیت کے چند دوسرے پہلو

 

207

کوئی عورت نبیہ نہیں ہوئی

 

207

کوئی عورت حاکم بھی نہیں بن سکتی

 

207

عورتیں مردوں کی کھیتیاں ہیں

 

207

نکاح کے بعد عورت ہی مرد کے گھر آتی ہے

 

208

اولاد کا وارث مرد ہوتا ہے

 

208

تکمیل شہادت

 

208

اہل کتاب سے نکاح

 

208

عورت کی برتری

 

209

باب چہارم: نظریہ ارتقاء

 

210

کیا انسان اولاد ارتقاء ہے؟

 

210

سرچارلس ڈارون

 

211

نظریہ ارتقاء کیا ہے؟

 

212

نظریہ ارتقاء کے اصول

 

213

تنازع للبقاء  (Struggal For Existence)

 

213

طبعی انتخاب  (Natural Selection)

 

213

ماحول سے ہم آہنگی (Adaptation)

 

213

قانون وراثت  (Law of Heritence)

 

214

 

   

نظریہ ارتقاء پر اعتراضات

 

214

نظریہ ارتقاء اور مغربی مفکرین

 

216

نظریہ ارتقاء کی مقبولیت کے اسباب

 

217

نظریہ ارتقاء اور منکرین قرآن

 

217

طلوع اسلام کے قرآنی دلائل

 

218

نفس واحدہ سے مراد پہلا جرثومہ حیات؟

 

218

حلق کا مفہوم

 

219

اطوار مختلفہ

 

219

زمین سے روئیدگی

 

220

نظریہ ارتقاء کے ابطال پر قرآنی دلائل

 

221

مراحل تخلیق انسانی

 

221

تخلیق انسانی سے پہلے کا زمانہ

 

222

آدم کی خصوصی تخلیق

 

222

آدم کی بن باپ تخلیق

 

222

قصہ آدم و ابلیس

 

224

جنت، شجر ممنوعہ اور ہبوط آدم

 

224

ابلیس اور ملائکہ

 

224

نظریہ ارتقاء اور اسلامی تعلیمات

 

225

نظریہ ارتقاء کا مستقبل

 

226

صراط مستقیم کیا ہے؟

 

227

ارتقاء کی اگلی منزل

 

229

آخرت کا تصور

 

229

اخروی زندگی

 

230

طلوع اسلام کا تضاد

 

231

باب پنجم:  مرکز ملت

 

232

منصب رسالت

 

232

سب سے پہلا مومن

 

232

ختم نبوت و رسالت

 

233

نبی و رسول میں فرق

 

233

مبلغ رسالت

 

233

شارح کتاب اللہ

 

234

شارع یا قانون دہندہ

 

234

مزکی یا تربیت کنندہ۔ معلم کتاب وحکمت

 

235

مطاع

 

236

اللہ اور رسول کے مقام کا فرق

 

236

اطاعت رسول کی مستقل حیثیت

 

236

اتباع رسول صلی اللہ علیہ وسلم اور اسوہ حسنہ

 

237

آپ صلی اللہ علیہ ولسم کی اتباع تا قیامت ضروری ہے

 

237

اتباع صرف رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ہے اللہ کی نہیں

 

238

آپ کی اتباع سے انکار کفر ہے

 

238

قاضی اور حاکم

 

238

قابل ادب و احترام ہستی

 

239

مرکز ملت کے تصور کا پیش منظر

 

239

حافظ اسلم صاحب کا نظریہ مرکز ملت

 

240

مرکز ملت کی وضاحت

 

240

کیا مرکز ملت کی اطاعت رسول کی اطاعت ہے؟

 

241

رسول کی قائم مقامی

 

242

اقتضآت زمانہ

 

242

مرکزی وحدت

 

242

نظریہ مرکز ملت اور طلوع اسلام کے دوسرے نظریات کا تصادم

 

242

ظنی چیز دین نہیں بن سکتی

 

243

فرقہ سازی اور فرقہ پرستی شرک ہے

 

243

دین و دنیا کی تفریق

 

244

شریعت اور شریعت سازی

 

244

اطاعت رسول کا پرویزی مفہوم

 

244

مقام رسالت پرویز صاحب کی نظر میں

 

245

مگر رسالت بدستور جاری ہے

 

246

اللہ اور رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی اطاعت سے مراد

 

247

زندہ رسول

 

248

زندہ رسول پرویز صاحب ہی ہیں

 

249

غلام احمد قادیانی اور غلام احمد پرویز

 

249

مرکز ملت کا یہ منشور غلط ہے

 

250

اللہ اور رسول کی الگ الگ اطاعت کا تصور

 

251

اطیعو اللہ واطیعو الرسول واولی الامر منکم کی نئی تشریح

 

251

علمائے دین اور "پیشوائیت" میں فرق

 

252

تاریخ سے ایک مرکز ملت کی مثال

 

253

شہنشاہ اکبر کی خدادا بصیرت

 

254

چند ضمنی گوشے

 

254

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے پرویز صاحب کی محبت و عقیدت؟

 

254

اطاعت رسول کا نیا مفہوم

 

255

مرکز ملت کی اطاعت حرام ہے

 

256

تشریعی امور میں مشورہ کبھی نہ کیا گیا

 

256

انکار رسالت

 

256

خسرو پرویز اور غلام احمد پرویز

 

257

حجیت حدیث کے دلائل

 

257

فرار کی راہیں

 

257

طلوع اسلام کے اعتراضات کے جوابات

 

258

اللہ اور رسول کی الگ الگ اور مستقل یعنی دو اطاعتوں کا ثبوت

 

259

اصل اطاعت رسول کی ہے اور وہ رسول ہونے کی حیثیت سے ہے

 

260

اطاعت رسول ہی اصل ہدایت ہے

 

261

اقوال و افعال رسول حجت شرعیہ ہیں

 

261

رسول کی اطاعت دائمی ہے

 

261

اتباع رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے منکرین کے لئے وعید

 

263

اتباع رسول کا منکر کافر ہے

 

263

اتباع رسول سے روگردانی منافقت ہے

 

264

رسول کا مخالف جہنمی ہے

 

264

نتائج

 

265

حجیت حدیث کے عقلی دلائل

 

265

صحابہ کی قرآن فہمی

 

265

تعامل امت

 

266

موضوعات کا وجود

 

266

باب ششم: قرآنی نظام ربوبیت

 

267

ملکیت زمین

 

267

فطری قانون حق ملکیت

 

267

حق ملکیت کے عوامل

 

268

حق ملکیت کا اسلامی تصور

 

269

متشابہات سے استفادہ

 

270

عدم جواز ملکیت زمین پر طلوع اسلام کے دلائل کا جائزہ

 

271

قرآنی آیات سے

 

271

لفظ سُئِلَ کے معانی

 

271

لفظ سواء کے معانی

 

272

برابری کس کس کی اور کس بات میں

 

272

سیاق و سباق کا طریق

 

273

قرآن سے حق ملکیت زمین کے دلائل

 

274

تاریخ اور طلوع اسلام

 

275

بائبل اور طلوع اسلام

 

276

انتظام یوسفی

 

276

طلوع اسلام کی علمی دیانت؟

 

