آل دیوبند کے تین سو(300)جھوٹ

حافظ زبیر علی زئی
مکتبہ الحدیث، حضرو ضلع اٹک
159
3975 (PKR)
حافظ زبیر علی زئی جماعت اہل حدیث کے نامور عالم اور کامیاب مناظر ہیں۔ تحقیق حدیث ان کا خاص موضوع ہے۔ حدیث کے دفاع کے لیے ہر ممکن کوشش بروئے کار لاتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ جب کبھی بھی اور جہاں کہیں بھی حدیث پر حملہ ہو، چاہے انکار کی صورت میں ہو یا دو ر ازکار تاویلات کی صورت میں موصوف بے قرار ہوجاتے ہیں اور ان کا خارا شگاف قلم حرکت میں آ جاتا ہے۔ زیر نظر کتاب جیسا کہ نام سے ظاہر ہے حافظ صاحب کی نظر میں دیوبندی علما کے 300 جھوٹوں پرمشتمل ہے۔ موصوف کتاب کے مقدمے میں لکھتے ہیں:’’ بہت سے لوگ مسلسل دن رات اکاذیب و افتراء ات گھڑتے اور سیاہ کو سفید، سفید کو سیاہ کرنے کی کوشش کرتے رہتے ہیں۔ ان میں سے دیوبندی حضرات نے تو کذب و افتراء کو اپنا شیوہ و شعار بنا رکھا ہے۔ راقم الحروف نے اس کتاب میں بعض دیوبندی علما اور مصنفین کے تین سو (300) اکاذیب (جھوٹ) اور افتراء ات باحوالہ جمع کر کے عوام و خواص کی عدالت میں پیش کر دئیے ہیں۔ تاکہ کذابین کا اصلی چہرہ لوگوں کے سامنے واضح ہو جائے۔‘‘ وہ اپنے مقصد میں کس حد تک کامیاب ہوئے ہیں اس کا فیصلہ ہم قارئین پر چھوڑتے ہیں۔(ع۔م)

نوٹ:
محدث فورم میں اس کتاب پر تبصرہ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں

عناوین

 

صفحہ نمبر

تقدیم

 

5

پچاس غلطیاں،سہو یا جھوٹ؟

 

7

آل دیوبند کے پچاس جھوٹ

 

21

امین اوکاڑوی کے پچاس جھوٹ

 

39

حبیب اللہ ڈیروی کے دس جھوٹ

 

65

الیاس گھمن کے ’’قافلہ حق‘‘ کے پچاس جھوٹ

 

70

اسماعیل جھنگوی کے پندرہ جھوٹ

 

90

چن محمد دیوبندی کے پندرہ جھوٹ

 

100

ماسٹر  امین اوکاڑوی کے دس جھوٹ

 

107

احمد سعید ملتانی کے چونتیس جھوٹ

 

115

’’حدیث اور اہلحدیث‘‘ نامی کتاب کے تیس جھوٹ

 

123

آل دیوبند کے چھتیس جھوٹ

 

146

دوسری جلد

ای میل سبسکرپشن

محدث لائبریری کی اپ ڈیٹس بذریعہ ای میل وصول کرنے کے لئے ای میل درج کر کے سبسکرائب کے بٹن پر کلک کیجئے۔

ایڈوانس سرچ

موضوعاتی فہرست

رجسٹرڈ اراکین

آن لائن مہمان

محدث لائبریری پر اس وقت الحمدللہ 2074 مہمان آن لائن ہیں ، لیکن کوئی رکن آن لائن نہیں ہے۔

ایڈریس

        99--جے ماڈل ٹاؤن،
        نزد کلمہ چوک،
        لاہور، 54700 پاکستان

       0092-42-35866396، 35866476، 35839404

       0092-423-5836016، 5837311

       library@mohaddis.com

       بنک تفصیلات کے لیے یہاں کلک کریں