278

نتائج

 

278

عام اشیائے صرف پر ملکیت کا حق

 

279

طلوع اسلام کے دلائل کا جائزہ

 

279

طلوع اسلام کا حدیث سے احتجاج

 

281

باغ فدک کا قصہ اور نتائج

 

281

لین دین کے احکام کی پرویزی تاویلیں

 

283

احکام میراث

 

283

طلوع اسلام کے تضادات

 

283

احکام صدقہ و خیرات

 

284

ملا کون؟

 

284

ملا کا قصور

 

284

لین دین کے احکام کا عبوری دور

 

285

عبوری دور کے احکام کی مزید تشریح

 

286

پرویزی حیلے

 

287

زنا اور عبوری دور

 

287

عبوری دور اور حالات

 

288

عبوری دور اور ناسخ و منسوخ

 

288

احتمالات کی دنیا

 

289

نفاذ اور نافذ العمل کا فرق

 

289

ترکہ اور عبوری دور

 

289

مساکین کا وجود

 

290

قسم کا کفارہ اور روزے

 

291

زکوٰۃ و صدقات کے احکام کا تعطل

 

291

لین دین کے احکام

 

291

انفرادی ملکیت اور ارکان اسلام

 

292

ذاتی ملکیت اور زکوٰۃ

 

292

ذاتی ملکیت اور حج

 

292

باب ہفتم: نظام ربوبیت کا فلسفہ اور تشریف آوری

 

294

نظام ربوبیت کی ایجاد کی ضرورت

 

294

قرآن میں غور کرنے کا طریقہ

 

294

اشتراکیت اور ربوبیت

 

294

ربوبیت اور تصوف

 

294

فلسفہ ربوبیت

 

295

انسان کی مضمر صلاحیتیں

 

296

مضمر صلاحیتیں اور مستقل اقدار

 

296

انسانی ذات کی نشو ونما کا فائدہ

 

297

نظریہ ربوبیت کا تجزیہ

 

297

اشتراکیت اور ربوبیت کے جذبہ محرکہ کا فرق

 

298

پرویزی جذبہ محرکہ کی قوت

 

299

نظام ربوبیت کی تاریخ

 

299

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے شاید یہ نظام متشکل فرمایا ہو؟

 

300

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے نظام ربوبیت قائم کر لیا تھا

 

300

دور نبوی میں یہ نظام قائم نہیں ہو سکتا تھا

 

300

یہ نظام سب سے پہلے انبیاء پر نازل ہوا تھا

 

301

اسلام کی تاریخ میں پہلی کوشش

 

302

نظام ربوبیت کو قرآن سے کشید کرنے کے طریقے

 

302

اپنی طرف سے بے جا اضافوں کے ذریعہ سے

 

302

ربوبیت، قانون ربوبیت، نظام ربوبیت کیلئے قرآنی الفاظ

 

303

نئی نئی اصطلاحات کا طریقہ

 

304

دنیا اور آخرت کے کئی مفہوم

 

304

اقامت صلوٰۃ اور ایتائے زکوٰۃ

 

305

اللہ سے مراد قرآنی معاشرہ

 

306

چند قرآنی اصطلاحات

 

306

تفسیری انداز

 

314

سرمایہ داری اور طبقاتی تقسیم

 

314

نظام ربوبیت کے قائلین اور منکرین

 

316

جہنم صرف سرمایہ دار کیلئے اور صرف دنیا میں ہے

 

317

قانون ربوبیت پر ایمان لانے کے فائدے

 

318

قانون کی قوت؟

 

319

نظام ربوبیت کے اپنے فائدے

 

319

نظام ربوبیت کا فلسفہ اور مزید فوائد

 

320

نظام ربوبیت کب اور کیسے آئے گا؟

 

321

نظام ربوبیت کے انقلاب کا دوسرا منظر

 

322

قرآنی نماز

 

325

نماز اور تواتر کا سہارا

 

325

نمازوں کی تعداد

 

326

قیام صلوٰۃ کا مقصد

 

327

صلوٰۃ کے دوسرے مفہوم

 

327

قیام صلوٰۃ اور طہارت؟

 

329

امام کا تقرر کیوں؟

 

329

رکوع و سجود کا مقصد اظہار جذبات ہے

 

329

تاج محل

 

330

صلوٰۃ اور نماز کا فرق

 

330

پرویز صاحب کی نماز

 

331

پرویزی نماز نہیں پڑھتے

 

332

قرآنی زکوٰۃ و صدقات

 

334

شرط زکوٰۃ

 

335

اس شرط کے مفاسد

 

336

شرح زکوٰۃ میں تبدیلی کا حق

 

337

نماز اور زکوٰۃ کی جزئیات

 

337

زکوٰۃ سے متعلق طلوع اسلام سے ایک سوال

 

337

زکوٰۃ اور زمانے کے تقاضے

 

338

ٹیکس اور زکوٰۃ میں فرق

 

338

بنیادی فرق

 

340

مقصد کے لحاظ سے فرق

 

340

محاصل کے لحاظ سے فرق

 

341

مصارف میں فرق

 

342

مزاج اور نتائج کے لحاظ سے فرق

 

342

حکومت کا عوام سے زائد از ضرورت سب کچھ وصول کرنا

 

343

زکوٰۃ کی ادائیگی کا بالکل جداگانہ مفہوم

 

343

صدقہ و خیرات

 

344

اسلامی نظام میں فقراء کا وجود

 

346

پرویز صاحب کی تضاد بیانی

 

346

زکوٰۃ کی ادائیگی سے فرار کی راہیں

 

346

صدقہ فطر اور ڈاک کے ٹکٹ

 

347

قربانی

 

349

ایک چور کا اپنے سے بڑے چور سے سوال

 

349

پرویز صاحب کا جواب

 

349

مقامی قربانی اور حج کی قربانی کے لیے الگ الگ لغت

 

350

مقامی قربانی کے دلائل

 

350

ایک سے زیادہ جانوروں کی قربانی

 

352

مالی ضیاع کی فکر

 

352

قربانی کا فلسفہ

 

353

قربانی کا لفظ قرآن میں

 

354

لفظ نحر کی لغوی تحقیق

 

355

سورہ کوثر اور اونٹ

 

356

اپنےدعوٰی کی خود تردید

 

357

اطاعت والدین

 

358

اطاعت والدین قرآن کی رو سے غیر ضروری ہے

 

358

اطاعت والدین کے نقصانات

 

359

اطاعت کس عمر میں؟

 

360

اطاعت والدین قرآن کی رو سے فرض ہے

 

361

کیا اطاعت کے بغیر والدین سے حسن سلوک ممکن ہے؟

 

361

بڑھاپے میں بھی اطاعت والدین ضروری ہے

 

362

نتائج

 

363

اصل مسئلہ طلاق

 

363

ناسخ و منسوخ

 

365

ما ننسخ من اٰیۃ کا پرویزی مفہوم

 

365

ترجمہ میں خود ساختہ اضافے

 

365

بھلا دینے کی تشریح

 

367

بے چارے ملا پر پرویز صاحب کا غصہ

 

368

اللہ تعالٰی کا بعض قرآنی آیات کو بھلا دینا

 

369

طلوع اسلام سے چند سوالات

 

369

حق وصیت کس کو؟

 

369

زانی کی سزا

 

370

جرم فحش ۔۔ ایک دلچسپ انکشاف

 

370

اللہ تعالٰی کا علم

 

371

ازواج النبی صلی اللہ علیہ وسلم

 

371

غلام اورلونڈیاں

 

372

عذاب قبر

 

373

زندگی اور موت صرف دو دو بار ہے

 

373

مستثنیات

 

373

مُردوں کا احساس و شعور

 

373

مستثنیات

 

374

عرصہ برزخ کا اقرار

 

374

عذاب قبر کا ثبوت

 

374

شہداء کی زندگی

 

375

قبلہ حافظ صاحب کا برزخ کی مدت یا فصل

 

375

زمانی سے انکار

 

375

نیند اور برزخ

 

376

برزخ میں قیام کی مدت؟

 

377

عذاب قبر اور انصاف کا تقاضا

 

377

قرآن سے عذاب قبر کا ثبوت

 

378

فرشتوں کا خطاب

 

378

حافظ صاحب کی علمی خیانت

 

379

آل فرعون کی آگ پر پیشی

 

379

آل نوح کا انجام

 

380

اللہ کے حضور پیشی

 

381

حافظ صاحب کے افکار کا خلاصہ

 

382

حدیث اور عذاب قبر

 

382

ترکہ اور وصیت

 

384

پرویز صاحب کی فراہم کردہ بنیاد

 

384

پرویز صاحب کی تضاد بیانی

 

385

پرویز صاحب کا ذہنی انتشار

 

386

واضح بات؟

 

386

کیا چار بار تاکید کی وجہ سے قرض اٹھانا بھی فرض ہے؟

 

387

آیات وصیت کی تشریح

 

389

قانون وراثت پر پرویزی اعتراضات

 

390

سائل کے سوالات

 

393

یتیم پوتے کی وراثت

 

394

طلوع اسلام سے چند سوالات

 

394

فقہ اسلامی کی غلطیاں

 

395

اللہ تعالٰی کی حساب دانی

 

395

فقہاء کی خدمات کا اعتراف

 

396

یتیم پوتے سے ہمدردی

 

396

یتیم سے ہمدردی کی شکلیں

 

397

قائم مقامی کا اصول

 

398

اصول قانون وراثت

 

398

قانون وراثت پر پرویز صاحب کا اعتراض

 

399

قائم مقامی کانظریہ

 

399

غلطی فقہاء کی یا طلوع اسلام کی؟

 

400

فقہاء کی مزید غلطیاں

 

400

باپ کی جگہ دادا کے حصہ پانے کی وجہ

 

401

نظریہ قائم مقامی کے مزید مفاسد

 

402

قصور وار کون؟

 

402

تلاوت قرآن پاک

 

404

تلاوت قرآن پر طلوع اسلام کے اعتراضات

 

404

اعتراضات کے جوابات

 

404

قرآن کے الفاظ کی اعجازی حیثیت اور تاثیر

 

406

بلا سوچے سمجھے تلاوت

 

407

نکاح نابالغاں

 

409

 

   

نکاح کی عمر

 

409

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہ کا نکاح

 

409

فریقین کی رضامندی

 

411

سارادابل

 

411

اصل مسئلہ

 

412

استفتاء

 

413

جواب۔ نکاح کی عمر؟

 

416

معنوی تحریف

 

417

عقد نکاح اور بلوغت

 

419

بچپن کے نکاح کی حیثیت

 

421

کمسنی کے نکاح کے جواز پر قرآن مجید سے دوسری دلیل

 

422

مجامعت قبل از بلوغت

 

422

کمسنی کے نکاح کی مخالفت کی اصل وجہ

 

423

تعداد ازدواج

 

423

عام حالات میں ایک بیوی کی اجازت

 

425

ہنگامی حالات کی قید کہاں سے آئی

 

427

عام قانون

 

427

کیا یتیموں کی کثرت شرط لازم ہے؟

 

428

سوالنامہ

 

429

جواب میں روایات پر برہمی

 

430

غلام اور لونڈیاں

 

433

منّا اور فداءً کی مختلف صورتیں

 

433

من کی تین صورتیں

 

434

فدیہ کی تین صورتیں

 

435

مجاہدین میں قیدیوں کی تقسیم

 

436

پرویز صاحب کا اصل اعتراض

 

436

اعتراض کا جائزہ

 

437

رخصت کی حکمت

 

438

رجم اور حد رجم

 

440

سورہ نور میں مذکورہ سزا صرف کنواروں کیلئے ہے

 

441

لونڈی کی سزائے زنا

 

441

نصف رجم

 

441

حد رجم

 

442

یہودی زانی جوڑے کا رجم

 

444

کیا حد رجم قرآن کے خلاف ہے؟

 

446

حد رجم سے انکار کی اصل وجہ

 

447

حد سارق

 

447

آیۃ رجم؟  آیت منسوخ حکم باقی

 

448

ایک شبہ کا ازالہ

 

449

عہد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں روایت

 

453

امتناع کثرت روایت کے اسباب

 

453

روایت حدیث کے تاکیدی احکام

 

453

حفظ حدیث

 

454

تعلیم روایت

 

455

معارضہ حدیث

 

456

روایات سے جی بہلانا

 

457

خلفائے راشدین اور روایت حدیث

 

459

حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ اور امتناع روایت

 

459

حضرت عمر رضی اللہ عنہ اور امتناع روایت

 

460

حضرت عمر رضی اللہ عنہ اور قرظہ بن کعب رضی اللہ عنہ

 

460

حضرت عمر رضی اللہ عنہ اور ابی بن کعب رضی اللہ عنہ

 

461

حضرت عمر رضی اللہ عنہ اور حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ

 

462

حضرت عمر رضی اللہ عنہ کا صحابہ کو نظر بند کرنا

 

462

حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کا روایت کو رد کرنا

 

462

حضرت علی رضی اللہ عنہ کی ہدایت

 

463

حدیث کا مرتبہ صحابہ کرام کی نظر میں

 

464

دور صحابہ میں روایات کی تعداد

 

465

محدثین کرام پر اتہام

 

465

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ اور ان کی مرویات

 

466

کیا یہ کثرت روایت ناممکن ہے؟

 

467

مشاہداتی دلیل

 

467

عدم اطمینان کی اصل وجہ

 

468

کثرت روایت کی وجہ حافظ اسلم صاحب کی نظر میں

 

468

وضاعین کون تھے؟

 

469

حدیث کے متعلق ائمہ کے اقوال

 

470

قرآن پر مکڑیوں کا جالا

 

470

قرآن اور فقہ

 

471

امام داؤد طائی اور روایت حدیث

 

471

فضیل بن عیاض رحمتہ اللہ علیہ اور روایت حدیث

 

472

دیگر آئمہ کے اقوال

 

473

امام شعبہ کا قول

 

474

سفیان بن عینیہ کے اقوال

 

474

بکر بن حماد شاعر اور خیر و شر کا معیار

 

475

اہل بصیرت کے اقوال

 

475

کیا مثلہ معہ والی حدیث وضعی ہے

 

476

حافظ صاحب کے دلائل کا جائزہ

 

476

کیا قرآن مکمل کتاب ہے؟

 

477

معتزلین اور امام ابن قتیبہ رحمتہ اللہ علیہ

 

478

بدترین علمی خیانت

 

479

محدثین کی مشکلات

 

480

رتبہ قرآن اور حدیث

 

482

باب دوم: کتابت و تدوین حدیث

 

484

حدیث منع کتابت

 

484

امتناع کتابت حدیث کے اسباب

 

485

منع کتابت کی علت؟

 

486

عبد اللہ بن عمرو رضی اللہ عنہ کو احادیث لکھنے کی اجازت اور حکم

 

486

کتابت حدیث کی اجازت یا حکم

 

487

طلوع اسلام کا اعتراف کتابت

 

488

اقتباس بالا کا تضاد

 

488

دور نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں کتابت حدیث

 

489

احادیث لکھنے کی ترغیب اور حکم

 

490

کتابت شدہ احادیث کی تصحیح و تصویب

 

490

منع کتابت کی روایات اور صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین

 

491

حضرت زید بن ثابت رضی اللہ عنہ اور منع کتابت

 

491

حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کا مجموعہ حدیث

 

492

حضرت عمر رضی اللہ عنہ اور استخارہ

 

492

حضرت عمر رضی اللہ عنہ کا احادیث کو جلانا

 

493

حضرت علی رضی اللہ عنہ کا احادیث کو مٹانا

 

493

حضرت علی رضی اللہ عنہ اور احادیث کی اشاعت

 

494

ابو سعید خدری رضی اللہ عنہ اور حفظ حدیث

 

494

عبد اللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ اور کتابت حدیث

 

495

حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ اور کتابت حدیث

 

495

امام اوزاعی رحمتہ اللہ علیہ اور حفظ حدیث

 

496

تدوین حدیث کا پہلا دور

 

496

صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے تحریری مجموعے

 

496

حضرت عمر بن عبد العزیز کا فرمان شاہی

 

499

تدوین حدیث کا دوسرا دور

 

499

حضرت عمر بن عبد العزیز رحمتہ اللہ علیہ کا کارنامہ

 

500

طلوع اسلام کے اعتراضات

 

501

امام زہری کی کتابت حدیث سے ناگواری

 

501

تدوین حدیث کے نتائج

 

502

موطا امام مالک کی احادیث؟

 

502

دوسری صدی ہجری کے مسانید

 

503

تدوین حدیث کے متعلق طلوع اسلام کا دعوٰی

 

504

اس دعوٰی کے غلط ہونے کے دلائل

 

504

کتابت حدیث کا تسلسل

 

505

کتابت حدیث اور حفظ و سماع

 

506

حفاظت قرٓن کریم اور اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم

 

506

حفظ اور کتابت کی خوبیاں اور خامیاں

 

507

حدیث کی حفاظت کے سلسلہ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے اقدامات

 

507

حفظ و سماع پر طلوع اسلام کا اعتراض

 

508

چند مشہور راویوں کے حافظہ کا امتحان

 

509

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ کے حافظہ کا امتحان

 

509

امام زہری رحمتہ اللہ علیہ کے حافظہ کا امتحان

 

509

امام بخاری رحمتہ اللہ علیہ کی قوتِ حافظہ کا امتحان

 

510

کتابت حدیث پر ایک انوکھا اعتراض

 

511

باب سوم: تنقید حدیث

 

512

مجموعہ ہائے احادیث میں مندرج احادیث

 

512

فن تنقید حدیث کب شروع ہوا؟

 

513

متضاد بیانات

 

514

درایت کے اصول بے کار ہیں

 

514

محدثانہ تاویلات

 

516

روایت کے اصول بھی بیکار ہیں

 

516

کیا عدالت کی جانچ ناممکن ہے؟

 

517

ظن جمع ظن کا نتیجہ

 

518

ثقاہت کی جانچ اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ

 

519

ہزاروں کا مسئلہ

 

520

آئمہ رجال کا ایک دوسرے پر طعن

 

520

جرح و تعدیل کے نقائص حافظ اسلم صاحب کی نظر میں

 

521

جرح و تعدیل میں تسامح

 

521

جرح و تعدیل اور تدلیس

 

523

جرح و تعدیل اور عقل

 

523

دین کیا ہے؟

 

524

جرح و تعدیل کا حکم

 

524

جرح و تعدیل پر بعض دوسرے اعتراضات

 

525

شیعہ سنی اختلافات

 

525

غیر ثقہ راویوں کی مرویات

 

526

جرح و تعدیل اور بکر بن حماد شاعر

 

526

حافظ اسلم صاحب کی آئمہ رجال سے بیزاری

 

527

آئمہ رجال کا اصل کارنامہ

 

529

باب چہارم: اصولِ حدیث

 

529

روایت بالمعنٰی عام اصول نہیں ہے

 

530

روایت بالمعنٰی کی شرائط

 

530

روایت بالمعنٰی کے قائلین کے دلائل

 

531

روایت بالمعنٰی اور طلوع اسلام

 

532

روایت بالمعنٰی اور مولانا مودودی رحمہ اللہ

 

533

دلائل کا تجزیہ

 

533

روایت باللفظ کے شواہد

 

533

روایت بالمعنٰی اور آئمہ نحو

 

535

خبر منفرد کی مقبولیت

 

536

محققین کون لوگ ہیں؟

 

536

روایت بمنزلہ شہادت

 

537

روایت اور شہادت میں فرق

 

537

روایت یا عینی شہادت

 

538

احادیث متواتر کا ثبوت

 

539

خبر واحد حجت بھی ہے اور بمنزلہ شہادت بھی نہیں

 

540

راوی بمنزلہ مدعی؟

 

540

احادیث مشہور اور عزیز سے انکار

 

540

خبر متواتر

 

541

حافظ صاحب کی مغالطہ آفرینی

 

542

خبر متواتر کی نئی تعریف

 

542

خبر متواتر ایک بھی نہیں

 

543

صحیحین میں متواتر کی کثیر تعداد موجود ہے

 

544

متواتر کی تعریف اور قرآن

 

545

باب پنجم: دلائلِ حدیث

 

546

سنت کی آئینی حیثیت پر اعتراض

 

546

امام شافعی رحمتہ اللہ علیہ کا جواب

 

546

حافظ اسلم صاحب کا تبصرہ

 

546

تبصرہ کا جائزہ

 

547

سنت کی ضرورت

 

547

کیا ظن دین کی بنیاد بن سکتا ہے؟

 

548

شہادت اور روایت

 

548

منکر حدیث کا اعتراف حقیقت

 

548

حکمت کا مفہوم؟

 

549

کتاب و حکمت

 

549

حکمت کا معنی

 

550

حکمت اور قرآن کریم

 

550

حکمت اور وحی

 

551

انبیاء علیہم السلام پر نازل شدہ حکمت

 

551

حکمت کے عام مفہوم پر حافظ اسلم صاحب کے اعتراضات

 

552

منزّل من اللہ حکمت اور سنت میں فرق

 

552

سنت اور حدیث میں فرق

 

554

بلحاظ معانی اور اصطلاحی مفہوم

 

554

بلحاظ وسعت معنی

 

554

بلحاظ صحت و سقم

 

554

بلحاظ تعداد

 

555

حافظ اسلم صاحب کے اعتراضات کا جائزہ

 

555

تلاوتِ حکمت

 

556

کیا احادیث منزل من اللہ ہیں؟

 

556

حضرت لقمان اور حکمت

 

556

مآ اٰ تٰکم الرّسول کے صحیح معانی

 

556

آتٰی کی لغوی تحقیق

 

557

غلط فہمی کا شکار کون ہے؟

 

558

کیا وحی صرف قرآن میں محصور ہے؟

 

560

نطق نبی

 

560

حافظ صاحب کے اعتراضات

 

560

وحی اور قرآنی آیات

 

561

کفار کا تکرار، انکار اور جھگڑا

 

561

سنت کی ضرورت

 

563

تشریعی امور

 

563

تدبیری امور

 

563

اجتہادی امور

 

564

طبعی امور

 

564

وحی جلی اور خفی

 

565

وحی خفی کا عقیدہ اور اولین لٹریچر

 

566

وحی خفی اور یہودی

 

566

وحی خفی اور کتابت

 

567

وحی کے مختلف طریقے

 

567

جبریل کا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے قلب پر نزول

 

568

جبریل کا رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے سامنے آنا

 

568

القائے ربانی

 

568

وراء حجاب

 

568

وحی خفی کی اقسام

 

569

وحی متلو اور غیر متلو

 

569

وحی خفی کے دلائل

 

569

آیات قرآنی کی ترتیب

 

569

تبیین کتاب اللہ

 

570

نطق نبی

 

570

احکام قرآنی کی تعمیل

 

570

نمازوں کی تعداد اور رکعات

 

571

زکوۃ کی شرح

 

571

ہجرت کا حکم

 

571

پیش گوئیاں

 

572

تمسک بالجماعت

 

573

قرآن سے وحی خفی کی چند مثالیں

 

573

راز کی بات

 

574

صلح حدیبیہ اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا خواب

 

575

پہلا اعتراض

 

576

دوسرا اعتراض

 

576

قبلہ کا تقرر

 

577

متبنٰی کا مطلقہ سے نکاح

 

578

دوران جنگ درختوں کا کاٹنا

 

579

جنگ بدر اور وعدہ نصرت

 

580

وحی خفی اور جلی کا تقابل

 

581

وحی جلی اور خفی میں اقدار مشترک

 

582

وحی جلی اور خفی کو یک جا کیوں نہیں کیا گیا؟

 

583

باب ششم: وضع حدیث اور وضّاعین

 

584

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر افتراء کا پہلا واقعہ

 

584

نتائج

 

585

وضع حدیث، حجیت حدیث کی سب سے بڑی عقلی دلیل ہے

 

585

وضع حدیث اور تنقید حدیث لازم و ملزوم ہیں

 

586

خبر واحد بھی حجت ہے

 

586

روایت مذکورہ سے وحی خفی کا ثبوت

 

586

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر جھوٹ باندھنے کی سزا

 

586

طلوع اسلام کی دیانت

 

587

موضوع احادیث کی ابتداء

 

587

وضع حدیث کے سدباب کے لئے حضرت علی رضی اللہ عنہ کے اقدامات

 

589

تحریق فی النار

 

589

سبائیوں کی تکذیب

 

591

اشاعت احادیث صحیحہ

 

591

تنقید حدیث کا معیار

 

592

خلاف راشدہ کے بعد

 

593

حکومت کی طرف سے وضاعین حدیث کو سزائے پھانسی یا قتل

 

594

ناقدین اور محدثین کی طرف سے وضع حدیث کا دفاع

 

595

نقد حدیث کے معیار

 

596

نظری طریق

 

596

درایت کے اصول

 

597

خلاف عقل ہو

 

597

خلاف مشاہدہ ہو

 

597

قرآن کی قطعی دلالت یا سنت متواترہ یااجماع قطعی کے خلاف ہو

 

597

عذاب و ثواب میں مبالغہ آرائی

 

597

نسلی اور قومی تعصبات سے متعلق احادیث

 

597

فرقہ وارانہ روایات

 

597

تاریخ کے خلاف ہو

 

598

راوی کا غیر طبعی طویل عمر کا دعوٰی

 

598

کشف و رؤیا پر مبنی روایات

 

598

رکاکت لفظی یا معنوی

 

598

نظری طریق کی دوسری قسم

 

599

روایت یا اسناد کی چھان پھٹک کے اصول

 

599

علم الجرح و التعدیل

 

599

علم التاریخ و الرواۃ

 

599

معرفۃ الصحابہ رضی اللہ عنہم

 

600

علم الاسماء والکنی

 

600

عملی طریق

 

600

موضوع احادیث کی جانچ

 

601

محدثین کا کارنامہ

 

602

احتمالات و شبہات

 

603

ذخیرہ احادیث میں موضوعات اور ضعیف احادیث کا وجود

 

604

موجودہ دور میں وضع حدیث

 

607

باب ہفتم: حدیث کو دین سمجھنے کے نقصانات

 

607

حدیث اور گمراہی

 

607

حافظ صاحب کی فریب دہی

 

607

اجتماعی مصالح کا فقدان

 

609

حدیث اور فرقہ بندی

 

612

قرآن کے معانی میں اختلافات

 

615

حدیث اور فروعی اختلافات

 

615

نماز کیسے پڑھیں؟

 

616

محاذ آرائی کے اسباب

 

616

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی نماز

 

616

ایک نومسلم کی مشکل

 

619

باب اول: حدیث پر چند بنیادی اعتراضات

 

621

حدیث ظنی ہے اور ظن دین نہیں ہو سکتا

 

621

طلوع اسلام کا دعوٰی

 

621

مغالطے اور جھوٹ

 

621

وحی اور کتابت

 

622

لفظ "ظن"  کی لغوی بحث

 

623

طلوع اسلام کی دیانت

 

624

محدثین کے نزدیک لفظ ظن کا مفہوم

 

624

عقلوں کا فرق

 

626

ظن غالب پر دین کی بنیادیں

 

626

نگہ بازگشت

 

626

کیا ظن دین ہو سکتا ہے؟

 

627

قرآن سے استدلال

 

627

شہادت

 

627

ثالثی فیصلہ

 

627

اعمال کے نتائج

 

628

آئمہ رجال اور مولانا مودودی مرحوم

 

628

سنت رسول سے استدلال

 

630

دینی معمولات سے استدلال

 

630

طلوع اسلام کے نظریہ سے استدلال

 

631

عام معمولات

 

631

تاریخ اور حدیث میں فرق

 

631

صحیح بخاری کے پورے نام کی وضاحت

 

632

الجامع

 

632

صحیح

 

632

المسند

 

633

المختصر

 

634

من امور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم

 

634

وسننہ وایّامہ

 

634

تاریخ اور حدیث کا تقابل

 

635

احادیث اور اناجیل

 

636

اعجاز حدیث

 

637

کثرت احادیث

 

637

احادیث کی عددی کثرت کے اسباب

 

637

حدیثوں کی تعداد

 

638

احادیث کی اصل تعداد

 

639

ذخیرہ احادیث میں رطب و یابس کا اندراج؟

 

640

صحیح احادیث کی صحت کی عقلی دلیل

 

640

طلوع اسلام کا سفید جھوٹ

 

641

حدیثوں کے ضیاع کی فکر

 

641

طلوع اسلام کی اصل شکایت

 

641

کفر کی اصل وجہ؟

 

642

کثرت احادیث اور صحیفہ ہمام بن منبہ

 

643

چند غور طلب حقائق

 

643

طلوع اسلام کا معیار حدیث

 

645

معیار اول: قرآن کے مطابق ہو

 

645

معیار دوم: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی توہین

 

646

معیار سوم: توہین صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین

 

647

معیار چہارم: خلاف علم نہ ہو

 

649

معیار پنجم:  خلاف عقل نہ ہو

 

649

عقل کے استعمال کی دلیل

 

650

باب دوم:  حدیث اور چند نامور اہل علم و فکر

 

651

اقبال

 

651

شاہ ولی اللہ

 

653

امام ابو حنیفہ

 

653

عبید اللہ سندھی

 

654

حمید الدین فراہی اور امین احسن اصلاحی

 

656

مناظر احسن گیلانی

 

657

کوئی نئی بات نہیں

 

657

باب سوم:  جمع قرآن روایات کے آئینے میں

 

659

طلوع اسلام کے اعتراضات کا جائزہ

 

659

طلوع اسلام کا دعوٰی

 

659

اپنے دعوٰی کی تردید

 

659

جامع قرآن کون؟

 

660

قرآن کی موجودہ شکل تک کے مختلف مراحل

 

661

دور نبوی سن۱ نبوت تا سن ۱۱ھ

 

661

قرآن کی حفاظت کے طریقے

 

663

دور صدیقی میں ۱۱ھ تا ۱۳ ھ میں قرآن کی جمع و ترتیب

 

664

دور عثمانی: سن ۲۴ ھ تا ۳۵ھ  میں قرآن کی نشر و اشاعت

 

665

دور حجاج بن یوسف ۶۵ھ تا ۱۱۵ھ، اعراب اور نقاط

 

667

ادوار مابعد میں رموز اوقاف وغیرہ

 

668

جمع اور ترتیب قرآن پر طلوع اسلام کے اعتراضات

 

668

لب و لہجہ یا تلفظ کے اختلافات

 

669

اعتراض کا جواب بھی طلوع اسلام کی طرف سے

 

670

سبعہ احرف سے متعلق چند ضروری وضاحتیں

 

672

حضرت عثمان اور حرف واحد

 

673

موجودہ قراءات مختلفہ

 

674

دوسرا اعتراض: سہو ونیسان سے متعلق الفاظ و حروف کی کمی بیشی یا اغلاط کتابت مصحف امام کی اغلاط

 

676

حجاج بن یوسف کی درست شدہ اغلاط

 

676

تیسرا اعتراض: اختلافات قرات جن میں الفاظ کی زیادتی ہے

 

677

آرتھر جیفری کی تالیف

 

679

حفاظت قرآن سے متعلق ایک اعتراض اور اس کا جواب

 

680

حفاظت قرآن کے خارجی ثبوت

 

680

حفظ قرآن

 

680

مستند احادیث

 

681

باب چہارم: تفسیر بالحدیث

 

682

حضرت موسٰی اور بنی اسرائیل

 

683

فرعون کا ایمان لانا

 

684

ھو الاول والآخر کی تفسیر

 

685

علّم اٰدم الاسماء

 

686

عورتیں تمہاری کھیتیاں ہیں

 

687

آتٰی کی لغوی تحقیق

 

688

حلال کو حرام نہ ٹھہراؤ

 

690

صحابہ معاذ اللہ مرتد ہو گئے

 

690

سیرت یوسفی

 

691

مقام کی بلندی اور پستی کا معیار

 

692

کسر نفسی

 

692

نگاہیں اوپر نہیں اٹھ سکتیں

 

693

باب پنجم: متعہ کی اباحت اور حرمت

 

695

نکاح متعہ ایک اضطراری رخصت تھی

 

695

طلوع اسلام کا چکمہ

 

696

اضطراری رخصت کی دوسری دلیل

 

697

ابدی حرمت

 

697

اختلاف صحابہ

 

698

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کا تعزیری حکم

 

699

واقعہ کے نتائج

 

699

متعہ اور طلوع اسلام

 

700

باب ششم: حصول جنت

 

702

پرویز صاحب کی یک چشمی

 

702

قرآن اور حصول جنت

 

703

حدیث اور جہاد

 

705

جنت اور مغفرت

 

705

کن گناہوں کی مغفرت ہوتی ہے؟

 

705

مغفرت کیسے ہوتی ہے؟

 

706

مصیبت بعض گناہوں کا کفارہ بھی ہے اور بعض گناہوں کی معافی بھی

 

707

شہادت

 

708

شہید کون کون ہیں؟

 

708

لڑکیوں کی تربیت پر جنت

 

709

فریب دہی کی کوشش

 

710

ماؤں کے صبر پر جنت

 

710

تلاوت قرآن اور جنت

 

722

جنت ضعیفوں اور کمزوروں کیلئے ہے۔

 

712

جنت میں فقراء کی کثرت کیوں؟

 

713

اختیاری فقر و مسکنت

 

714

اضطراری مسکنت اور اختیاری مسکنت

 

715

کمزوری اور ذلت

 

715

خلوت گزینی

 

716

جنت کی راہ میں رکاوٹیں

 

717

فضائل اعمال کی حقیقت

 

717

باب ہفتم: بخاری کی قابل اعتراض احادیث

 

718

پتھر کپڑے لے کر بھاگ گیا

 

719

ملک الموت کے طمانچہ مارا

 

719

حضرت سلیمان علیہ السلام اور سو عورتوں کا دورہ

 

720

حضرت ابراہیم علیہ السلام کا ختنہ

 

721

حضرت ابراہیم علیہ السلام کے تین جھوٹ

 

7222

گرگٹ کو مارنا

 

723

حضرت آدم علیہ السلام کا قد

 

724

نمازیں کیسے فرض ہوئیں؟

 

724

اعتراضات کا جائزہ

 

724

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر جادو

 

726

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور ازواج مطہرات رضی اللہ عنہم

 

728

حالت حیض میں مباشرت

 

729

اعتکاف اور استحاضہ

 

730

روزہ اور مباشرت

 

731

روزہ اور جنابت

 

731

صحابہ رضی اللہ عنہم (معاذ اللہ) مرتد ہوگئے

 

732

نفاست

 

732

عزل

 

733

شرمگاہ کے علاوہ

 

733

متعہ

 

733

زانیہ عورت

 

734

جو عورت انکار کرے

 

735

دوزخ میں عورتیں

 

735

بھینگا بچہ

 

736

سورج کہاں جاتا ہے؟

 

736

موسم کیسے بدلتے ہیں؟

 

738

نحوست کس چیز میں؟

 

739

بیل باتیں کرتا ہے

 

740

شیطان گوز مارتا ہے

 

740

عذاب قبر میں تخفیف

 

741

زنا کے باوجود جنت

 

743

اگر گناہ نہ کرو گے تو

 

744

بنی اسرائیل چوہے ہیں

 

744

اگر بنی اسرائیل نہ ہوتے تو۔۔

 

745

اگر مکھی گر جائے تو

 

746

مرغ فرشتے کو دیکھتا ہے

 

747

آفتاب کہاں سے نکلتا ہے؟

 

748

بخار کیسے ہوتا ہے؟

 

749

پیشاب پینے کا حکم

 

749

بندر کو سنگسار کیا گیا

 

751

جن

 

752

حرف آخر

 

753

باب ہشتم: خلفائے راشدین رضی اللہ عنہم کی شرعی تبدیلیاں

 

754

اولیات عمر رضی اللہ عنہ

 

755

جعفر شاہ صاحب کی پیش کردہ "شرعی تبدیلیاں"

 

757

دور فاروقی

 

757

دور عثمانی

 

758

دور علوی

 

758

پرویز صاحب کے پیش کردہ اختلافی فیصلے

 

759

شرعی ترمیمات کی کل تعداد کا نقشہ

 

761

مندرجہ بالا شرعی ترمیمات کا جائزہ

 

763

گھوڑوں پر زکوٰۃ

 

763

دریائی پیداوار پر زکوٰۃ

 

764

عشور

 

764

نومسلم کی جائیداد غیر منقولہ

 

764

خراج کی شرح

 

765

زکوٰۃ کے برابر جزیہ

 

765

خطبہ جمعہ اور دوسری اذان

 

765

امدادی امور

 

765

اعرابی غلام

 

766

نماز جنازہ کی چار تکبیریں

 

766

نماز تراویح کی جماعت

 

766

ہجو کی سزا

 

767

غزل میں عورت کا نام

 

767

مغالطے

 

767

صبح کی اذان میں الفاظ

 

767

قحط کے زمانہ میں چوری کی سزا

 

768

غیر شادی شدہ کی سزائے زنا

 

769

ام ولد کی فروخت پرپابندی

 

769

زنا بالجبر اور عورت کی سزا

 

770

قاتل محروم الارث ہے

 

770

اسیروں کا فدیہ

 

771

طواف اور رمل

 

772

متوازی فیصلے

 

773

عراق کی مفتوحہ زمینوں کو قومی ملکیت میں لینا

 

773

شراب کی تعزیر میں اضافہ

 

774

درست اجتہادات

 

774

کتابیہ عورت سے نکاح

 

774

زکوٰۃ کے مصارف اور تالیف قلوب

 

775

اجتہادی غلطیاں

 

776

وظائف میں اسلامی خدمات کا لحاظ

 

776

تطلیق ثلاثہ اور حلالہ

 

777

نگہ بازگشت

 

778

نتائج

 

779

باب اول: طلوع اسلام کا ایمان بالغیب

 

783

عبادت کا مفہوم

 

783

ایمان بالغیب اور مومن کی پرویزی تعریف

 

784

اللہ پر ایمان بالغیب

 

785

طلوع اسلام اور مسئلہ استوی علی العرش

 

786

اپنے دعوٰی کی تردید

 

787

صفات خداوندی

 

787

اللہ پر ایمان لانے کا مطلب

 

788

خدا اور انسان کا تعلق

 

789

خدا کی عبادت

 

789

اللہ کی عبادت کے پرویزی مفہوم

 

789

توحید اور شرک

 

790

توحید کا مفہوم نمبر۱

 

790

توحید کا مفہوم نمبر ۲

 

791

اللہ کے مختلف معانی

 

791

فرشتوں پر ایمان

 

793

ملائکہ سے مراد خارجی قوائے فطرت

 

794

حاملین عرش ملائکہ کی وضاحت

 

794

ملائکہ سے مراد داخلی قوتیں

 

795

ملائکہ سے مراد طبعی تغیرات

 

795

ملائکہ سے مراد نفسیاتی محرکات

 

796

رحمت اور عذاب کے فرشتے

 

796

دو، دو، تین، تین، چار، چار پروں والے فرشتے

 

797

کتابوں پر ایمان بالغیب

 

797

انکار سنت اور انکار قرآن لازم و ملزوم

 

798

قرآنی نظام ربوبیت اور سارا قرآن

 

798

کیا قرآن مکمل کتاب ہے؟

 

798

نامکمل دین؟

 

800

قرآن فہمی کا پرویزی طریقہ

 

800

انبیاء پر ایمان بالغیب

 

802

وحی کی حقیقت اور نزول وحی

 

802

عقل اور وحی

 

803

انبیاء کی بعثت کا مقصد

 

804

سب سے پہلے نبی حضرت آدم علیہ السلام

 

804

آدم علیہ السلام کے فرد واحد اور نبی ہونے کا اعتراف اور اس کی تاویل

 

804

خاتم النبیین پر ایمان

 

806

زندہ رسول

 

806

پرویز صاحب کی رسالت

 

806

نگہ بازگشت

 

807

یوم آخرت پر ایمان

 

807

الساعۃ بمعنی یوم انقلاب ربوبیت

 

808

قیامت کا مفہوم

 

809

میزان اعمال کب اور کیسے؟

 

809

یوم الحشر یا یاوم النشور کب ہوگا؟

 

810

آخرت کے مختلف مفاہیم

 

810

آخرت اور جنت و دوزخ

 

810

آخرت کی کامیابی کا معیار صرف دنیا کی خوشحالی ہے

 

810

جنت اور دوزخ کی حقیقت

 

811

جنت کی زندگی

 

811

آدم کا جنت سے خروج

 

811

جہنم کی حقیقت

 

812

جنت اسی دنیا میں

 

812

تقدیر پر ایمان بالغیب

 

812

تقدیر کا عقیدہ مجوسیوں کا ہے

 

812

اللہ تعالٰی کی بے بسی (نعوذباللہ)

 

813

آخرت میں بھی اللہ تعالٰی کی بے بسی (نعوذ باللہ)

 

814

غفور رحیم

 

815

دیگر صفات خداوندی

 

815

انسان کا اختیار اور مکافات عمل

 

816

مسئلہ تقدیر کا اصل حل

 

817

باب دوم: طلوع اسلام اور ارکان اسلام

 

818

اسلام اور کفر

 

818

کافر کون ہیں؟

 

818

توحید

 

819

صلوٰۃ یا نماز

 

819

ایتائے زکوٰۃ

 

820

صوم یا روزہ

 

820

حج

 

821

کعبہ کی اہمیت

 

821

ارکان اسلام سے چھٹی

 

822

طلوع اسلام کا دین اسلام

 

823

باب سوم: وحی الٰہی سے روشنی حاصل کرنے کا طریق (مفہوم القرآن پر ایک نظر)

 

824

معجزات اور خرق عادت امور

 

826

حضرت صالح علیہ السلام اور ناقتہ اللہ

 

826

قوم لوط کی الٹائی ہوئی بستیاں

 

828

قوم ثمود کی الٹائی ہوئی بستیاں

 

828

حضرت ابراہیم علیہ السلام پر آگ کا ٹھنڈا ہونا

 

829

حضرت ابراہیم علیہ السلام اور چار پرندے

 

830

حضرت اسماعیل علیہ السلام کی قربانی

 

831

عصائے کلیمی اور دریا کا پھٹنا

 

833

عصائے کلیمی اور بارہ چشموں کا پھوٹنا

 

834

عصائے کلیمی کیا چیز ہے؟

 

835

حضرت موسٰی علیہ السلام کا ید بیضا

 

837

حضرت موسٰی علیہ السلام کا جادوگروں سے مقابلہ

 

838

حضرت عیسٰی علیہ السلام کی پیدائش

 

840

حضرت عیسٰی علیہ السلام کا گود میں کلام کرنا

 

841

حضرت عیسٰی علیہ السلام کے دوسرے معجزات

 

842

حضرت عزیر علیہ السلام کا سو سال کے بعد زندہ ہونا

 

843

حضرت یونس علیہ السلام مچھلی کے پیٹ میں

 

845

حضرت ایوب علیہ السلام پر انعامات

 

846

اصحاب الفیل

 

848

رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم اور واقعہ اسراء

 

849

اللہ تعالٰی کا مردوں کا زندہ کرنا

 

850

باب چہارم: فکر پرویز پر عجمی شیوخ کی اثر اندازی

 

853

پرویز صاحب کی خالص قرآنی دعوت

 

853

خالص قرآنی دعوت پر اصرار

 

854

اپنی غلطیوں کا اعتراف

 

854

پرویز صاحب کی کذب بیانی

 

854

خالی الذہن ہو کر قرآن کا مطالعہ کرنا

 

855

پرویز صاحب کا شرک

 

855

خالی الذہن ہونے کا پرویزی مطلب

 

856

پرویز صاحب کے عجمی شیوخ

 

856

پرانے شیوخ

 

857

چند نئے شیوخ اور ان کے افکار

 

857

برگسان کا نظریہ ارتقاء

 

857

الیگزینڈر کا نظریہ ارتقاء

 

859

برگسان اور الیگزینڈر کے نظریات کا تضاد

 

860

اختلافات کے متعلق پرویز صاحب کا فیصلہ

 

861

پروفیسر مارگن کا نظریہ ارتقاء

 

863

سورہ فاتحہ کا مفہوم

 

864

مزید دو آیات کا ارتقائی مفہوم

 

865

مذہب سے دین تک کا ارتقائی عمل

 

867

دوسرا دور۔ لفظ مذہب سے بیزاری کا اظہار

 

868

ارض و سماء کے معانی میں تدریجی ارتقاء

 

870

باب پنجم: داعی ءِ انقلاب کا ذاتی کردار

 

871

ایک گھریلو شہادت

 

871

السابقون الاولون پر کیا بیتی؟

 

872

طلوع اسلام کی بڑی بڑی شخصیتیں

 

872

مفکر قرآن کا ایثار اور دیانت

 

873

فرقہ پرستی اور پارٹی بازی

 

876

اخراج کہاں سے؟

 

877

دعوت "علٰی وجہ البصیرت" کی اور آرزو "اندھی عقیدت" کی

 

877

کافر گری اور منافق گری

 

878

صحافتی بازی گری

 

880

کراچی کے منافقین

 

881

عفو و درگزر

 

881

معاشرتی تعلقات کا انقطاع

 

882

منافقین کراچی پر پندارِ نفس کا الزام

 

882

باب ششم: پرویز صاحب کے لٹریچر کی خصوصیات

 

884

اپنی قرآنی بصیرت کو بھی قرآن ہی سمجھنا

 

884

لفظ ایک مفہوم بہت سے

 

886

مفہوم ایک الفاظ بہت

 

888

من نہ کروم شما حذر بکنید

 

888

اناجیل سے استفادہ ، حضرت عیسٰی علیہ السلام کا باپ

 

889

تورات سے استفادہ، انتظام یوسفی

 

891

روایات سے استفادہ

 

891

قرآن کی ترتیب

 

891

دیوانہ بکار خویش ہوشیار

 

892

غلط العام الفاظ سے استفادہ

 

892

یک چشمی

 

893

دقیع الفاظ کا استعمال

 

894

قیام صلوٰۃ

 

894

کہیں سے اینٹ کہیں سے روڑا۔۔

 

895

تضاد بیانی

 

895

جن

 

896

مردوں کی حاکمیت

 

897

احکامِ میراث

 

898

قرآنی نظام ربوبیت

 

899

تصوف کی بنیاد

 

899

سوال گندم جواب چینا

 

900

نمازوں کی تعداد

 

900

قرآن کا مستند نسخہ

 

901

بنائے فاسد، علی الفاسد

 

901

شرح زکوٰۃ

 

902

اطاعت رسول۔۔  تقلید

 

902

نظام ربوبیت کا قیام

 

902

یتیم پوتے کی وراثت

 

903

نظریہ ارتقاء

 

903

دوسرے ہتھکنڈے

 

903

تحریف لفظی

 

903

دنیوی خوشحالی

 

903

مساوات مردوزن

 

904

آیات کے بے کار حصے

 

905

بار بار

 

905

حوالہ جات

 

905

ضمیمہ: طلوع اسلام سے چند بنیادی سوالات

 

906

وحی اور قرآن

 

906

استواء علی العرش

 

907

فرشتوں کا خارجی وجود اور تشخص

 

907

وحی اور کتابت

 

907

تکمیل دین

 

907

مشورہ

 

908

ظن اور یقین

 

908

اطاعت رسول صلی اللہ علیہ وسلم

 

909

کتابت حدیث

 

909

ناسخ و منسوخ

 

909

وراثت

 

910

وصیت

 

911

مرکز ملت

 

911

حجیت حدیث

 

911

نظام ربوبیت

 

911

تلاوت قرآن

 

912

کتابیات

 

913

مصنف کی مزید تصانیف

title-page-ainaeparwaiziathqcomplete
pages-from-aina-parveziyat-motazila-se-taloo-e-islam-tak-part-1
title-pages-ahkam-e-tijarat-aur-lain-dain-k-masayal
title-page-ahkam-e-satr-o-hijaab-copy
Title Page---Islam Main Dolat K Masarif
title-pages-islam-me-zabita-e-tijarat-copy
Title Page---Islam ka Nizaam e Falkiaat -- Ashams Wal Qamar Bihusbaan
aikmajliskiteentalaqkishareehaisiat2-copy
taseer-ul-quran-urdu-copy
untitled-1
untitled-1
untitled-1
untitled-1
title-page-khilafat-o-jamhooriat-copy
roohazabeqabaraursamaemotaa-copy
shariatotareeqat-copy
title-page-aql-parasti-aur-inkar-e-mujzat
title-pages-mutaradifaat-ul-quran
title-pages-mohammad-rasolullah-saww-sabar-w-sabat-k-paikar-e-azam-copy
title-page-munkireen-e-hadees-k-4-aiterazat-aur-un-ka-ilmi-wa-tahqiqi-jaiza
title-pages-nabi-akram-saww-bahasiyyat-e-sipaah-salaar

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

 

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 1795 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

       99-جے ماڈل ٹاؤن،
     نزد کلمہ چوک،
     لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

      KitaboSunnat@gmail.com

      بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں